உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بابر اعظم کو پاکستان کے اس سابق کرکٹر نے بتایا ضدی، وراٹ کوہلی سے سبق لینے کا دیا مشورہ

    بابر اعظم کو پاکستان کے اس سابق کرکٹر نے بتایا ضدی، وراٹ کوہلی سے سبق لینے کا دیا مشورہ (AFP)

    بابر اعظم کو پاکستان کے اس سابق کرکٹر نے بتایا ضدی، وراٹ کوہلی سے سبق لینے کا دیا مشورہ (AFP)

    Pakistan Cricket News: وسیم اکرم سمیت کئی ایکسپرٹس پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ بابر اوپننگ اسپاٹ کیلئے اچھا متبادل نہیں ہیں ۔ اب اس فہرست میں پاکستان کے سابق کرکٹر دانش کنیریا بھی شامل ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے بابر اعظم کو ضدی بتایا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Pakistan
    • Share this:
      نئی دہلی : بابر اعظم کی قیادت میں پاکستان کی ٹیم کو ٹی ٹوینٹی ورلڈکپ کے فائنل میچ میں ہار کا سامنا کرنا پڑا ۔ پورے ٹورنامنٹ میں بابر اعظم نے صرف ایک ہی میچ میں نصف سنچری بنائی ۔ دائیں ہاتھ کے اس بلے باز نے اوپننگ کرتے ہوئے سات اننگز میں 17.71 کی اوسط اور 93.23 کے اسٹرائیک ریٹ سے صرف 124 رنز بنائے ۔ وسیم اکرم سمیت کئی ایکسپرٹس پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ بابر اوپننگ اسپاٹ کیلئے اچھا متبادل نہیں ہیں ۔ اب اس فہرست میں پاکستان کے سابق کرکٹر دانش کنیریا بھی شامل ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے بابر اعظم کو ضدی بتایا ہے ۔

      دانش کنیریا کا ماننا ہے کہ بابر اعظم کی ضد سے پاکستان کو مدد نہیں مل رہی ہے ۔ بابر اعظم اوپننگ کرتے ہوئے لگاتار فلاپ ثابت ہورہے ہیں ۔ کنیریا نے اپنے یوٹیوب چینل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ بابر اعظم بہت ہی ضدی ہیں۔ ایسا ہی تب ہوا تھا جب وہ کراچی کنگس کے ساتھ تھے ۔

      کنیریا کے مطابق اس ٹیم کی انتظامیہ نہیں چاہتی تھی کہ وہ اوپن کریں، لیکن بابر اس بات پر بضد تھے کہ وہ اوپننگ ہی کریں گے ۔ کیونکہ وہ مڈل آرڈر میں بلے بازی نہیں کرسکتے ہیں ۔ بابر کی یہ ضد پاکستان کو نقصان پہنچا رہی ہے ، کیونکہ وہ شروعات میں سست رفتاری سے رن بناتے ہیں ۔

      یہ بھی پڑھئے: شاہد آفریدی کا بڑا بیان، بابر اعظم چھوڑیں کپتانی، یہ تین کھلاڑی کرسکتے ہیں ٹیم کی قیادت


      یہ بھی پڑھئے: رمیز راجہ نے بابر اعظم کے 'بھائی' کو بھیجا قانونی نوٹس، جانئے کیا ہے پورا معاملہ



      اس کے علاوہ کنیریا نے وراٹ کوہلی کی مثال پیش کرتے ہوئے کہا کہ وراٹ کوہلی آج بھی وہیں بلے بازی کرتے ہیں، جہاں ان کی ٹیم کو وراٹ کی ضرورت ہے ۔ انہیں ورلڈ کپ میں ہار کے بعد کھری کھوٹی سنائی گئی ۔ کپتانی بھی واپس لے لی گئی، لیکن انہوں نے اپنا حوصلہ نہیں کھویا ۔ انہوں نے ٹیم کو ہر جگہ سپورٹ کیا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: