உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Pakistan Cricket: پی سی بی کی بڑی مشکل حل، بابر اعظم نے مانی بورڈ کی بات، جانئے پورا معاملہ

    Pakistan Cricket: پی سی بی کی بڑی مشکل حل، بابر اعظم نے مانی بورڈ کی بات، جانئے پورا معاملہ (AFP)

    Pakistan Cricket: پی سی بی کی بڑی مشکل حل، بابر اعظم نے مانی بورڈ کی بات، جانئے پورا معاملہ (AFP)

    Pakistan Cricket News: کپتان بابر اعظم، تیز گیند باز شاہین شاہ آفریدی اور محمد رضوان سمیت ٹاپ کھلاڑیوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے نظرثانی شدہ سینٹرل کنٹریکٹ پر دستخط کر دئے ہیں ۔

    • Share this:
      کراچی : پاکستان کرکٹ بورڈ اور کھلاڑیوں کے درمیان سینٹرل کنٹریکٹ کو لے کر گزشتہ چند روز سے جاری رسہ کشی ختم ہوگئی ہے ۔ کپتان بابر اعظم، تیز گیند باز شاہین شاہ آفریدی اور محمد رضوان سمیت ٹاپ کھلاڑیوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے نظرثانی شدہ سینٹرل کنٹریکٹ پر دستخط کر دئے ہیں ۔ ای ایس پی این کرک انفو کی رپورٹ کے مطابق کھلاڑیوں کے ایک گروپ نے ہالینڈ کے دورے پر روانگی سے قبل اس شرط پر دستخط کئے کہ وہ ستمبر میں ایشیا کپ کے بعد کچھ شرائط پر بات کریں گے ۔

      سینئر کھلاڑیوں نے معاہدے کے کچھ پہلوؤں پر اعتراضات کئے تھے۔ ان میں غیر ملکی لیگز کھیلنے کیلئے این او سی بھی شامل ہے۔ اس کے علاوہ کھلاڑی انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کے مقابلوں میں تصویر سے متعلق حقوق اور اس طرح کے مقابلوں میں شرکت کی فیس کے بارے میں بھی مزید جانکاری چاہتے ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: Asia Cup 2022: ہند ۔ پاک میچ سے پہلے سابق لیجنڈ نے کہا : آفریدی سے ڈرنے کی ضرورت نہیں


      پی سی بی نے 23-2022 کے سیشن کیلئے سینٹرل کنٹریکٹ کی فہرست میں 33 کھلاڑیوں کو شامل کیا ہے۔ پہلی مرتبہ ٹیسٹ اور ون ڈے کھلاڑیوں کی الگ الگ فہرستیں جاری کی گئی ہیں۔ پی سی بی نے لاہور میں ٹیم کے پری ٹور کیمپ سے پہلے ہی کھلاڑیوں کو کنٹریکٹ دے دیا تھا۔ حالانکہ ہر مرتبہ کی طرح اس مرتبہ ایسا نہیں ہوا کہ کھلاڑیوں نے سیدھا قرار پر دستخط کرکے پی سی بی کو بھیج دئے۔ اس مرتبہ کچھ کھلاڑیوں نے اس کی کچھ شقوں پر اعتراض کیا اور اپنے وکیل سے بات چیت کے بعد اس پر دستخط کرنے کی بات کہی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: بابر اعظم اور فخر زماں کی جگہ لے سکتا ہے یہ کھلاڑی، مصباح الحق کا دعوی


      پی سی بی کے سینٹرل کنٹریکٹ کے جس کلاز پر کھلاڑیوں نے اعتراضات کئے ہیں، اس میں ماہانہ ریٹینر اور میچ فیس کا معاملہ شامل نہیں ہے۔ کھلاڑیوں کو پاکستان کی طرف سے ایک ٹیسٹ میچ کھیلنے کیلئے 8,38,530 روپے (پاکستانی روپے)، ون ڈے کیلئے 5,15,696 روپے اور ٹی ٹوینٹی کیلئے 3,72,075 روپے ملیں گے۔

      وہیں اگر ہر ماہ ریٹینر شپ فیس کی بات کریں تو ٹیسٹ کنٹریکٹ کے ٹاپ سلیب میں شامل کھلاڑی کو 1,050,000 پاکستانی روپے ملیں گے اور ون ڈے معاہدے کیلئے یہ رقم ہر ماہ 9.50 لاکھ پاکستانی روپے ہوگی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: