ہوم » نیوز » اسپورٹس

بڑی خبر ! IPL 2022 میں کھیلیں گی 10 ٹیمیں ، بی سی سی آئی نے دی منظوری

IPL 2022 : آئی پی ایل 2022 میں آٹھ ٹیموں کی جگہ 10 ٹیمیں حصہ لیں گی ۔ بی سی سی آئی اے جی ایم نے منظوری دیدی ہے ۔

  • Share this:
بڑی خبر ! IPL 2022 میں کھیلیں گی 10 ٹیمیں ، بی سی سی آئی نے دی منظوری
سال 2022 سے 10 ٹیموں کا ہوگا آئی پی ایل ( تصویر : ممبئی انڈینس)

انڈین پریمیئر لیگ کے فینس کیلئے بڑی خبر ہے ۔ آئی پی ایل میں اب مزید دو نئی ٹیمیں نظر آنے والی ہیں ۔ بی سی سی آئی نے احمد آباد میں ہوئی میٹنگ میں مزید دو ٹیموں کو منظوری دیدی ہے ۔ بی سی سی آئی نے فیصلہ کیا ہے کہ سال 2022 سے آئی پی ایل 10 ٹیموں کا ٹورنامنٹ ہوگا ۔ فی الحال آئی پی ایل میں 8 ٹیمیں حصہ لیتی ہیں ۔ بتادیں کہ پہلے قیاس آرائی کی جارہی تھی کہ آئی پی ایل 2021 سے ہی دو ٹیموں کا اضافہ کیا جاسکتا ہے ، لیکن اس سال میگا آکشن بھی ہونا ہے ، جس کی وجہ سے 10 ٹیموں کو 2022 سے کھلایا جائے گا ۔


آئی پی ایل کی دو نئی ٹیموں کے مالکان کون ہوں گے ، یہ سوال سبھی کیلئے کافی دلچسپ ہے ۔ خبروں کے مطابق آئی پی ایل ٹیم خریدنے کی ریس میں اڈانی گروپ اور سنجیو گوئنکا آگے رہیں گے ۔ آئی پی ایل میں ایک ٹیم احمد آباد کی ہوسکتی ہے جس کو خریدنے کا ارادہ اڈانی گروپ پہلے ہی ظاہر کرچکا ہے ۔ اب تو احمد آباد میں دنیا کا سب سے بڑا کرکٹ اسٹیڈیم بھی بن چکا ہے ۔




بتادیں کہ سال 2022 میں جب 10 ٹیمیں آئی پی ایل میں کھیلتی نظر آئیں گی تو اس کے فارمیٹ میں بھی تبدیلی ہوسکتی ہے ۔ فی الحال آئی پی ایل راونڈ رابن انداز میں کھیلا جاتا ہے ، جس میں ہر ٹیم ایک دوسرے سے دو دو مرتبہ مقابلہ کرتی ہے اور زیادہ پوائنٹس پانے والی چار ٹیمیں کوالیفائر کھیلتی ہیں ۔ لیکن 10 ٹیموں کے ساتھ فارمیٹ کچھ الگ ہونے کا امکان ہے ، جس میں ٹیموں کو دو گروپ میں تقسیم کئے جانے کی بات کہی جارہی ہے ۔ حالانکہ اس بات کی کوئی تصدیق نہیں ہوئی ہے ۔

احمد آباد میں منعقعدہ بی سی سی آئی اے جی ایم سے دو اور بڑی خبریں سامنے آئی ہیں ۔ ذرائع کے مطابق سبھی فرسٹ کلاس کرکٹروں ( مرد اور خواتین دونوں) کو کورونا وبا کی وجہ سے گھریلو سیشن محدود رہنے کی مناسب تلافی بھی کی جائے گی ۔

ساتھ ہی ذرائع کی مانیں تو بین الاقوامی اولمپک کمیٹی ( آئی او سی ) سے کچھ وضاحت کے بعد بی سی سی آئی کرکٹ کو 2028 اولمپک میں شامل کرنے کی آئی سی سی کی کارروائی کی حمایت کرے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 24, 2020 04:46 PM IST