உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سری لنکا کے اس کھلاڑی نے ٹیم میں آنے کیلئے کیا 10 سال انتظار، اب پاکستان کے چھڑائے چھکے

    سری لنکا کے اس کھلاڑی نے ٹیم میں آنے کیلئے کیا 10 سال انتظار، اب پاکستان کے چھڑائے چھکے

    سری لنکا کے اس کھلاڑی نے ٹیم میں آنے کیلئے کیا 10 سال انتظار، اب پاکستان کے چھڑائے چھکے

    Asia Cup 2022: ڈیبیو کے تین سال بعد اب بھانوکا راج پکشے نے ایشیا کپ کے فائنل میچ میں پاکستانی گیندبازوں کی جم کر خبر لی اور ٹیم کو جیت کی راہ پر گامزن کردیا۔ فائنل میں شاندار اننگز کھیلنے پر انہیں میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • inter, Indiasri lankasri lankasri lanka
    • Share this:
      دبئی: سری لنکائی بلے باز بھانوکا راج پکشے نے ایشیا کپ 2022 کے فائنل میں مشکل وقت میں اپنی ٹیم کے لیے 45 گیندوں پر 71 رنز کی میچ وننگ اننگز کھیلی۔ ساتھ ہی ٹیم ساتویں وکٹ کے لیے نصف سنچری شراکت داری کرکے ٹیم کو (58 رنز پر 5) مشکل سے باہر نکالا ، لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ بھانوکا کو فرسٹ کلاس ڈیبیو کرنے کے بعد اپنے بین الاقوامی ڈیبیو کے لئے 10 سال کا طویل انتظار کرنا پڑا۔ . جی ہاں، راج پکشے کو 2019 میں پاکستان کے خلاف ٹی ٹوینٹی سیریز کے لیے منتخب کیا گیا تھا۔ اس سے پہلے وہ 10 سالوں سے فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے تھے اور اچھا کھیل دکھا رہے تھے ۔

      ڈیبیو کے تین سال بعد اب بھانوکا راج پکشے نے ایشیا کپ کے فائنل میچ میں پاکستانی گیندبازوں کی جم کر خبر لی اور ٹیم کو جیت کی راہ پر گامزن کردیا۔ فائنل میں شاندار اننگز کھیلنے پر انہیں میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کیلئے ہندوستانی اسکواڈ کا اعلان، بمراہ اور ہرشل پٹیل کی واپسی


      بھانوکا راج پکشے نے سال کے آغاز میں ہی بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ کیا تھا اور ایک ہفتے میں ہی ریٹائرمنٹ کو واپس لے لیا ۔ 30 سالہ کرکٹر نے 5 جنوری 2022 کو اچانک ریٹائرمنٹ کا اعلان کرکے سبھی کو حیران کردیا۔ وہ ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ 2021 کا حصہ تھے اور اس وقت تک صرف 23 بین الاقوامی کرکٹ میچ کھیلے تھے۔ اس کے باوجود وہ ٹیم کے لئے سب سے زیادہ رنز بنانے والے تیسرے بلے باز تھے ۔

      پاکستان کے خلاف ایشیا کپ 2022 کے فائنل میچ میں سری لنکا نے ٹاس ہاکر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 6 وکٹوں پر 170 رنز کا بڑا اسکور بنایا۔ خراب آغاز کے بعد سری لنکا کی ٹیم 8.5 اوورز میں 58 رنز پر 5 وکٹیں گنوا بیٹھی، لیکن اس کے بعد سری لنکا نے شاندار واپسی کرتے ہوئے اگلے 11 اوورز میں صرف 1 وکٹ گنوا کر 112 رنز بنائے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: گیند باز نسیم شاہ نے کہا کون ہیں اروشی روتیلا، میں نہیں جانتا، اب اداکارہ نے دیا یہ جواب


      بھانوکا راج پکشے نے فائنل میچ میں سری لنکا کو ایک اچھے اسکور تک پہنچانے میں سب سے اہم کردار ادا کیا۔ بھانوکا نے 45 گیندوں میں 71 رنز کی ناٹ آوٹ اننگز کھیلی۔ اس دوران انہوں نے 6 چوکے اور 3 چھکے لگائے۔ بلے بازی کے دوران ان کا اسٹرائیک ریٹ 157.77 رہا۔ پانچویں پوزیشن پر بلے بازی کرتے ہوئے بھانوکا نے محتاط انداز میں بلے بازی شروع کی۔ انہوں نے چھٹی وکٹ کے لئے ونیندو ہسرنگا کے ساتھ 36 گیندوں پر 58 رنز کی شراکت داری کی اور آخر کار 31 گیندوں میں ناٹ آوٹ 54* رنز کی شراکت داری کے ساتھ اسکور کو 170 رنز تک پہنچا دیا۔

      بھانوکا کا فرسٹ کلاس کیریئر بھی کافی شاندار رہا ہے۔ انہوں نے 77 فرسٹ کلاس میچوں میں 36.49 کی اوسط سے 4087 رنز بنائے۔ اس دوران انہوں نے 9 سنچریاں اور 21 نصف سنچریاں بنائی ہیں ۔ لسٹ اے کے 120 میچوں میں بھانوکا نے 27.86 کی اوسط سے 2842 رنز بنائے ہیں۔ انہوں نے لسٹ اے میں تین سنچریاں اور 16 نصف سنچریاں بنائی ہیں۔ ٹی ٹوینٹی میچوں کی بات کریں تو انہوں نے 105 میچوں میں 23.60 کی اوسط اور 10 نصف سنچریوں کی مدد سے 1912 رنز بنائے۔ ان کی فرسٹ کلاس میں 47، لسٹ اے میں 15 اور ٹی ٹوینٹی میں 27 وکٹیں ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: