ہوم » نیوز » اسپورٹس

گوتم گمبھیرکا پھر چھلکا درد، صرف ایک چھکے کی وجہ سےنہیں ہرکھلاڑی کے تعاون سے بنے چمپئن

10 سال پہلے آج ہی کے دن ہندوستان عالمی کپ (2011 ODI World Cup) جیت کر ونڈے کرکٹ کا نیا بادشاہ بنا تھا۔ حالانکہ، 1983 کے بعد اس خواب کو سچ کرنے میں 28 سال لگ گئے، لیکن جب یہ پورا ہوا تو پورا ملک خوشی سے جھوم اٹھا تھا۔

  • Share this:
گوتم گمبھیرکا پھر چھلکا درد، صرف ایک چھکے کی وجہ سےنہیں ہرکھلاڑی کے تعاون سے بنے چمپئن
گوتم گمبھیرکا پھر چھلکا درد، صرف ایک چھکے کی وجہ سےنہیں ہرکھلاڑی کے تعاون سے بنے چمپئن

نئی دہلی: 10 سال پہلے آج ہی کے دن ہندوستان عالمی کپ (2011 ODI World Cup) جیت کر ونڈے کرکٹ کا نیا بادشاہ بنا تھا۔ حالانکہ، 1983 کے بعد اس خواب کو سچ کرنے میں 28 سال لگ گئے، لیکن جب یہ پورا ہوا تو پورا ملک خوشی سے جھوم اٹھا تھا۔ آج پھر سے لاکھوں کرکٹ مداح اس لمحے کو یاد کر رہے ہیں۔


2011 عالمی کپ میں ہر کھلاڑی نے اپنے اپنے طریقے سے ٹیم کی جیت میں تعاون دیا، لیکن ایک کھلاڑی خاص رہا۔ کیونکہ اس نے سری لنکا کے خلاف فائنل میں سچن تندولکر (Sachin Tendulkar) اور ویریندر سہواگ (Virendra Sehwag) کے جلدی آوٹ ہونے کے بعد بھی ہمت نہیں ہاری اور 97 رنوں کی اننگ کھیلتے ہوئے ٹیم کی جیت کی بنیاد رکھی۔ اس کھلاڑی کا نام گوتم گمبھیر (Gautam Gambhir) ہے۔ گوتم گمبھیر بھی آج تک عالمی کپ کی جیت کو نہیں بھولے ہیں۔


گوتم گمبھیر آج تک 2011 عالمی کپ کی جیت کو نہیں بھولے ہیں۔
گوتم گمبھیر آج تک 2011 عالمی کپ کی جیت کو نہیں بھولے ہیں۔


اس جیت کے 10 سال پورے ہونے پر گوتم گمبھیر نے ٹائمس آف انڈیا کو دیئے انٹرویو میں ہندوستانی ٹیم کی کامیابی، کپتان اور کوچ کے تعاون اور ہندوستانی کرکٹ کے مستقبل کو لے کر کھل کر بات کی۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو 28 سال بعد عالمی کپ چمپئن بنانے میں ہر کھلاڑی کا تعاون رہا۔ یہ کسی ایک کی جیت نہیں تھی۔

 



گزشتہ سال ایک کرکٹ ویب سائٹ نے عالمی کپ جیت کے 9 سال مکمل ہونے پر مہندر سنگھ دھونی کی چھکا لگا کر فائنل جتانے کی تصویر پوسٹ کی تھی۔ اس تصویر کے ساتھ یہ کیپشن بھی دیا تھا کہ وہ شاٹ جس نے کروڑوں مداحوں کو خوشی سے جھومنے پر مجبور کردیا۔ گوتم گمبھیر کو یہ بات ہضم نہیں ہوئی تھی اور تب انہوں نے کہا تھا کہ صرف ایک چھکے کی بدولت نہیں، بلکہ پوری ٹیم اور سپورٹ اسٹاف کی محنت کے دم پر ہندوستان چمپئن بنا تھا۔ گوتم گمبھیر نے یہی بات عالمی کپ جیت کے 10 سال پورے ہونے پر ٹی او آئی کو دیئے انٹرویو میں بھی دہرائی۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Apr 02, 2021 07:20 PM IST