உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    عمران ملک بولے، بلے بازوں کی آنکھوں میں ڈر دیکھ کر مزہ آتا ہے، جانئے ایسا کیوں کہا؟

     اس آئی پی ایل کی تیز گیند بھی عمران Umran Malik  نے پھینکی تھی۔

    اس آئی پی ایل کی تیز گیند بھی عمران Umran Malik نے پھینکی تھی۔

    اس آئی پی ایل کی تیز گیند بھی عمران Umran Malik نے پھینکی تھی۔ تب سے ہر کوئی جموں کے اس نوجوان گیند باز کی بات کر رہا ہے۔ آئی پی ایل کے اس سیزن میں عمران نے اپنی بولنگ کی رفتار سے کئی بلے بازوں کو چونکا دیا۔ اب یہ گیند باز جنوبی افریقہ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں نظر آئے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: آئی پی ایل 2022 میں عمران ملک Umran Malik نے اپنی تیز گیند بازی کی وجہ سے کافی سرخیاں بٹوریں۔ انہیں اس آئی پی ایل کی سب سے بڑی کھوج مانا جا رہا ہے۔ اس آئی پی ایل کی تیز گیند بھی عمران میں پھینکی تھی۔ تب سے ہر کوئی جموں کے اس نوجوان گیند باز کی بات کر رہا ہے۔ آئی پی ایل کے اس سیزن میں عمران نے اپنی بولنگ کی رفتار سے کئی بلے بازوں کو چونکا دیا۔ اب یہ گیند باز جنوبی افریقہ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں نظر آئے گا۔

      میتھیو ویڈ ہاردک اور پانڈیا کو بھی کیا پریشان
      پچھلے آئی پی ایل سیزن میں، عمران ملک نے اپنی گیند کی رفتار سے میتھیو ویڈ اور ہاردک پانڈیا جیسے تجربہ کار جارحانہ بلے بازوں کو بھی پریشان کیا۔ ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں میتھیو ویڈ نے پاکستان کے شاہین آفریدی کو دو چھکے لگا کر آسٹریلیا کو ورلڈ کپ جتوایا تھا لیکن عمران کے تیز باؤنسر کا جواب ان کے پاس نہیں تھا۔ ساتھ ہی گجرات ٹائٹنز کے کپتان ہاردک پانڈیا کو بھی عمران نے اپنی رفتار اور اچھال سے پریشان کیا۔

      IPL 2022: عمران ملک کی رفتار کا قہر! باؤنسر سے چاروں کھانے چت ہوا بلے باز: ویڈیو دیکھیں

       بلے بازوں کی آنکھوں میں گیند باز کا خوف دیکھ کر مزہ آتا ہے

      انڈین ایکسپریس سے بات چیت کے دوران عمران نے بتایا کہ انہیں بلے بازوں کی آنکھوں میں گیند باز کا خوف دیکھ کر مزہ آتا ہے۔ عمران نے کہا، 'مجھے تیز گیند پھینکتے ہوئے وکٹیں لینے میں سب سے زیادہ مزہ آتا ہے اور جب بلے باز ڈرتا ہے تو مجھے لگتا ہے کہ میں تیز گیند بازی کر رہا ہوں اور میں اس میں اچھا ہوں، اسی لیے وہ (بیٹسمین) مجھ سے ڈرا ہوا ہے۔'

      IPL کی تاریخ میں 7ویں بار 700 کا اعداد و شمار پار، Jos Buttler بنے سپر مین

      عمران نے بتایا کہ وہ اس وقت خوشی محسوس کرتے ہیں جب ان کی تیز گیند بلے باز کے ہیلمٹ سے ٹکرا جاتی ہے اور سب سے زیادہ خوشی اچھی یارکر گیند پر وکٹ حاصل کرنے سے ہوتی ہے۔ عمران نے اس آئی پی ایل کے 14 میچوں میں 22 وکٹیں حاصل کیں۔ انہیں اس بہترین کارکردگی کا صلہ بھی ملا اور سلیکٹرز نے انہیں افریقہ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں ٹیم میں جگہ دی ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: