உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ICC نے پاکستان میں ہونے والی چیمپئنز ٹرافی کو لے کر دی بڑی اپ ڈیٹ، کہا : تو نہیں دیتے میزبانی

    ICC نے پاکستان میں ہونے والی چیمپئنز ٹرافی کو لے کر دیا بڑا اپ ڈیٹ، کہا : تو نہیں دیتے میزبانی ۔ (PCB/Twitter)

    ICC نے پاکستان میں ہونے والی چیمپئنز ٹرافی کو لے کر دیا بڑا اپ ڈیٹ، کہا : تو نہیں دیتے میزبانی ۔ (PCB/Twitter)

    Champions Trophy 2025 : پاکستان کو 2025 چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی سونپنے کے بعد آئی سی سی کو بھروسہ ہے کہ ایک دہائی سے زیادہ وقت تک کہاں کھیلنے کو لے کر اعتراض کے باوجود اب ٹیموں کو اس گلوبل ٹورنامنٹ کے لئے کوئی پریشانی نہیں ہوگی ۔

    • Share this:
      دبئی : پاکستان کو 2025 چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی سونپنے کے بعد آئی سی سی کو بھروسہ ہے کہ ایک دہائی سے زیادہ وقت تک کہاں کھیلنے کو لے کر اعتراض کے باوجود اب ٹیموں کو اس گلوبل ٹورنامنٹ کے لئے کوئی پریشانی نہیں ہوگی ۔ آئی سی سی آئی نے گزشتہ ہفتہ پاکستان کو 2025 چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی کا اختیار دیا تھا ۔ اس سے دو دہائیوں سے زیادہ وقت کے بعد پاکستان میں بڑے ٹورنامنٹ کی واپسی ہوگی ۔ پچھلی مرتبہ پاکستان نے اپنی سرزمین پر 1996 ورلڈ کپ کے روپ میں آئی سی سی ٹورنامنٹ کی میزبانی کی تھی ۔ اس ورلڈ کپ میں ہندوستان اور سری لنکا بھی شریک میزبان تھے ۔

      سری لنکا کی ٹیم کی بس پر 2009 میں لاہور میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد سے یہ ملک میں کئی انٹرنیشنل ٹیموں کی میزبانی نہیں کرپایا ہے ۔ آئی سی سی کے صدر گریگ بارکلے نے میڈیا راونڈ ٹیبل کے دوران کہا کہ اس کا جواب ہاں ہے ، ہم اب تک جو دیکھ رہے ہیں اس کے مطابق بالکل ہاں ( ٹیمیں یاترا کریں گی) ۔ بارکلے نے کہا کہ آئی سی سی کرکٹ کا انعقاد کئی سالوں کے بعد پاکستان میں واپس آرہا ہے ۔ گزشتہ کچھ ہفتوں میں جو ہوا اس کو چھوڑ کر یہ سب کسی ایشو کے بغیر آگے بڑھا ہے ۔

      اس سال ستمبر میں نیوزی لینڈ اور انگلینڈ تحفظ وجوہات کی وجہ سے پاکستان دورے پر کھیلی جانے والی دو طرفہ سیریز سے پیچھے ہٹ گئے تھے ۔ گریگ بارکلے نے جو دے کر کہا کہ اگر آئی سی سی کو لگتا ہے کہ پاکستان کامیاب طریقہ سے اس کا انعقاد نہیں کرسکے گا ، تو اس کو میزبانی کا اختیار نہیں دیتا ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں پاکستان کی میزبانی پر شبہ ہوتا ہے تو ہم اس انعقاد کا اختیار اس کو نہیں دیتے ۔

      ٹورنامنٹ میں ہندوستان کی شراکت داری پر شک ہے ، کیونکہ ہندوستان میں دہشت گردانہ حملوں کے بعد سفارتی کشیدگی کی وجہ سے دونوں پڑوسی ممالک کے درمیان 2012 کے بعد کسی دوطرفہ سیریز کا انعقاد نہیں ہوا ہے ۔ کھیل وزیر انوراگ ٹھاکر نے پچھلے ہفتہ کہا تھا کہ چیمپئنز ٹرافی میں ہندوستان کی شراکت داری پر فیصلہ وقت آنے پر لیا جائے گا ، کیونکہ انٹرنیشنل ٹیموں کیلئے پڑوسی ملک کا دورہ کرنے یلئے ابھی بھی سیکورٹی معاملہ ہیں ۔

      گریگ بارکلے نے اس کو چیلنجنگ ایشو قرار دیتے امید ظاہر کی کہ کرکٹ کے ذریعہ دونوں ممالک کے رشتوں میں سدھار ہوسکتی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: