ہوم » نیوز » اسپورٹس

جنوبی افریقہ کے خلاف میچ میں پاکستان کے ان دو بڑے کھلاڑیوں کی چھٹی یقینی ، اس بلے باز کو مل ستکتا ہے موقع

پوائنٹس ٹیبل میں نچلے پائيدانوں پر چل رہی جنوبی افریقہ اور پاکستان کی ٹیمیں اتوار کو آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ میچ میں اپنی توقعات برقرار رکھنے کے ارادے سے اتریں گی ۔

  • Share this:
جنوبی افریقہ کے خلاف میچ میں پاکستان کے ان دو بڑے کھلاڑیوں کی چھٹی یقینی ، اس بلے باز کو مل ستکتا ہے موقع
پاکستانی ٹیم

پوائنٹس ٹیبل میں نچلے پائيدانوں پر چل رہی جنوبی افریقہ اور پاکستان کی ٹیمیں اتوار کو آئی سی سی کرکٹ عالمی کپ میچ میں اپنی توقعات برقرار رکھنے کے ارادے سے اتریں گی ۔ دونوں ٹیموں کیلئے اس میچ میں کرو یا مرو کی صورتحال ہے ۔ میچ میں ہارنے والی ٹیم کی ٹورنامنٹ میں آگے بڑھنے پوری امیدیں ختم ہوجائیں گی ۔


پاکستان میں اس ٹیم کو لے کر تبدیلیاں تقریبا طے ہیں ۔ بتایا جارہا ہے کہ جنوبی افریقا کے خلاف میچ میں حسن علی اور شعیب ملک کا ڈراپ ہونا یقینی ہے اور ان کی جگہ حارث سہیل اور شاہین شاہ آفریدی کو شامل کیے جانے کا امکان ہے۔ تاہم ایک دلچسپ بات یہ بھی ہے کہ پاکستان نے ورلڈ کپ اسکواڈ میں ایک نئے تیز گیند باز حسنین کو بھی شامل کیا تھا ، مگر اس کو ابھی تک ایک بھی میچ میں کھلایا نہیں گیا ہے ۔


دنیا کی نمبر ایک ٹیم اور میزبان انگلینڈ کے خلاف سری لنکا کی 20 رنز کی سنسنی خیز فتح نے ٹورنامنٹ کو مکمل طور کھول دیا ہے اور ایک وقت مقابلے سے باہر دکھائی دے رہی ٹیموں کو بھی امید کی کرن نظر آنے لگی ہے۔ جنوبی افریقہ کے لیے یہ مقابلہ ہر حال میں جیتنا ہے اور ہارنے کی صورت میں وہ ٹورنامنٹ سے باہر ہو جائے گا جبکہ پاکستان کے لئے جیت آگے کا راستہ کھول دے گی لیکن ہارنے کی صورت میں بھی اس کے پاس اپنے آخری تین میچ ہوں گے اور ہلکی امید بنی رہے گی ۔اس ورلڈ کپ میں ابھی تک دونوں ہی ٹیموں نے ایک ایک مقابلے جیتے ہیں۔ جنوبی افریقہ کے چھ میچوں میں ایک جیت، چار ہار اور ایک منسوخ کے ساتھ تین پوائنٹس ہیں جبکہ پاکستان کے پانچ مقابلوں میں ایک جیت، تین ہار اور ایک میچ منسوخ ہونے سے تین پوائنٹس ہیں۔


دونوں ہی ٹیموں کے لئے یہ مقابلہ سیمی فائنل کی دوڑ میں رہنے کے لئے کافی اہم ہے۔ جنوبی افریقہ کو پاکستان کے خلاف ہر حال میں جیت درج کرنی ہوگی۔ ٹورنامنٹ میں اس اب تین مقابلے باقی ہیں,ایسے میں ایک بھی مقابلہ ہارنا اس کے لئے آگے کے دروازے مکمل طور پر بند کر سکتا ہے ۔ اگرچہ اب بھی اس کے لئے آگے کی راہ مشکل ہے اور کوئی کرشمہ ہی جنوبی افریقہ کا بیڑہ پار لگا سکتا ہے۔

جنوبی افریقہ کو اپنے پچھلے مقابلے میں نیوزی لینڈ کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا اور اس کی یہ ٹورنامنٹ میں چوتھی شکست تھی۔ چھ میچوں میں چار شکست سے جنوبی افریقہ کے لئے سیمی فائنل کی دوڑ انتہائی مشکل ہو گئی ہے اور اس کے پاس اس ٹورنامنٹ میں واپسی کرنے کے لئے زیادہ کچھ نہیں بچا ہے۔

یو این آئی کے ان پٹ کے ساتھ
First published: Jun 23, 2019 09:09 AM IST