உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IND vs PAK: ہندوستان نے پاکستان سے لیا بدلہ، 10 مہینے بعد اسی میدان پر چھکے سے جیتا میچ

    IND vs PAK: ہندوستان نے پاکستان سے لیا بدلہ، 10 مہینے بعد اسی میدان پر چھکے سے جیتا میچ (AP)

    IND vs PAK: ہندوستان نے پاکستان سے لیا بدلہ، 10 مہینے بعد اسی میدان پر چھکے سے جیتا میچ (AP)

    Asia Cup 2022: بھونیشور کمار اور ہاردک پانڈیا نے پہلے شاندار گیند بازی کی۔ اس کے بعد بلے بازوں نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہندوستان کو ایشیا کپ میں پہلی جیت دلائی۔ ہندوستان نے پاکستان کو 5 وکٹوں سے شکست دے دی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Mumbai | Kolkata | Chennai
    • Share this:
      نئی دہلی : بھونیشور کمار اور ہاردک پانڈیا نے پہلے شاندار گیند بازی کی۔ اس کے بعد بلے بازوں نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہندوستان کو ایشیا کپ  میں پہلی جیت دلائی۔ ہندوستان نے پاکستان کو 5 وکٹوں سے شکست دے دی۔ اس کے ساتھ اس نے اس گراؤنڈ پر 10 ماہ پہلے ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں 10 وکٹوں سے شکست کا بدلہ بھی لے لیا ہے۔ میچ میں پاکستان نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 147 رنز بنائے۔ جواب میں ہندوستان نے 19.4 اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر ہدف کو حاصل کر لیا۔ وراٹ کوہلی اور رویندر جڈیجہ نے 35-35 رنز بنائے۔ بھونیشور نے 4 جبکہ پانڈیا نے 3 وکٹیں حاصل کیں۔ پانڈیا 33 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ انہوں نے آخری اوور میں چھکا لگا کر ٹیم کو جیت دلائی ۔

      ہدف کے تعاقب میں ہندوستان کی شروعات کچھ اچھی نہیں رہی ۔ ہندوستان کو پہلا جھٹکا پہلے ہی اوور میں کے ایل راہل کے طور پر لگا ۔ راہل کھاتہ بھی نہیں کھول سکے اور نسیم شاہ کی گیند پر آوٹ ہوگئے۔ اس کے بعد کپتان روہت شرما اور وراٹ کوہلی نے اننگز کو سنبھالنے کی کوشش کی اور دونوں کے درمیان 49 رنوں کی پارٹنر شپ ہوئی ۔ اس کے بعد روہت شرما 12رنز بناکر آوٹ ہوگئے ۔ روہت کے آوٹ ہونے کے تھوڑی دیر بعد ہی وراٹ کوہلی بھی 35رنز بناکر آوٹ ہوگئے ۔ اس طرح ہندوستان کو تیسر جھٹکا 53کے اسکور پر لگا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: ہندوستان کے خلاف پاکستان کا نوجوان گیند باز کرے گا ڈیبیو، لے چکا ہے ہیٹ ٹرک


      اس کے بعد رویندر جڈیجہ اور سوریہ کمار یادو نے ہندوستان کو اننگز کو آگے بڑھایا ۔ تاہم 89 کے مجموعی اسکور پر سوریہ کمار بھی آوٹ ہوگئے ۔ سوریہ کمار نے 18 رنز بنائے ۔ سوریہ کمار کے آوٹ ہونے کے بعد ہاردک پانڈیا کریز پر آئے اور انہوں نے جڈیجہ کے ساتھ مل کر ہندوستان کی اننگز کو آگے بڑھایا ۔ تاہم آخری اوور کی پہلی گیند پر جڈیجہ آوٹ ہوگئے ۔ انہیں محمد نواز نے آوٹ کیا ۔ انہوں نے 35 رنوں کی شاندار اننگز کھیلی ۔ اس وقت تک میچ تقریبا ہندوستان کی جھولی میں آچکا تھا ۔ آخری اوور میں صرف سات رنز کی ضرورت تھی ۔ آخری اوور میں دنیش کارتک نے ایک رن بناکر پانڈیا کو اسٹرائیک دی اور پھر پانڈیا نے چھکا لگا کر ٹیم انڈیا کو جیت دلا دی۔ پانڈیا نے ناٹ آوٹ 33 رنز بنائے ۔

      اس سے پہلے پاکستان کو پہلا جھٹکا لگ گیا ہے ۔ پاکستان کے کپتان بابر اعظم دس رن بناکر بھونیشور کمار کے شکار بن گئے ۔ بابر اعظم کے آوٹ ہونے کے بعد فخرزمان میدان پر اترے ۔ انہوں نے ایک دو شارٹس ضرور لگائے، مگر کچھ زیادہ نہیں کرسکے ۔ فخر زمان دس رن بناکر آویش خان کے شکار بنے ۔ فخر زمان کو وکٹ کے پیچھے دنیش کارتک کے کیچ آوٹ کیا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: میچ سے پہلے روہت شرما نے بابر اعظم سے کہا : بھائی شادی کرلو اور پھر....


      فخرزمان کے آوٹ ہونے کے بعد افتخار احمد کریز پر آئے اور انہوں نے محمد رضوان کے ساتھ مل کر اننگز کو سنبھالنے کی کوشش کی ۔ تاہم 22 گیندوں پر 28 رنز بناکر وہ آوٹ ہوگئے ۔ ان کو ہاردک پانڈیا نے وکٹ کے پیچھے دنیش کارتک کے ہاتھوں کیچ آوٹ کیا ۔ پاکستان کو تیسرا جھٹکا 87  کے مجموعی اسکور پر لگا ۔ اس کے بعد محمد رضوان بھی زیادہ دیر تک نہیں ٹھہر سکے اور 42 گیندوں پر 43 رنز بناکر پویلین لوٹ گئے ۔

      محمد رضوان کے بعد خوشدل شاہ بھی جلد ہی پویلین لوٹ گئے ۔ خوشدل شاہ دو رنز بنائے ۔ اس بعد آصف علی بھی جلد ہی پویلین لوٹ گئے ۔ انہوں نے نو رنز بنائے ۔ آصف کے بعد محمد نواز بھی صرف ایک رن ہی بناکر پولین لوٹ گئے جبکہ نسیم شاہ اپنا کھاتہ بھی نہیں کھول سکے ۔ تاہم بعد میں حارث روف نے سات گیندوں میں 13 رنز اور شاہنواز دھانی نے چھ گیندوں پر 16 رنز بناکر ٹیم کے اسکور کو 147 رنز تک پہنچایا ۔

      ہندوستان کی طرف سے بھونیشور کمار نے سب سے زیادہ چار وکٹیں لی ۔ ان کے علاوہ ارشدیپ سنگھ نے دو ، ہاردک پانڈیا نے تین اور آویش خان نے ایک کھلاڑی کو آوٹ کیا ۔ یجویندر چہل اور رویندر جڈیجہ کو کوئی وکٹ نہیں ملی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: