உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    India vs South Africa: ون ڈے سیریز میں ٹیم انڈیا کا سوپڑا صاف ، ہندوستان تیسرا ون ڈے بھی ہارا

    India vs South Africa 2022 3rd ODI : جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کوئنٹن ڈی کاک کی شاندار سنچری کی بدولت ہندوستان کے سامنے 288 رنز کا ہدف رکھا ۔ شیکھر دھون (Shikhar Dhawan) ، وراٹ کوہلی (Virat Kohli) اور دیپک چاہر کی نصف سنچریوں کے باوجود ہندوستانی ٹیم 283 رنز ہی بنا سکی۔

    India vs South Africa 2022 3rd ODI : جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کوئنٹن ڈی کاک کی شاندار سنچری کی بدولت ہندوستان کے سامنے 288 رنز کا ہدف رکھا ۔ شیکھر دھون (Shikhar Dhawan) ، وراٹ کوہلی (Virat Kohli) اور دیپک چاہر کی نصف سنچریوں کے باوجود ہندوستانی ٹیم 283 رنز ہی بنا سکی۔

    India vs South Africa 2022 3rd ODI : جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کوئنٹن ڈی کاک کی شاندار سنچری کی بدولت ہندوستان کے سامنے 288 رنز کا ہدف رکھا ۔ شیکھر دھون (Shikhar Dhawan) ، وراٹ کوہلی (Virat Kohli) اور دیپک چاہر کی نصف سنچریوں کے باوجود ہندوستانی ٹیم 283 رنز ہی بنا سکی۔

    • Share this:
      کیپ ٹاؤن : کیپ ٹاؤن میں کھیلے گئے تیسرے ون ڈے میں جنوبی افریقہ نے ہندوستانی ٹیم (India vs South Africa) کو 4 رنز سے شکست دے دی۔ جنوبی افریقہ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کوئنٹن ڈی کاک کی شاندار سنچری کی بدولت ہندوستان کے سامنے 288 رنز کا ہدف رکھا ۔ شیکھر دھون (Shikhar Dhawan) ، وراٹ کوہلی (Virat Kohli) اور دیپک چاہر کی نصف سنچریوں کے باوجود ہندوستانی ٹیم 283 رنز ہی بنا سکی۔ اس کے ساتھ ہی افریقی ٹیم نے ہندوستان کو ون ڈے سیریز میں 3-0 سے کلین سویپ کردیا۔ افریقی ٹیم نے ٹیسٹ سیریز بھی 2-1 سے جیتی تھی۔

      کیشو مہاراج نے کفایتی گیند بازی کرتے ہوئے 10 اوورز میں 39 رن دے کر ایک وکٹ حاصل کیا ۔ ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے کپتان کے ایل راہل اور شیکھر دھون ٹیم انڈیا کو اچھی شروعات نہیں دلا سکے۔ ہندوستانی ٹیم کو پہلا جھٹکا کے ایل راہل کی صورت میں لگا ۔ راہل صرف 9 رنز بنا کر ملان کو لنگی انگیڈی کی گیند پر سلپ میں کیچ دے بیٹھے ۔ اس کے بعد وراٹ کوہلی تیسرے نمبر پر اترے ۔ کوہلی اور دھون نے دوسری وکٹ کیلئے 98 رنز کی شراکت داری کی ۔

      شیکھر دھون اپنی 18 ویں سنچری کی جانب گامزن تھے ، لیکن 61 رنز کے ذاتی اسکور پر آؤٹ ہوگئے۔ اس کے بعد چوتھے نمبر پر آنے والے ریشبھ پنت نے ایک مرتبہ پھر اپنی وکٹ جلد ہی گنوادی ۔ پہلی ہی گیند پر چوکا لگانے کی کوشش میں باؤنڈری پر کیچ آوٹ ہو گئے ۔ اس دوران کوہلی نے اپنے کیریئر کی 64ویں نصف سنچری مکمل کی ۔ تاہم وہ کیشو مہاراج کی ایک شاندار گیند پر 65 رنز بنا کر باوما کے ہاتھوں کیچ آوٹ ہو گئے ۔ شریس ایئر (26) اور سوریہ کمار یادیو (39) نے یقینی طور پر ہندوستان کی جیت کی امیدیں بڑھا دیں ، لیکن مگالا نے ایئر اور پٹوریس نے یادو کو آؤٹ کرکے ہندوستان کی امیدوں پر پانی پھیر دیا ۔

      اس سے قبل جنوبی افریقہ نے ان فارم سلامی بلے باز کوئنٹن ڈی کاک (124) اور رسی وین ڈیر ڈوسن (52 رنز) کی نصف سنچری کی مدد سے 287 رنز بنائے ۔ وکٹ کیپر بلے باز ڈی کاک نے 130 گیندوں پر 124 رنز کی اننگز کھیلی اور ڈوسن کے ساتھ چوتھی وکٹ کے لئے 144 رنز کی شراکت داری کی ۔ اس کے بعد ہندوستان نے ان دونوں کی لگاتار وکٹیں لے کر ہوم ٹیم کے رن ریٹ کو کنٹرول کیا ۔ اپنی چھٹی ون ڈے سنچری کے ساتھ ڈی کاک نے ہندوستان کے خلاف سب سے زیادہ سنچریوں کے جنوبی افریقی کھلاڑی اے بی ڈی ویلیئرز کے ریکارڈ کی بھی برابری کرلی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: