உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کٹک میں ٹیم انڈیا نے ویسٹ انڈیز کو چار وکٹوں سے دی مات ، 2-1 سے جیتی سیریز

    کٹک میں ٹیم انڈیا نے ویسٹ انڈیز کو چار وکٹوں سے دی مات ، 2-1 سے جیتی سیریز

    کٹک میں ٹیم انڈیا نے ویسٹ انڈیز کو چار وکٹوں سے دی مات ، 2-1 سے جیتی سیریز

    کپتان وراٹ کوہلی (85) ، اوپنر لوکیش راہل (77) اور نائب کپتان روہت شرما (63) کی شاندار نصف سنچریوں کی بدولت ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کو تیسرے اور آخری ون ڈے میں اتوار کے روز چار وکٹ سے شکست دے کر تین میچوں کی سیریز 2۔1 سے جیت لی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      کپتان وراٹ کوہلی (85) ، اوپنر لوکیش راہل (77) اور نائب کپتان روہت شرما (63) کی شاندار نصف سنچریوں اور نچلے آرڈر میں رویندر جڈیجہ اور شاردل ٹھاکر کے بہترین تعاون کی بدولت ہندوستان نے ویسٹ انڈیز کو بڑے اسکور والے تیسرے اور آخری ون ڈے میں اتوار کے روز چار وکٹ سے شکست دے کر تین میچوں کی سیریز 2۔1 سے جیت لی۔ مقابلہ کافی سخت تھا ، لیکن جڈیجہ نے ناٹ آؤٹ 39 اور ٹھاکر نے ناٹ آؤٹ 17 رن بنا کر ہندوستان کو جیت سے ہمکنار کردیا۔ ویسٹ انڈیز نے نکولس پورن (89) اور کپتان کیرون پولارڈ (ناٹ آؤٹ 74) کی آتشی نصف سنچری اننگز اور ان کے درمیان پانچویں وکٹ کے لئے 135 رنوں کی زبردست شراکت داری کی بدولت 50 اوور میں پانچ وکٹ پر 315 رن کا مضبوط اسکور بنایا جبکہ ہندوستان نے 48.4 اوور میں چھ وکٹ پر 316 رن بنا کر جیت اور سیریز اپنے نام کر لی۔

      ہندوستان نے اس جیت کے ساتھ اس سال اتوار کو میچ ہارنے کا تعطل بھی ختم کر دیا ۔ مشکل ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے ہندوستان نے شاندار شروعات کی ۔ ہندوستانی اوپنروں لوکیش راہل اور روہت شرما نے اپنی شاندار فارم جاری رکھتے ہوئے نصف سنچریاں بنائیں اور اوپننگ شراکت داری میں 122 رن جوڑے ۔ راہل اور روہت نے دوسرے ون ڈے میں ہندوستان کی جیت میں سنچری بنائی تھی ۔ راہل نے اپنی 12 ویں نصف سنچری بنائی جبکہ روہت کی یہ 43 ویں نصف سنچری تھی اور وراٹ نے 55 ویں نصف سنچری بنائی۔ وراٹ نے 81 گیندوں پر 85 رن کی اپنی اننگز میں نو چوکے لگائے۔

      ٹیم انڈیا ۔ تصویر : بی سی سی آئی
      ٹیم انڈیا ۔ تصویر : بی سی سی آئی


      راہل اور روہت کے درمیان 122 رنوں کی شراکت داری 21.2 اوور میں ہوئی۔ روہت 63 گیندوں میں آٹھ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 63 رن بنا کر جیسن ہولڈر کا شکار بنے۔ راہل کا وکٹ 167 کے اسکور پر گرا۔ راہل 89 گیندوں میں آٹھ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 77 رن بنا کر اے جوزف کی گیند پر آوٹ ہوئے۔ تیز گیند باز كيمو پال نے شريس ائیر اور ریشبھ پنت کو جلدی جلدی آؤٹ کر کے ہندوستانی ٹیم کو پریشانی میں ڈال دیا۔ گزشتہ میچ میں طوفانی بلے بازی کرنے والے ائیر اور پنت اس بار 7۔7 رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ شیلڈن كنٹریل نے کیدار جادھو 9 کو بولڈ کر کے ہندوستان کی مشکل میں اضافہ کردیا۔

      ان تینوں بلے بازوں نے دوسرے سرے پر کپتان وراٹ کوہلی کے موجود ہونے کے باوجود وکٹ پر ٹکنے کی ذمہ داری نہیں دکھائی۔ ہندوستان کی سبھی امیدیں وراٹ پر ٹکی ہوئی تھیں اور انہیں دوسرے سرے پر رویندر جڈیجہ کا اچھا ساتھ ملا۔ میچ مسلسل دلچسپ ہوتا جا رہا تھا۔ 45 اوور میں ہندوستان کا اسکور 278 رن تک پہنچ چکا تھا اور آخری 30 گیندوں اسے 38 رنز چاہئے تھے۔ تاہم عین وقت پر کپتان کوہلی آوٹ ہوگئے ۔ کوہلی کے آوٹ ہونے کے بعد میچ مزید دلچسپ ہوگیا ، مگر شاردل ٹھاکر نے اپنی بلے بازی کا جلوہ دکھایا اور جڈیجہ کے ساتھ مل کر ٹیم کو جیت سے ہمکنار کرادیا ۔
      First published: