ہوم » نیوز » اسپورٹس

IND vs AUS: ٹیم انڈیا 36 رن پر ڈھیر، ٹیسٹ تاریخ کا سب سے برا ریکارڈ

ہندستان اور آسٹریلیا کے درمیان ایڈیلیڈ میں کھیلے جا رہے پہلے ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں ٹیم انڈیا نے شرمناک ریکارڈ بنایا ہے۔ ہندستانی ٹیم پہلی اننگز میں محض 9 وکٹ کھو کر 36 رن ہی بنا سکی۔

  • Share this:
IND vs AUS: ٹیم انڈیا 36 رن پر ڈھیر، ٹیسٹ تاریخ کا سب سے برا ریکارڈ
ٹیم انڈیا کی شرمناک کارکردگی، دوسری اننگز میں بنائے صرف 36 رن

ایڈیلیڈ۔ ہندستان اور آسٹریلیا  (India vs Australia) کے درمیان ایڈیلیڈ میں کھیلے جا رہے پہلے ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں ٹیم انڈیا نے شرمناک ریکارڈ بنایا ہے۔ ہندستانی ٹیم پہلی اننگز میں محض 9 وکٹ کھو کر 36 رن ہی بنا سکی۔ ہندستانی بلےباز محمد شمی تیز گیندباز پیٹ کمنس کی گیند پر زخمی ہو  بیٹھے۔ ہندستان نے آسٹریلیا کے سامنے جیت کے لئے 90 رنوں کا ہدف رکھا ہے۔


ہندستانی ٹیم (Team India) نے ٹیسٹ کرکٹ میں اب تک کا سب سے خراب مظاہرہ کیا ہے۔ قبل ازیں، 56 سال پہلے ٹیم انڈیا انگلینڈ کے خلاف صرف 42 رن بنا کر آوٹ ہو گئی تھی۔ آسٹریلیا کے تیز گیندباز جوش ہیزل وڈ نے پانچ اور پیٹ کمنس نے چار وکٹ لئے۔


اس سے پہلے ہندستان نے 20 جون 1974 کو لارڈز گراؤنڈ میں انگلینڈ کے خلاف 42 رن بنائے تھے۔ اس کے بعد ہندوستان نے اب اپنے سب سے برے اور کم اسکور کا ریکارڈ قائم کردیا ہے۔ ہندوستان (Team India) کی دوسری اننگز نو وکٹوں کے نقصان پر 36 رنوں پر سمٹ گئی اور محمد شمی کے چوٹ لگنے کے باعث ہندوستانی اننگز کا خاتمہ ہوگیا۔


ہندستان اور آسٹریلیا (India vs Australia) کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ 17 دسمبر سے کھیلا جا رہا ہے۔ ہندستانی ٹیم (Team India) نے پہلی اننگز میں 244 رن بنائے۔ اس کے بعد اس نے آسٹریلیا کو 191 رن پر ہی ڈھیر کر دیا۔ اس طرح اسے 53 رن کی سبقت ملی۔ امید تھی کہ اس سبقت کے سہارے ہندستان (Team India) میزبان ٹیم کو ایک بڑا ہدف دے گا۔ لیکن میچ کے تیسرے دن ہندستانی ٹیم اپنی ٹیسٹ تاریخ کا سب سے خراب مظاہرہ کر کے 36 رن پر ہی سمٹ گئی۔ آسٹریلیا نے ٹیم انڈیا (Team India) کو 9 وکٹ پر 36 رن کے اسکور پر روک دیا۔ محمد شمی ایک رن بنا کر ریٹائرڈ ہرٹ ہوئے۔

ہندستانی ٹیم 1932 سے ٹیسٹ کرکٹ کھیل رہی ہے۔ 36 رن پر آوٹ ہونے کے ساتھ ہی 19 دسمبر ہندستانی ٹیسٹ تاریخ میں ایک ایسی تاریخ کے طور پر درج ہو گیا ہے جسے یاد کرنے پر شاید ہی چہرے پر مسکان آئے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Dec 19, 2020 11:34 AM IST