உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    INDvsAUS : جڈیجہ کی طوفانی اننگز ، ہندوستان نے پہلے ٹی 20 میچ میں آسٹریلیا کو 11 رنوں سے ہرایا

    INDvsAUS: جڈیجہ کی طوفانی اننگز ، ہندوستان نے پہلے ٹی 20 میچ آسٹریلیا کو 11 رنوں سے ہرایا ۔ (PIC: AP)

    INDvsAUS: جڈیجہ کی طوفانی اننگز ، ہندوستان نے پہلے ٹی 20 میچ آسٹریلیا کو 11 رنوں سے ہرایا ۔ (PIC: AP)

    تین ٹی ٹوینٹی میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں ہندوستان نے آسٹریلیا کو گیارہ رنوں سے ہرا کر سیریز کا فاتحانہ آغاز کیا ہے ۔

    • Share this:
      تین ٹی ٹوینٹی میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں ہندوستان نے آسٹریلیا کو گیارہ رنوں سے ہرا کر سیریز کا فاتحانہ آغاز کیا ہے ۔ ہندوستان نے ٹاس ہار کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کے ایل راہل کے 40 گیندوں پر پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 51 رنز اورجڈیجہ کے 23 گیندوں میں پانچ چوکوں اور ایک چھکے کے سہارے ناٹ آوٹ44 رنز کی تیز رفتار اننگز کی بدولت 161 رن بنائے ، جس کے جواب میں آسٹریلیا کی ٹیم مقررہ 20 اوورس میں 150 رن ہی بناسکی ۔

      ٹاس ہار کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے ہندوستان کی شروعات اچھی نہیں رہی اور اوپنر شیکھر دھون کو مچل اسٹارک نے بولڈ کرکے پویلین بھیج دیا۔ دھون نے چھ گیندوں میں ایک رن بنائے۔ دھون کے بعد کپتان وراٹ کوہلی بھی زیادہ دیر کریز پر نہ ٹھہر سکے اور نو گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے نو رن بناکر آوٹ ہوگئے۔ راہل نے ذمہ داری نبھاتے ہوئے ٹیم کی اننگز کوآگے بڑھایا اور اچھی بلے بازی کرتے ہوئے ٹی-20 کیریئر کی اپنی 12 ویں نصف سنچری مکمل کی۔ لیکن اس کے بعد وہ اپنی اننگز کو آگے نہیں بڑھاسکے اورموئیسس ہینرکس کی گیند پر ایباٹ کو کیچ تھما کر آوٹ ہوگئے۔

      مڈل آرڈر بیٹسمین سنجو سیمسن نے 15 گیندوں میں ایک چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 23 رنز بنائے۔ منیش پانڈے بھی اپناجلوہ بکھیرنے میں ناکام رہے اور آٹھ گیندوں میں صرف دو رنز بنا کر ایڈم زیمپا کا شکار بنے۔ آسٹریلیا کے خلاف ون ڈے سیریز میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا بھی کچھ خاص نہیں کرسکے اور انہوں نے ایک چھکے کی مدد سے 15 گیندوں پر 16رنز بنائے۔

      جڈیجہ نے آخر میں ایک بہترین اننگز کھیلی اور ٹیم کو ایک چیلنجنگ اسکور تک پہنچایا۔ ٹی-20 سیریز کے لیے ٹیم میں شامل کیے گئے واشنگٹن سندر نے سات رن بنائے۔ آسٹریلیا کی جانب سے ہینرکس نے چاراوور میں 22 رن دے کر تین، اسٹارک نے چاراوور میں 34 رن پر دو، زیمپا نے چار میں 20 رن خرچ کرکے ایک اور مچل سوپسن نے دو اوورس میں 21 رن دے کر ایک وکٹ حاصل کیا۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: