ہوم » نیوز » اسپورٹس

IPL 2020 : مہندر سنگھ دھونی کا اعلان ، نہیں لوں گا آئی پی ایل سے ریٹائرمنٹ ، چنئی کیلئے کھلتا رہوں گا

دھونی نے اتوار کے روز کنگس الیون پنجاب کے خلاف ٹاس جیتا اور ٹاس کے بعد جب پوچھا گیا کہ کیا یہ چنئی کیلئے ان کا آخری میچ ہے تو دھونی نے کہا کہ یقینی طور پر نہیں ۔

  • UNI
  • Last Updated: Nov 01, 2020 07:48 PM IST
  • Share this:
IPL 2020 : مہندر سنگھ دھونی کا اعلان ، نہیں لوں گا آئی پی ایل سے ریٹائرمنٹ ، چنئی کیلئے کھلتا رہوں گا
IPL 2020 : مہندر سنگھ دھونی کا اعلان ، نہیں لوں گا آئی پی ایل سے ریٹائرمنٹ ، چنئی کیلئے کھلتا رہوں گا

آئی پی ایل 13 میں مایوس کن کارکردگی اور پلے آف ریس سے باہر ہونے کے بعد چنئی سپر کنگس کے کپتان مہندر سنگھ کے مستقبل کے بارے میں مسلسل قیاس آرائیاں جاری تھیں کیونکہ یہ ان کا آخری آئی پی ایل ہوگا ، لیکن دھونی نے واضح کیا وہ اگلے سال کھیلیں گے ۔ دھونی نے اتوار کے روز کنگس الیون پنجاب کے خلاف ٹاس جیتا اور ٹاس کے بعد جب پوچھا گیا کہ کیا یہ چنئی کیلئے ان کا آخری میچ ہے تو دھونی نے کہا کہ یقینی طور پر نہیں ۔ دھونی کے ان الفاظ کے بعد یہ واضح ہو گیا ہے کہ وہ اگلے سیزن میں چنئی کے لئے کھیلتے نظر آئیں گے ۔ چنئی نے دھونی کی کپتانی میں تین بار یہ اعزاز جیتا ہے اور وہ پانچ بار رنر اپ رہی ہے ۔ اس سال کے آئی پی ایل میں پہلا موقع ہے ، جب چنئی کی ٹیم دھونی کی کپتانی میں پلے آف میں نہیں پہنچی ہے۔


دھونی نے رواں سال 15 اگست کو انٹرنیشنل کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا تھا اور سب کی نظریں اس سال کے آئی پی ایل میں ان کی کارکردگی پر تھیں ۔ چنئی کی ٹیم 2016 اور 2017 میں اسپاٹ فکسنگ کے لئے معطل کرنے کے بعد ٹیم سن 2018 میں دھونی کی کپتانی میں واپس آئی اور تیسری بار ٹائٹل اپنے نام کیا ۔ چنئی 2019 میں فائنل میں پہنچ کر رنرز اپ رہی ۔


اس سیزن میں چنئی نے چمپئن ممبئی انڈینس کو افتتاحی میچ میں شکست دے کر ٹورنامنٹ کا آغاز کیا تھا ، لیکن اس کے بعد ان کی کارکردگی زوال پزیر ہونے لگی ۔ چنئی کی بیٹنگ اور بولنگ میں طاقت کی کمی تھی ۔ ٹورنامنٹ شروع ہونے سے قبل چنئی کے دو اہم کھلاڑی سریش رینا اور ہربھجن سنگھ ذاتی وجوہات کی بنا پر آئی پی ایل سے دستبردار ہوگئے ۔ چنئی نے بھی ان دونوں کھلاڑیوں کے لئے کوئی آپشن نہیں لیا ۔


چنئی کے آل راونڈر براوو گھٹنے کی انجری کے ساتھ آئی پی ایل میں پہنچے تھے اور جب وہ آئی پی ایل میں کھیلنا شروع ہوئے تو کچھ میچوں سے محروم رہنے کے بعد ان کی کارکردگی پرانی نہیں دکھائی دی اور درمیانی اوورز میں ٹیم کی بیٹنگ متاثر ہوئی۔
POINTS TABLE:

وکٹ کے پیچھے دھونی کی کارکردگی عمدہ تھی لیکن بیٹسمین فنشر سے محروم تھے۔ دھونی کے لمبے چھکے گم تھے ، وہ اسٹرائیک کو روٹیٹ کرنے میں ناکام رہے تھے اور وہ اپنے بیٹ سے رن نہیں بناسکے تھے۔ اس کے لئے دھونی پر تنقید ہوتی رہی۔ جب دھونی نے نوجوان کھلاڑیوں میں چنگاری کی کمی کی بات کی تو ان کے خلاف تنقید اور تیز ہوگئی ۔ سابق ہندوستانی کپتان اور سلیکٹر چیف کرشنمچاری سری کانت نے اس بیان پر دھونی پر طنز کیا۔

چنئی نے پلے آف میں واپسی کی کوشش کی لیکن تب تک بہت دیر ہوچکی تھی ۔ تاہم اگلے سیزن میں دھونی کے کھیلنے پر راضی ہونے کے بعد دھونی اور ان کے مداحوں نے ایک سکون کا سانس لیا ہے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Nov 01, 2020 07:48 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading