உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2020 : سن رائزرس حیدرآباد کی بڑی جیت ، کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے دی مات

    IPL 2020 : سن رائزرس حیدرآباد کی بڑی جیت ، کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے دی مات

    IPL 2020 : سن رائزرس حیدرآباد کی بڑی جیت ، کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے دی مات

    سن رائزرس حیدرآباد نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا اور مقررہ 20 اوورس میں 201 رن بنائے ، جس کے جواب میں کنگس الیون پنجاب 132 رنوں پر ہی آل آوٹ ہوگئی ۔

    • Share this:
      سن رائزرس حیدرآباد نے جمعرات کو کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے مات دیدی ۔ پہلے بلے بازی کرتے ہوئے حیدرآباد نے ڈیوڈ وارنر اور بیرسٹو کی بدولت 201 رن بنائے ۔ پنجاب ہدف کو حاصل نہیں کرسکی اور 132 رنوں پر ہی آل آوٹ ہوگئی ۔ یہ آئی پی ایل کے تاریخ میں سن رائزرس حیدرآباد کی تیسری سب سے بڑی جیت ہے ۔ اس جیت کے ساتھ ہی وہ ٹیبل پوائنٹس میں تیسری پوزیشن پر پہنچ گئی ہے ۔

      ہدف کے تعاقب میں اتری پنجاب کی ٹیم شروعات سے ہی دباو میں نظر آئی ۔ نکولس پورن کے علاوہ کوئی بھی بلے باز نہیں چلا ۔ اپنی اننگز میں انہوں نے سات چھکے اور پانچ چوکے لگائے ۔ نکولس نے 17 گیندوں میں آئی پی ایل 2020 کی سب سے تیز نصف سنچری بنائی ، جس سے ٹیم کو کچھ امید پیدا ہوئی ۔ حالانکہ کے کوئی ان کا ساتھ نہیں دے سکا ۔

      سن رائزرس حیدرآباد نے جمعرات کو کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے مات دیدی ۔
      سن رائزرس حیدرآباد نے جمعرات کو کنگس الیون پنجاب کو 69 رنوں سے مات دیدی ۔


      ٹیم کے صرف تین ہی کھلاڑی دہائی کا ہندسہ چھو سکے اور تین کھلاڑی کھاتہ کھولے بغیر لوٹ گئے ۔ ٹیم نے 11 رن پر ہی مینک اگرول کا وکٹ کھودیا ، جو کہ کے ایل راہل کی وجہ سے رن آوٹ ہوگئے ۔ اس کے بعد پربھ سمرن سنگھ بھی 11 بنا کر خلیل احمد کی گیند پر پریم گرگ کو کیچ تھما بیٹھے ۔ کپتان کے ایل راہل 11 رن بناکر آوٹ ہوگئے جبکہ میکسویل 7 رن ، مندیپ سنگھ 6 رن ، مجیب الرحمان ایک رن بنائے ۔

      اس سے قبل جانی بیرسٹو اور ڈیوڈ وارنر کی نصف سنچریوں اور دونوں کے درمیان ہوئی شاندار شراکت داری سے سن رائزرس حیدرآباد نے آئی پی ایل لیگ میں جمعرات کو پنجاب کو 201 رن بنائے ۔ بیرسٹو نے 55 گیند میں چھ چھکوں اور سات چوکوں کی مدد سے 97 رن کی اننگز کھیلنے کے بعد وارنر ( 52 ) کے ساتھ پہلے وکٹ کیلئے 160 رنوں کی شراکت داری کی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: