உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2022 : کے ایل راہل کو لگا دوہرا جھٹکا، آر سی بی سے ہار کے بعد کپتان کو ملی یہ 'سزا'

    IPL 2022 : کے ایل راہل کو لگا دوہرا جھٹکا، آر سی بی سے ہار کے بعد ملی یہ 'سزا'  (KL Rahul Instagram)

    IPL 2022 : کے ایل راہل کو لگا دوہرا جھٹکا، آر سی بی سے ہار کے بعد ملی یہ 'سزا' (KL Rahul Instagram)

    IPL 2022: لکھنؤ سپر جائنٹس کے کپتان کے ایل راہل کو دوہرا جھٹکا لگا ہے۔ آئی پی ایل 2022 کے ایک میچ میں ان کی ٹیم لکھنؤ کو رائل چیلنجرز بنگلورو نے 18 رنز سے شکست دی تھی۔ اس کے بعد راہل پر آئی پی ایل کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے پر میچ فیس کا 20 فیصد جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی : لکھنؤ سپر جائنٹس کے کپتان کے ایل راہل کو دوہرا جھٹکا لگا ہے۔ آئی پی ایل 2022 کے ایک میچ میں ان کی ٹیم لکھنؤ کو رائل چیلنجرز بنگلورو نے 18 رنز سے شکست دی تھی۔ اس کے بعد راہل پر آئی پی ایل کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے پر میچ فیس کا 20 فیصد جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔ راہل نے آئی پی ایل کے ضابطہ اخلاق کے لیول-1 کے تحت غلطی تسلیم کرتے ہوئے اپنے اوپر عائد جرمانہ بھی قبول کر لیا ہے۔ کے ایل راہل کے علاوہ لکھنؤ سپر جائنٹس کے آل راؤنڈر مارکس اسٹوئنس کو بھی رائل چیلنجرز بنگلورو کے خلاف میچ کے دوران آئی پی ایل کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر سرزنش کی گئی ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : عمران ملک کیسے بن سکتے ہیں مزید خطرناک گیندباز؟ سنیل گواسکر نے دیا یہ بڑا مشورہ


      مارکس اسٹوئنس نے بھی لیول-1 کے تحت ہوئے جرم کو دیکھتے ہوئے ان پر لگائی گئی پابندی کو قبول کر لیا ہے۔ دراصل آر سی بی کے خلاف میچ میں جوش ہیزل ووڈ کی گیند پر بڑا شاٹ کھیلتے ہوئے اسٹوئنس بولڈ ہوگئے تھے ۔ ہیزل ووڈ کی گیند اسٹوئنس کے بلے کا کنارہ لے کر وکٹ سے ٹکرا گئی تھی ۔ اس کے بعد اسٹوئنس کو امپائر کے خلاف غصہ میں دیکھا گیا۔ ان کی باتیں بھی اسٹمپ مائیکروفون میں ریکارڈ ہو گئی تھیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: محمد سمیع پر لائیو میچ میں آگ ببولہ ہوئے ہاردک پانڈے؟ لوگوں نے گجرات ٹائٹنز کے کپتان کو ہی سنا ڈالی کھری کھری


      اسٹوئنس کی ناراضگی کی وجہ امپائر کرس گیفنی کا ہیزل ووڈ کی پچھلی گیند کو وائیڈ قرار نہ دینے کا فیصلہ تھا۔ اس فعل کی وجہ سے اسٹوئنس کو سزا کا سامنا کرنا پڑا۔ آئی پی ایل کے ضابطہ اخلاق کی لیول-1 کی خلاف ورزی کے لیے میچ ریفری کا فیصلہ حتمی اور سب کے لیے پابند ہوتا ہے۔

      اسٹوئنس کے آؤٹ ہوتے ہی میچ کا رخ آر سی بی کی طرف ہوگیا تھا اور فاف ڈو پلیسس کی قیادت والی آر سی بی نے آخری اوور میں جیسن ہولڈر کے دو چھکوں کے باوجود لکھنؤ سپر جائنٹس کو 8 وکٹوں پر 163 رن پر روک دیا اور اس طرح میچ 18 رنز سے جیت لیا ۔ اسٹوئنس 15 گیندوں میں 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ کے ایل راہل نے 24 گیندوں میں 30 رنز بنائے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: