உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL سٹے بازی اور میچ فکسنگ کی سی بی آئی جانچ میں تین گرفتار، پاکستان کا بھی سیدھا کنیکشن

    IPL سٹے بازی اور میچ فکسنگ کی سی بی آئی جانچ میں تین گرفتار، پاکستان کا بھی سیدھا کنیکشن ۔ فائل فوٹو ۔

    IPL سٹے بازی اور میچ فکسنگ کی سی بی آئی جانچ میں تین گرفتار، پاکستان کا بھی سیدھا کنیکشن ۔ فائل فوٹو ۔

    IPL Betting Match Fixing: سی بی آئی ہندوستان بھر میں آئی پی ایل سٹے بازی کے نیٹ ورک کی جانچ کر رہی ہے ، جس کے پاکستان کے ساتھ براہ راست روابط ہیں۔ کئی شہروں میں کئی افراد زیر تفتیش ہیں اور ایف آئی آر میں "نامعلوم سرکاری ملازمین" کا نام بھی لیا گیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی : سنٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) نے انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) ٹی 20 ٹورنامنٹ میں مبینہ میچ فکسنگ اور سٹے بازی کے الزام میں تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔ ایک اہلکار نے ہفتہ کو یہ جانکاری دی۔ سی بی آئی ہندوستان بھر میں آئی پی ایل سٹے بازی کے نیٹ ورک کی جانچ کر رہی ہے ، جس کے پاکستان کے ساتھ براہ راست روابط ہیں۔ کئی شہروں میں کئی افراد زیر تفتیش ہیں اور ایف آئی آر میں "نامعلوم سرکاری ملازمین" کا نام بھی لیا گیا ہے۔

      جانکاری یہ ہے کہ ملزمان نے پاکستانی رابطوں کے اشارے پر آئی پی ایل میچز کے نتائج کو متاثر کرنے کی کوشش کی۔ سی بی آئی حکام نے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کرنے کے بعد کہا کہ پاکستان سے موصول ہونے والی جانکاری کے مطابق میچ فکسنگ ریکیٹ نے مبینہ طور پر آئی پی ایل میچوں کے نتائج کو متاثر کیا۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ممبئی انڈینز نے سی ایس کے کو روندا، روہت نے دھونی کو آئی پی ایل سے کیا باہر


      یہ معاملہ 2019 کے آئی پی ایل میچوں پر سٹے بازی سے متعلق ہے، جس میں پاکستان کے لنکس سامنے آئے ہیں۔ سی بی آئی نے جانچ کی بنیاد پر دو ایف آئی آر درج کی ہیں، جن میں مشتبہ ملزمان کے نام لکھے گئے ہیں۔ مشتبہ ملزمان میں جودھ پور سے سجن سنگھ، جے پور کے پربھو مینا، جے پور کے رام اوتار، جے پور کے امت شرما، دو نامعلوم سرکاری ملازمین اور ایک اور پاکستانی ملزم شامل ہیں۔

       

      یہ بھی پڑھئے : امباتی رائیڈو نے اچانک کیوں کیا ریٹائر منٹ والا ٹوئٹ؟ چنئی سپرکنگس کے افسر نے کھولا راز


      سی بی آئی کے مطابق انہیں اطلاع ملی تھی کہ آئی پی ایل میں سٹے بازی کا ایک بڑا نیٹ ورک کام کر رہا ہے، جس میں کچھ پاکستانی بکیز بھی شامل ہیں، جنہوں نے سٹے بازی کے لیے کئی فرضی آئی ڈی کے وائی سی کے ذریعہ بینک اکاؤنٹس بھی کھول رکھے ہیں۔

      بیرون ملک بیٹھے لوگ بھی سٹے بازی کے ریکیٹ کے ذریعے حوالات کا لین دین کر رہے ہیں۔ ایف آئی آر میں درج نام سٹے بازی نیٹ ورکنگ کا ایک بڑا حصہ ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: