உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2022: حیدرآباد کو دوسری جیت کے بعد لگا بڑا جھٹکا ، 2 میچوں سے باہر ہوسکتا ہے کہ یہ اسٹار آل راونڈر

    IPL 2022: حیدرآباد کو دوسری جیت کے بعد لگا بڑا جھٹکا ، 2 میچوں سے باہر ہوسکتا ہے کہ یہ اسٹار آل راونڈر  (PTI)

    IPL 2022: حیدرآباد کو دوسری جیت کے بعد لگا بڑا جھٹکا ، 2 میچوں سے باہر ہوسکتا ہے کہ یہ اسٹار آل راونڈر (PTI)

    سن رائزرس حیدرآباد کو آئی پی ایل 2022 میں دوسری جیت کے بعد بڑا جھٹکا لگا ہے۔ حیدرآباد کے اسٹار گیند باز واشنگٹن سندر کم از کم 2 میچوں سے باہر ہو سکتے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی : سن رائزرس حیدرآباد کو آئی پی ایل 2022 میں دوسری جیت کے بعد بڑا جھٹکا لگا ہے۔ حیدرآباد کے اسٹار گیند باز واشنگٹن سندر کم از کم 2 میچوں سے باہر ہو سکتے ہیں۔ گجرات ٹائٹنز کے خلاف حیدرآباد نے ٹورنامنٹ کے اس سیزن میں اپنی دوسری جیت درج کی۔ گجرات کے خلاف آل راؤنڈر واشنگٹن سندر نے انتہائی شاندار گیند بازی کرتے ہوئے 3 اوورز میں صرف 14 رنز دئے۔ حالانکہ انہیں کوئی کامیابی نہیں ملی ، لیکن ان کی گیند بازی ، دیگر گیند بازوں کے مقابلے میں سب سے زیادہ کفایتی تھی ۔

       

      یہ بھی پڑھئے :  آئی پی ایل کی تاریخ میں یہ کام کرنے والے پہلے بلے باز بنے آر اشون، جانئے پوری تفصیل


      دراصل سندر کے گیند بازی کرنے والے ہاتھ میں چوٹ لگ گئی ہے ، جس کی وجہ سے ان کے حیدرآباد کے لئے کم از کم اگلے 2 میچ کھیلنے کے امکانات نہ کے برابر ہیں ۔ لیگ اسپنر شریس گوپال اور بائیں ہاتھ کے اسپننگ آل راؤنڈر جے سوچیت حیدرآباد کے لئے دو ممکنہ آپشن ہیں، جو پلیئنگ الیون میں سندر کی جگہ لے سکتے ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے : ہاردک پانڈیا نےIPLمیں بنائی چھکوں کی سنچری، رشبھ پنت اورکیرون پولارڈکوبھی پیچھے چھوڑا


      ٹیم کے ہیڈ کوچ ٹام موڈی نے اس کی تصدیق کی ہے۔ انجری کی وجہ سے سندر گجرات کے خلاف 4 اوورز کا کوٹہ بھی پورا نہیں کر سکے۔ موڈی نے کہا کہ سندر کی چوٹ کی اگلے 2-3 دنوں تک نگرانی کی جائے گی۔ میچ کے بعد کوچ نے کہا کہ سندر کے انگوٹھے اور پہلی انگلی کے درمیان چوٹ لگی ہے۔ اگلے 2-3 دنوں تک مانیٹرنگ کی جائے گی۔ انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ یہ کوئی بڑا جھٹکا نہیں ہوگا ۔

      راجستھان رائلز کے خلاف حیدرآباد کے افتتاحی میچ میں سندر گیند سے کوئی خاص کمال نہیں دکھا پائے تھے ، انہوں نے 3 اوورز میں 47 رنز دیے اور ایک بھی کامیابی حاصل نہیں کی۔ تاہم اس میچ میں انہوں نے 14 گیندوں میں 40 رنز بنائے تھے۔ اس کے بعد انہوں نے گیند کے ساتھ زبردست واپسی کی اور اگلے 3 میچوں میں 4 وکٹیں حاصل کیں ۔ اس دوران اس کی اکنامی 6 سے بھی کم رہی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: