உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    متالی راج کا 22 سال بعد ٹوٹا سب سے بڑا ریکارڈ ، اسکول میں پڑھنے والی ہنٹر نے 16 ویں یوم پیدائش پر کیا کمال

    متالی راج کا 22 سال بعد ٹوٹا سب سے بڑا ریکارڈ ، اسکول میں پڑھنے والی ہنٹر نے 16 ویں یوم پیدائش پر کیا کمال ۔ (pc: @IrishWomensCric twitter)

    متالی راج کا 22 سال بعد ٹوٹا سب سے بڑا ریکارڈ ، اسکول میں پڑھنے والی ہنٹر نے 16 ویں یوم پیدائش پر کیا کمال ۔ (pc: @IrishWomensCric twitter)

    آئرلینڈ کی ایمی ہنٹر ون ڈے میں سنچری لگانے والی دنیا کے کم عمر ترین بلے باز بن گئی ہے۔ انہوں نے یہ انوکھا ریکارڈ زمبابوے کے خلاف اپنی 16 ویں سالگرہ کے موقع پر بنایا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      ہرارے : آئرلینڈ کی ایمی ہنٹر ون ڈے میں سنچری لگانے والی دنیا کے کم عمر ترین بلے باز بن گئی ہے۔ انہوں نے یہ انوکھا ریکارڈ زمبابوے کے خلاف اپنی 16 ویں سالگرہ کے موقع پر بنایا۔ ہنٹر نے ہندوستان کی متالی راج کا ریکارڈ توڑ دیا جس نے جون 1999 میں 16 سال 205 دن کی عمر میں آئرلینڈ کے خلاف ناٹ آؤٹ 114 رنز بنائے تھے۔ ہنٹر نے اس تسلسل میں پاکستانی بلے باز شاہد آفریدی کا ریکارڈ بھی توڑ دیا۔ مردوں کی کرکٹ میں کم عمر ون ڈے سنچری کا ریکارڈ آفریدی کے پاس ہے جنہوں نے 1996 میں سری لنکا کے خلاف 16 سال 217 دن کی عمر میں 102 رنز بنائے تھے۔

      ہنٹر کا یہ ریکارڈ نہ صرف ون ڈے کرکٹ میں بلکہ محدود اوورز کی کرکٹ میں بھی ایک ریکارڈ ہے۔ یہاں تک کہ ٹی۔ 20 کرکٹ میں بھی کسی خاتون یا مرد کھلاڑی نے اتنی کم عمر میں بین الاقوامی سنچری نہیں بنائی۔ ہنٹر صرف چوتھا ون ڈے کھیل رہی تھی۔ انہوں نے اپنی 127 گیندوں کی اننگ کے دوران 8 چوکے لگائے۔ یہ خواتین کرکٹ میں آئرلینڈ کی بہترین اننگز بھی ہے۔ انہوں نے کیرن ینگ کے 120 رنز کا ریکارڈ توڑ دیا جنہوں نے 2000 میں پاکستان کے خلاف 120 رنز بنائے تھے۔

      ہنٹر کی اننگز نے آئرلینڈ کو 50 اوورز میں تین وکٹوں کے نقصان پر 312 رنز بنانے میں مدد دی جو ون ڈے کرکٹ میں آئرلینڈ کا سب سے بڑا اسکور ہے۔ آئرلینڈ نے میچ 85 رنز سے جیت کر سیریز 3-1 سے اپنے نام کر لی۔ میچ کے بعد ہنٹر نے بتایا کہ "میں بہت اچھا محسوس کر رہی ہوں۔ جب میں پچاس تک پہنچی تو میں نے سوچا کہ مجھے وکٹ پر ایک لمبی اننگ کھیلنی چاہیے۔ اس کے بعد جب میں سنچری پر پہنچی تو مجھے نہیں معلوم تھا کہ کیا کرنا ہے۔ ہیلمٹ نکالنا ہے یا نہیں۔ لیکن جو کچھ بھی تھا۔ یہ ناقابل یقین تھا۔ "

      اس نے مزید بتایا کہ "میں اپنی نصف سنچری بنانے کے دوران زیادہ گھبرا گئی تھی۔ میں نے اپنی پہلی تین اننگز میں اچھا نہیں کیا تھا اس لیے میں بھی تھوڑا سا دباؤ میں تھی۔ مجھے پچاس تک پہنچنے میں زیادہ وقت لگا۔ ایک بار جب میں پچاس تک پہنچ گئی تو سنچری تک پہنچنے میں زیادہ وقت نہیں لگا۔ "

      ہنٹر نے کپتان لورا ڈیلنی (68 رنز) کے ساتھ تیسری وکٹ کے لیے 143 رنز کی شراکت کی۔ انہوں نے کہا کہ انہیں اس اننگز کے دوران اپنے کپتان کی مکمل سپورٹ ملی۔ انہوں نے مزید کہا کہ خودپر بھروسہ رکھو۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: