உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ENG vs NZ : نیوزی لینڈ کے خلاف جو روٹ نے رقم کی تاریخ، ٹیسٹ کرکٹ میں انجام دیا یہ بڑا کارنامہ

    ENG vs NZ : نیوزی لینڈ کے خلاف جو روٹ نے رقم کی تاریخ، ٹیسٹ کرکٹ میں انجام دیا یہ بڑا کارنامہ (PIC- ICC)

    ENG vs NZ : نیوزی لینڈ کے خلاف جو روٹ نے رقم کی تاریخ، ٹیسٹ کرکٹ میں انجام دیا یہ بڑا کارنامہ (PIC- ICC)

    ENG vs NZ 1st Test: نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے درمیان کھیلے گئے لارڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ نے جیت حاصل کرلی ہے ۔ انگلینڈ کی ٹیسٹ ٹیم کے سابق کپتان نے اس میچ میں شاندار سنچری بنائی ہے ۔ یہ سنچری نہ صرف انگلینڈ بلکہ جو روٹ کے لیے بھی کافی خاص ہے

    • Share this:
      نئی دہلی : نیوزی لینڈ اور انگلینڈ کے درمیان کھیلے گئے لارڈز ٹیسٹ میں انگلینڈ نے جیت حاصل کرلی ہے ۔ انگلینڈ کی ٹیسٹ ٹیم کے سابق کپتان نے اس میچ میں شاندار سنچری بنائی ہے ۔ یہ سنچری نہ صرف انگلینڈ بلکہ جو روٹ کے لیے بھی کافی خاص ہے۔ جو روٹ نے اس اننگز میں 100 کا ہندسہ چھوتے ہی ٹیسٹ کرکٹ میں 10 ہزار رنز بھی مکمل کر لیے۔ وہ انگلینڈ کے لیے 10 ہزار رنز بنانے والے دوسرے بلے باز ہیں۔ اس سے قبل الیسٹر کک یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔ روٹ نے یہ کارنامہ اپنے 118ویں ٹیسٹ میچ میں انجام دیا۔ روٹ نے اس خاص ٹیسٹ میں اپنی 26ویں سنچری بھی بنائی۔

       

      یہ بھی پڑھئے : بابر اعظم ایک اور تاریخ رقم کرنے کے قریب، وراٹ کوہلی رہ جائیں گے پیھچے


      انگلینڈ کی جانب سے تیز ترین 9000 رنز بنانے کا ریکارڈ جو روٹ کے پاس ہے۔ اب 10 ہزار رنز کا ہندسہ چھوتے ہوئے انہوں نے ایک اور ریکارڈ اپنے نام کر لیا ہے۔ جہاں وہ انگلینڈ کے لیے یہ ہندسہ عبور کرنے والے دوسرے بلے باز بن گئے ہیں تو وہیں وہ دنیا کے 14ویں بلے باز ہیں جنہوں نے ریڈ بال کرکٹ میں یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے : بریٹ لی نے پاکستان کے گیند باز سے کیوں کیا Umran Malik کا موازنہ؟ جانئے وجہ


      جو روٹ ہفتہ کو کھیل رکنے کے وقت 77 رنز بناکر ناٹ آؤٹ تھے اور آج انہوں نے 23 رنز بنا کر یہ انتہائی خاص کامیابی حاصل کر لی ہے۔ جو روٹ کا موجودہ دور کے بہترین ٹیسٹ کرکٹرز میں شمار کیا جاتا ہے اور نیوزی لینڈ کے خلاف ان کی اننگز اس بات کی گواہ ہے کہ انہیں ٹیسٹ کرکٹ کے لیجنڈز میں کیوں شمار کیا جاتا ہے۔

      ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ رنز بنانے کا ریکارڈ سچن تیندولکر کے پاس ہے۔ سچن نے 200 ٹیسٹ میچوں کی 339 اننگز میں 15,921 رنز بنائے ہیں اور ان کی اوسط 53.78 ہے۔ اس کے ساتھ ہی سچن کے بعد سب سے زیادہ ٹیسٹ رنز آسٹریلیا کے رکی پونٹنگ کے پاس ہیں۔ انہوں نے 168 ٹیسٹ میچوں کی 287 اننگز میں 51.85 کی اوسط سے 13,378 رنز بنائے ہیں۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: