உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2022: لکھنو سپر جائنٹس کو ملی پہلی جیت، چنئی سپرکنگس کو 210 رن بنانے کے بھی شکست کا سامنا

    IPL 2022: لکھنو نے درج کی پہلی جیت، چنئی سپرکنگس کو 210 رن بناکر بھی ملی شکست

    IPL 2022: لکھنو نے درج کی پہلی جیت، چنئی سپرکنگس کو 210 رن بناکر بھی ملی شکست

    Lucknow Super Giants vs Chennai Super Kings: چنئی سپرکنگس ٹیم آئی پی ایل کے 15ویں سیزن (IPL-2022) کے مقابلے میں جمعرات کو 210 رن بناکر بھی ہار گئی۔ کے ایل راہل کی کپتانی والی ٹیم لکھنو سپر جائنٹس (LSG vs CSK)نے 211 رنوں کے ہدف کو تین گیند باقی رہتے ہوئے حاصل کرلیا اور اس لیگ میں اپنی پہلی جیت درج کی۔

    • Share this:
      ممبئی: چنئی سپرکنگس ٹیم آئی پی ایل کے 15ویں سیزن (IPL-2022) کے مقابلے میں جمعرات کو 210 رن بناکر بھی ہار گئی۔ کے ایل راہل کی کپتانی والی ٹیم لکھنو سپر جائنٹس (LSG vs CSK)نے 211 رنوں کے ہدف کو تین گیند باقی رہتے ہوئے حاصل کرلیا اور اس لیگ میں اپنی پہلی جیت درج کی۔ لکھنو کے لئے وکٹ کیپر بلے باز کوئنٹن ڈی کاک (Quinton De Kock) نے 61 جبکہ ایون لوس (Evin Lewis) نے 23 گیندوں پر ناٹ آوٹ 55 رن بنائے۔ نوجوان بلے باز آیوش بڈونی (Ayush Badoni) بھی 9 گیندوں پر دو چھکوں کی بدولت 19 رن بناکر ناٹ آوٹ لوٹے۔ دونوں نے پانچویں وکٹ کے لئے 40 رنوں کی غیر منقسم شراکت داری بھی کی۔

      چنئی سپرکنگس ٹیم آئی پی ایل کے 15ویں سیزن (IPL-2022) کے مقابلے میں جمعرات کو 210 رن بناکر بھی ہار گئی۔ کے ایل راہل کی کپتانی والی ٹیم لکھنو سپر جائنٹس (LSG vs CSK)نے 211 رنوں کے ہدف کو تین گیند باقی رہتے ہوئے حاصل کرلیا اور اس لیگ میں اپنی پہلی جیت درج کی۔

      لکھنو سپر جائنٹس کو آخری دو اوور میں جیت کے لئے 34 رنوں کی درکار تھی۔ آل راونڈر شیوم دوبے کو چنئی سپرکنگس کے کپتان رویندر جڈیجہ (Ravindra Jadeja) نے 19ویں اوور کے لئے گیند تھمائی، لیکنان کا یہ فیصلہ صحیح نہیں ثابت ہوا۔ آیوش بڈونی نے پہلی ہی گیند پر ڈیپ بیک ورڈ لیگ سائڈ میں شاندار چھکا لگایا۔ پھر دو گیند وائڈ رہیں۔ اس کے بعد ایون لوئس نے چوتھی اور پانچویں گیند پر مسلسل چوکے لگائے اور آخری گیند کو بھی چھکے کے لئے بھیجتے ہوئے اپنی نصف سنچری 23 گیندوں پر پورا کیا۔ اس اوور میں کل 25 رن بنے۔ مکیش چودھری نے آخری اوور کی شروعاتی دو گیند وائیڈ پھینکی اور پھر آیوش نے چھکا لگا دیا۔

      راہل حالانکہ نصف سنچری مکمل کرنے سے محروم رہ گئے۔ اننگ کے 11 ویں اوور کی دوسری گیند پر ڈیون پریٹوریم نے راہل کو امباتی رائیڈو کے ہاتھوں کیچ کرایا، جس سے ان کی ڈی کاک کے ساتھ 99 رنوں کی شراکت کا خاتمہ ہوا۔ راہل نے 26 گیندوں کی اپنی اننگ میں دو چوکے اور تین چھکے لگائے۔ منیش پانڈے (5) کچھ خاص نہیں کرپائے اور تشا دیش پانڈے کی گیند پر براوو نے انہیں لپکا۔ پھر ڈی کاک کو بھی پریٹوریس نے ہی وکٹ کے پیچھے دھونی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ انہوں نے 45 گیندوں پر 61 رنوں کی اپنی اننگ میں 9 چوکے لگائے۔ دیپک ہڈا 8 گیندوں پر 13 رن بناکر ڈیون براوو کا شکار بنے، جس کے ساتھ ہی وہ آئی پی ایل میں سب سے زیادہ وکٹ لینے والے گیند باز بھی بن گئے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      IPL 2022: راجستھان رائلس کے خلاف میچ سے پہلے ممبئی انڈینس سے جڑا اسٹار کھلاڑی

      اس سے پہلے رابن اتھپا نے 27 گیندوں میں 8 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 50 رنوں کی اننگ کھیلی۔ آل راونڈر شیوم دوبے نے 30 گیندوں کی اپنی اننگ میں پانچ چوکوں اور دو چھکوں کی بدولت 49 رن بنائے۔ سیزن میں اپنا میچ کھیل رہے انگلینڈ کے آل راونڈر معین علی نے 22 گیندوں پر 35 اور امباتی رائیڈو نے 20 گیندوں پر 27 رنوں کی بہترین اننگ کھیلیں۔ لکھنو ٹیم کے لئے اسپنر روی بشنوئی نے 24، اویش خان نے 38 اور اینڈریو ٹائی نے 41 رن دے کر 2-2 وکٹ حاصل کئے۔

      ٹاس گنواکر پہلے بلے بازی کرنے اتری چنئی سپرکنگس ٹیم نے تیسرے اوور میں ہی ریتو راج گائیکواڑ (1) کا وکٹ گنوا دیا جو رن آوٹ ہوئے۔ تجربہ کار سلامی بلے باز رابن اتھپا نے طوفانی انداز میں بلے بازی کی۔ معین علی نے بھی ان کا بھرپور ساتھ دیا اور چنئی سپر کنگس نے پاور پلے میں ایک وکٹ پر 73 رن بنا دیئے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: