உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ٹیم انڈیا کے تیز گیند باز محمد شمی کا بڑا بیان، کہا- بلے بازوں کے سبب جنوبی افریقہ میں ملی شکست

    India vs South Africa Series: ٹیم انڈیا (Team India) کا جنوبی افریقہ دورہ اچھا نہیں رہا تھا۔ ٹیم کو ٹسٹ سیریز میں 2-1 سے جبکہ ونڈے سیریز میں 3-0 سے شکست ملی تھی۔ ٹسٹ سیریز ہارنے کے بعد وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے ٹسٹ ٹیم کی کپتانی چھوڑ دی تھی۔

    India vs South Africa Series: ٹیم انڈیا (Team India) کا جنوبی افریقہ دورہ اچھا نہیں رہا تھا۔ ٹیم کو ٹسٹ سیریز میں 2-1 سے جبکہ ونڈے سیریز میں 3-0 سے شکست ملی تھی۔ ٹسٹ سیریز ہارنے کے بعد وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے ٹسٹ ٹیم کی کپتانی چھوڑ دی تھی۔

    India vs South Africa Series: ٹیم انڈیا (Team India) کا جنوبی افریقہ دورہ اچھا نہیں رہا تھا۔ ٹیم کو ٹسٹ سیریز میں 2-1 سے جبکہ ونڈے سیریز میں 3-0 سے شکست ملی تھی۔ ٹسٹ سیریز ہارنے کے بعد وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے ٹسٹ ٹیم کی کپتانی چھوڑ دی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: محمد شمی (Mohammed Shami) نے جنوبی افریقہ دورے پر ٹیم انڈیا کو ملی شکست پر بڑا بیان دیا ہے۔ ٹیم کو ٹسٹ سیریز میں 2-1 سے جبکہ ونڈے سیریز میں 3-0 سے شکست ملی تھی۔ حالانکہ تیز گیند باز محمد شمی صرف ٹسٹ ٹیم کا حصہ تھے۔ ایسے میں ان کا بیان ٹسٹ سیریز کو لے کر ہی آیا ہے۔ ٹیم نے پہلا ٹسٹ جیتا تھا، لیکن آخری دونوں ٹسٹ میں اسے شکست ملی تھی۔ ٹسٹ سیریز میں ملی شکست کے بعد وراٹ کوہلی (Virat Kohli) نے ٹسٹ ٹیم کی کپتانی چھوڑ دی تھی۔ ٹیم کو اب فروری-مارچ میں سری لنکا سے ٹسٹ سیریز کھیلنی ہے۔ حالانکہ اب تک نئے ٹسٹ کپتان کا اعلان نہیں ہوا ہے۔

      محمد شمی نے ٹیلی گراف کو دیئے انٹرویو میں کہا کہ ہماری بلے بازی اچھی نہیں رہی۔ اس وجہ سے ہمیں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ انہوں نے کہا، ’یہ نہ بھولیں کہ ہماری گیند بازی یونٹ نے بہت اچھی کارکردگی کی۔ گیند باز بیشتر مواقع پر اچھی کارکردگی کر رہے ہیں۔ یہ ایک مثبت پہلو ہے، جو ہمیں ہمیشہ کھیل میں بنائے رکھتا ہے‘۔ ٹیم نے دوسرے ٹسٹ میں جنوبی افریقہ کو 240 جبکہ تیسرے ٹسٹ میں 212 رنوں کا ہدف دیا تھا، جسے میزبان ٹیم نے دونوں ہی بار صرف تین وکٹ گنواکر حاصل کرلیا تھا۔ وہیں ہندوستان نے پہلا ٹسٹ 113 رنوں کے فرق سے جیتا تھا۔

      50-60 رن مزید بنانے تھے

      محمد شمی نے کہا کہ اس بار ہماری بلے بازی تھوڑی خراب رہی، اس کا خمیازہ ہمیں بھگتنا پڑا۔ اگر ہمارے پاس دونوں میچ میں 50-60 رن مزید ہوتے تو ہمارے پاس جیتنے کا ایک بڑا موقع رہتا۔ 31 سال کے تیز گیند باز نے کہا کہ جلد ہی ان خامیوں کو دور کرلیا جائے گا۔ آخر محمد شمی بلے بازوں پر کیوں سوال اٹھا رہے ہیں تو آئیے آپ کو بتاتے ہیں اس کی وجہ۔

      کے ایل راہل نے ہندوستان کی طرف سے سب سے زیادہ 226 رن بنائے، لیکن پہلی ہی اننگ میں انہوں نے 123 رن بنائے تھے۔ اگلی پانچ اننگوں میں وہ صرف 123 رن بناسکے۔

      ہندوستان کے ایک دیگر سلامی بلے باز مینک اگروال (Mayank Agarwal) کی کارکردگی ایسی ہی رہی۔ انہوں نے پہلی اننگ میں 60 رن بنائے تھے، لیکن وہ اس کے بعد کسی بھی اننگ میں 30 رنوں کا اعدادوشمار بھی نہیں چھوسکے۔ انہوں نے سیریز میں صرف 135 رن بنائے۔ وہیں چتیشور پجارا (Cheteshwar Pujara) نے 6 اننگوں میں 124 اور اجنکیا رہانے (Ajinkya Rahane) نے 6 اننگوں میں 136 رن بنائے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: