ہوم » نیوز » اسپورٹس

عید کے دن روئے ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز محمد سراج ، اپنے درد کو کیا بیان

ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز محمد سراج (Mohammed Siraj) نے اپنے والد کی موت کے بعد پہلی عید منائی تو وہ جذباتی ہوگئے ۔ سراج نے ٹویٹر پر ایک تصویر شیئر کی ، جس میں وہ اپنی ماں اور بھائی کے ساتھ سفید رنگ کے کرتے پاجامہ میں نظر آرہے ہیں ۔

  • Share this:
عید کے دن روئے ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز محمد سراج ، اپنے درد کو کیا بیان
عید کے دن روئے ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز محمد سراج ، اپنے درد کو کیا بیان

نئی دہلی : ملک میں جمعہ کو عید کا تہوار دھوم دھام سے منایا گیا ۔ حالانکہ کئی ریاستوں میں لاک ڈاون کی وجہ سے اس مرتبہ اس کی چمک تھوڑی پھیکی رہی ۔ ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز محمد سراج نے بھی عید منائی ، لیکن ان کیلئے اس مرتبہ یہ تہوار تھوڑا جذباتی کردینے والا ہے ۔ سراج نے سوشل میڈیا پر اپنی دو تصویریں بھی شیئر کیں ۔ ایک میں وہ اپنے بھائی اور ماں کے ساتھ نظر آرہے ہیں جبکہ دوسری تصویر پرانی ہے ، جس میں وہ اپنے والد کے ساتھ نظر آرہے ہیں ۔


محمد سراج کو ہندوستانی ٹیم کے آسٹریلیا دور پر اپنے والد کی موت کی بری خبر ملی تھی ۔ سراج اپنے والد سے کافی قریب تھے ، لیکن انہوں نے ٹیم کے ساتھ رہنے کا فیصلہ کیا ۔ سراج نے اپنے والد کی موت کے بعد پہلی عید منائی تو وہ جذباتی ہوگئے ۔ سراج نے ٹویٹر پر ایک تصویر شیئر کی ، جس میں وہ اپنی ماں اور بھائی کے ساتھ سفید رنگ کے کرتے پاجامہ میں نظر آرہے ہیں ۔


حیدرآباد کے رہنے والے محمد سراج نے اس تصویر کے ساتھ لکھا : عید الفطر مبارک ۔ ماں باپ کا ساتھ ہو تو ہر دن عید جیسا ہوتا ہے اور نہ ہو تو عید کا دن بھی اداس دکھتا ہے ۔ مس یوں پاپا ۔



27 سال کے تیز گیند باز محمد سراج نے ایک انٹرویو میں بتایا تھا کہ جب وہ آسٹریلیا میں تھے تو ان کو اپنے والد کی موت کی بری خبر ملی ۔ انہوں نے کہا تھا کہ وہ اس خبر سے بری طرح ٹوٹ گئے تھے جب ان کو خبر ملی تھی تو کپتان وراٹ کوہلی نے ان کو حوصلہ دیا ۔

محمد سراج نے اب تک ہندوستان کیلئے پانچ ٹیسٹ ، ایک ون ڈے اور تین ٹوینٹی بین الاقوامی کرٹ میچ کھیلے ہیں ۔ انہوں نے ٹیسٹ میں کل 16 اور ٹی ٹوینٹی میں تین وکٹ لئے ہیں ۔ اس کے علاوہ ان کے نام 43 فرسٹ کلاس میچوں میں کل 168 وکٹ ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 15, 2021 10:49 PM IST