உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    IPL 2022 Team Auction: احمد آباد اور لکھنو کی ٹیمیں کھیلیں گی آئی پی ایل ، بی سی سی آئی کو ملے 12 ہزار کروڑ

    IPL 2022 Team Auction: احمد آباد اور لکھنو کی ٹیمیں کھیلیں گی آئی پی ایل ، بی سی سی آئی کو ملے 12 ہزار کروڑ (IPL Instagram)

    IPL 2022 Team Auction: احمد آباد اور لکھنو کی ٹیمیں کھیلیں گی آئی پی ایل ، بی سی سی آئی کو ملے 12 ہزار کروڑ (IPL Instagram)

    IPL 2022 Team Auction: آئی پی ایل کی دو نئی ٹیموں کا اعلان ہوگیا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی 2022 سے آئی پی ایل میں 8 کی جگہ 10 ٹیمیں ایک دوسرے کے خلاف کھیلتی نظر آئیں گی ۔ یہ ٹیمیں احمد آباد اور لکھنو ہیں ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : آئی پی ایل کی دو نئی ٹیموں کا اعلان ہوگیا ہے ۔ اس کے ساتھ ہی 2022 سے آئی پی ایل میں 8 کی جگہ 10 ٹیمیں ایک دوسرے کے خلاف کھیلتی نظر آئیں گی ۔ یہ ٹیمیں احمد آباد اور لکھنو ہیں ۔ نیلامی میں احمد آباد کو سی وی سی کیپٹلس نے 5200 کروڑ جبکہ لکھنو کو آر پی سنجیو گوئنکا گروپ نے 7090 کروڑ روپے میں خریدا ۔ یعنی دونوں ٹیموں سے بی سی سی آئی کو تقریبا ۔۔۔۔ ہزار کروڑ روپے ملے ہیں ۔

      کرک انفو سے بات کرتے ہوئے سنجیو گوئنکا نے کہا کہ وہ آئی پی ایل میں واپسی کرکے خوش ہیں ۔ ابھی تو یہ شروعات ہے ۔ ہم اچھی ٹیم بنائیں گے ۔ اس سے پہلے گروپ نے پونے کی ٹیم خریدی تھی ۔ ٹیم 2016 اور 2017 میں آئی پی ایل میں کھیلی بھی تھی ۔

      ایسا پہلی مرتبہ نہیں ہوگا جب لیگ میں 10 ٹیمیں ہوں گی ۔ سال 2011 میں بھی آئی پی ایل میں 10 ٹیمیں کھیلی تھیں ۔ اس وقت کوچی ٹسکرس کیرالہ اور پوانے واریئرس نام کی فرنچائزیز لیگ کا حصہ بنی تھیں ۔ آئی پی ایل کی دو نئی ٹیموں کیلئے ریس میں چھ شہر تھے ۔ اس میں احمد آباد ، لکھنو ، کٹک ، گواہاٹی ، دھرمشالہ اور اندور کا نام تھا ۔

      حالانکہ سب سے مضبوط دعویدار احمد آباد ہی تھا ۔ اس کی بڑی وجہ وہاں اس سال بنا دنیا کا سب سے بڑا کرکٹ اسٹیڈیم ہے ۔ اس اسٹیڈیم میں ناظرین کی صلاحیت ایک لاکھ سے زیادہ ہے ۔ اس کے علاوہ لکھنو کا نام بھی اس فہرست میں ٹاپ پر ہی تھا ۔ اس شہر میں بھی عالمی سطح کا کرکٹ اسٹیڈیم ہے ۔

      دو ٹیموں کو خریدنے کیلئے کل 22 صنعتی گھرانوں اور کمپنیوں نے دلچسپی دکھائی تھی ۔ ان سبھی نے ٹینڈر ڈاکیومنٹ خریدے تھے ۔ بولی لگانے والوں میں اڈانی گروپ ، انگلش فٹ بال کلب مانچسٹر یونائیٹڈ کے مالک گلیجر فیملی ، ٹورینٹ فارما ، اربندو فارما ، سابق وزیر نوین جندل کی جندل اسٹیل کے علاوہ کئی پرائیویٹ اکیویٹی سے وابستہ لوگ بھی شامل تھے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: