உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    SL vs SA: نہ کوئی وائیڈ اور نہ ہی نوبال ، پھر بھی سات گیندوں کا اوور ، دلچسپ ہے وجہ

    SL vs SA: نہ کوئی وائیڈ اور نہ ہی نوبال ، پھر بھی سات گیندوں کا اوور ، دلچسپ ہے وجہ ۔ (AFP)

    SL vs SA: نہ کوئی وائیڈ اور نہ ہی نوبال ، پھر بھی سات گیندوں کا اوور ، دلچسپ ہے وجہ ۔ (AFP)

    SL vs SA : سری لنکائی اننگز کے 16 ویں اوور میں ایک عجیب و غریب واقعہ پیش آیا ۔ سبھی ٹیکنالوجی کے باوجود امپائر میدان پر ہوئے اس واقعہ کو نہیں پکڑ پائے اور گیند باز کو چھ کی بجائے ساتھ گیندیں پھینکنی پڑگئی ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری لنکا اور جنوبی افریقہ کے درمیان جمعرات کو کولمبو میں تین ون ڈے سیریز کی شروعات ہوگئی ہے ۔ اس میچ میں سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا ۔ حالانکہ سری لنکائی اننگز کے 16 ویں اوور میں ایک عجیب و غریب واقعہ پیش آیا ۔ سبھی ٹیکنالوجی کے باوجود امپائر میدان پر ہوئے اس واقعہ کو نہیں پکڑ پائے اور گیند باز کو چھ کی بجائے ساتھ گیندیں پھینکنی پڑگئی ۔

      یہ واقعہ سری لنکا کی اننگز کے 16 ویں اوورس میں پیش آیا ۔ یہ اوور جنوبی افریقہ کے اسپنر ایڈن مارکرم ڈال رہے تھے ۔ انہوں نے اس اوور میں چھ ویلڈ گیندیں پھینک دی تھیں ، اس کے باوجود وہ اگلی گیند پھینکنے کیلئے رن اپ آگئے ، تبھی امپائر کو احساس کو ہوا کہ ان کا اوور پورا ہوگیا ہے ۔ انہوں نے اس بات کی تصدیق کیلئے تھرڈ امپائر کا رخ کیا ، لیکن وہاں سے یہ پتہ چلا کہ ابھی بھی اوور کی ایک گیند بازی ہے ۔ کمنٹیٹرس بھی امپائر کے اس فیصلہ سے حیرت میں پڑ گئے ، اس کے بعد مارکرم نے ساتویں گیند پھینکی ۔

      دلچسپ بات یہ ہے کہ اس اوور میں مارکرم نے نہ تو کوئی نوبال پھینکی تھی اور نہ ہی وائیڈ گیند ڈالی تھی ، پھر بھی انہیں ایک اضافی گیند پھینکی پڑی ۔ ان کی ساتویں گیند پر ایک رن ہی آیا ۔ ان کے اس اوور میں کل دو رن بنے ۔

      ادھر میچ میں سری لنکا کیلئے سلامی بلے باز اوشکا فرنانڈو نے سنچری بنائی ۔ انہوں نے 115 گیندوں میں 118 رن بنائے ۔ فرنانڈو نے اپنی اس اننگز میں 10 چوکے اور دو چھکے لگائے ۔ ان کے علاوہ دھننجے ڈی سلوا نے بھی 44 رن بنائے ۔  اس کے علاوہ چرتھ اسالنکا نے 62 گیندوں میں 72 رن کی اننگز کھیلی ۔ انہوں نے چھ چوکے اور ایک چھکا لگایا ۔ سری لنکا نے 50 اوورس میں نو وکٹ کے نقصان پر 300 رن بنائے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: