உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کیا وراٹ کوہلی کی بلے بازی تکنیک میں خامیاں ہیں؟ انگلینڈ دورے سے پہلے اظہرالدین کا آیا بڑا بیان

    Mohammad Azharuddin on Virat Kohli technique: ہندوستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وراٹ کوہلی کو بین الاقوامی کرکٹ میں سنچری لگائے ہوئے تقریباً تین سال ہوچکے ہیں۔ انہوں نے اپنی آخری سنچری نومبر 2019 میں بنگلہ دیش کے خلاف ڈے نائٹ ٹسٹ میچ میں لگائی تھی۔

    Mohammad Azharuddin on Virat Kohli technique: ہندوستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وراٹ کوہلی کو بین الاقوامی کرکٹ میں سنچری لگائے ہوئے تقریباً تین سال ہوچکے ہیں۔ انہوں نے اپنی آخری سنچری نومبر 2019 میں بنگلہ دیش کے خلاف ڈے نائٹ ٹسٹ میچ میں لگائی تھی۔

    Mohammad Azharuddin on Virat Kohli technique: ہندوستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وراٹ کوہلی کو بین الاقوامی کرکٹ میں سنچری لگائے ہوئے تقریباً تین سال ہوچکے ہیں۔ انہوں نے اپنی آخری سنچری نومبر 2019 میں بنگلہ دیش کے خلاف ڈے نائٹ ٹسٹ میچ میں لگائی تھی۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان محمد اظہرالدین (Mohammad Azharuddin) آوٹ آف فارم چل رہے وراٹ کوہلی (Virat Kohli) کی حمایت میں اتر آئے ہیں۔ محمداظہرالدین کو امید ہے کہ ٹیم انڈیا کا یہ سابق کپتان انگلینڈ دورے پر اپنی کھوئی ہوئی فارم حاصل کرنے میں کامیاب رہے گا۔ محمد اظہرالدین نے کہا ہے کہ اس عظیم بلے باز کی بازی تکنیک میں انہیں کوئی خامی نظر نہیں آرہی ہے۔ ہندوستان کے سب سے کامیاب کپتانوں میں شمار محمد اظہرالدین کا کہنا ہے کہ دنیا کے بہترین بلے بازوں کو بھی ان کے کیریئر میں یہ دن دیکھنا پڑتا ہے۔

      محمد اظہرالدین نے گلف نیوز سے کہا، ’جب وراٹ کوہلی 50 رن بناتے ہیں، تو لگتا ہے کہ وہ ناکام ہوگئے۔ یقینی طور پر انہوں نے اس سال کچھ زیادہ نہیں کیا۔ ہر کوئی اپنے کیریئر میں برے دورے سے گزرتا ہے۔ انہیں تھوڑا بریک مل گیا ہے، اس لئے امید کی جانی چاہئے کہ وہ انگلینڈ میں اپنی فارم میں واپسی کرلیں گے‘۔ کوہلی کو بین الاقوامی کرکٹ میں سنچری لگائے ہوئے تقریباً تین سال ہوچکے ہیں۔ انہوں نے اپنی آخری سنچری نومبر 2019 میں بنگلہ دیش کے خلاف ڈے نائٹ ٹسٹ میچ میں لگائی تھی۔

      محمد اظہرالدین نے گلف نیوز سے کہا، ’جب وراٹ کوہلی 50 رن بناتے ہیں، تو لگتا ہے کہ وہ ناکام ہوگئے۔ یقینی طور پر انہوں نے اس سال کچھ زیادہ نہیں کیا۔ ہر کوئی اپنے کیریئر میں برے دورے سے گزرتا ہے۔
      محمد اظہرالدین نے گلف نیوز سے کہا، ’جب وراٹ کوہلی 50 رن بناتے ہیں، تو لگتا ہے کہ وہ ناکام ہوگئے۔ یقینی طور پر انہوں نے اس سال کچھ زیادہ نہیں کیا۔ ہر کوئی اپنے کیریئر میں برے دورے سے گزرتا ہے۔


      وراٹ کوہلی کے لئے آئی پی ایل کا 15واں سیزن بھی کچھ خاص نہیں رہا۔ انہوں نے رائل چیلنجرس بنگلورو کی طرف سے 16 میچوں میں تقریباً 23 کی اوسط سے کل 341 رن بنائے۔ اس دوران وہ تین بار گولڈن ڈک کے شکار بھی ہوئے۔ یعنی انہیں تین میچوں میں پہلی ہی گیند پ پویلین لوٹنا پڑا۔ کوہلی کو جنوبی افریقہ کے خلاف گھریلو ٹی20 سیریز میں آرام دیا گیا ہے۔ ہندوستانی ٹیم یکم جولائی سے انگلینڈ میں میزبان ٹیم کے خلاف پانچواں ٹسٹ میچ کھیلے گی، جو گزشتہ سال کووڈ کی وجہ سے ملتوی کردیا گیا تھا۔ وراٹ کوہلی اب انگلینڈ میں اس ٹسٹ میچ میں کھیلیں گے۔

      بقول محمد اظہرالدین، ‘کوہلی کی تکنیک میں کچھ بھی غلط نہیں ہے۔ کبھی کبھی آپ کو تھوڑی قسمت کی بھی ضرورت ہوتی ہے۔ اگر وہ ایک بڑا اسکور یا سنچری بنانے میں کامیاب رہتے ہیں تو، یقیناً اس سے ان کی ترجیح واپس آئے گی اور وہ ایک الگ کھلاڑی کے طور پر نظر آئیں گے‘۔ وراٹ کوہلی بھی موجودہ وقت میں اپنے فارم سے فکر مند ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: