ہوم » نیوز » اسپورٹس

ونڈے ڈیبیو کے چار سال بعد ملا ٹسٹ میں موقع، سوربھ گانگولی نے پہلے ہی ٹسٹ میچ میں لگائی تھی سنچری

سوربھ گانگولی نے 1992 میں ونڈے ڈیبیو کیا تھا، لیکن اپنا پہلا ہی میچ کھیلنے کے بعد وہ تقریباً 4 سال تک ٹیم سے باہر رہے۔ انہیں 20 جون 1996 کو ٹسٹ ڈیبیو کا موقع ملا اور پہلے ہی میچ میں انہوں نے خود کو ثابت کیا۔

  • Share this:
ونڈے ڈیبیو کے چار سال بعد ملا ٹسٹ میں موقع، سوربھ گانگولی نے پہلے ہی ٹسٹ میچ میں لگائی تھی سنچری
سوربھ گانگولی نے 22 جون 1996 میں اپنے ٹسٹ کیریئر کے پہلے ہی میچ میں سنچری لگائی تھی۔

نئی دہلی: دنیا کے سب سے کامیاب کرکٹ کپتانوں میں شمار سوربھ گانگولی (Sourav Ganguly) اور ان کے مداحوں کے لئے 22 جون کا دن بے حد خاص ہے۔ سوربھ گانگولی نے 1992 میں ونڈے ڈیبیو کیا تھا، لیکن اپنا پہلا ہی میچ کھیلنے کے بعد وہ تقریباً 4 سال تک ٹیم سے باہر رہے۔ انہیں 20 جون 1996 کو ٹسٹ ڈیبیو کا موقع ملا اور پہلے ہی میچ میں انہوں نے خود کو ثابت کیا۔ گانگولی نے اپنے پہلے ہی ٹسٹ میچ میں شاندار اننگ کھیل کر سنچری بنائی تھی، جو 22 جون کو مکمل ہوا۔


سوربھ گانگولی نے 22 جون 1996 میں اپنے ٹسٹ کیریئر کے پہلے ہی میچ میں سنچری لگائی تھی۔ انگلینڈ کے خلاف تاریخی لارڈس میدان پر ہندوستانی ٹیم کی پہلی اننگ میں تیسرے نمبر پر بلے بازی کے لئے آئے سوربھ گانگولی نے 131 رنوں کی عمدہ اننگ کھیلی تھی۔ انہوں نے اس دوران 301 گیندوں کا سامنا کیا اور 20 چوکے لگائے۔ یہ میچ حالانکہ 20 جون کو شروع ہوا تھا اور دوسرے ہی دن یعنی 21 جون کو سوربھ گانگولی بلے بازی کے لئے اتر گئے تھے، لیکن ان کی سنچری تیسرے دن مکمل ہوئی۔ تب محمد اظہرالدین ٹیم انڈیا کی کمان سنبھال رہے تھے۔


 سوربھ گانگولی نے 22 جون 1996 میں اپنے ٹسٹ کیریئر کے پہلے ہی میچ میں سنچری لگائی تھی۔

سوربھ گانگولی نے 22 جون 1996 میں اپنے ٹسٹ کیریئر کے پہلے ہی میچ میں سنچری لگائی تھی۔


مائیک ایتھرٹن کی کپتانی میں انگلینڈ نے اپنی پہلی اننگ میں 344 رن بنائے، جس میں وکٹ کیپر بلے باز جیک رسیل (124) کی سنچری خاص رہی۔ ان کے علاوہ گراہم تھورپ نے 178 گیندوں پر 10 چوکوں کی مدد سے 89 رنوں کی اننگ کھیلی۔ گیند بازی میں وینکٹیش پرساد نے کمال کا مظاہرہ کرتے ہوئے 76 رن دے کر 5 وکٹ حاصل کئے۔ ان کے علاوہ جواگل شری ناتھ کو 3 اور سوربھ گانگولی کو دو وکٹ حاصل ہوئے۔

سوربھ گانگولی نے پھر بلے بازی میں کمال دکھایا اور 301 گیندوں پر 20 چوکوں کی مدد سے 131 رنوں کی اننگ کھیل کر اپنے ٹسٹ ڈیبیو کو یادگار بنا دیا۔ تب گھریلو کرکٹ میں بنگال ٹیم کی نمائندگی کرنے والے سوربھ گانگولی نے بے حد محدود انداز میں اپنی اننگ کا آغاز کیا اور چھٹے وکٹ کے طور پر پویلین لوٹے۔

موجودہ بی سی سی آئی صدر 48 سال کے سوربھ گانگولی نے اپنے کیریئر میں 113 ٹسٹ اور 311 ونڈے بین الاقوامی میچ کھیلے۔
موجودہ بی سی سی آئی صدر 48 سال کے سوربھ گانگولی نے اپنے کیریئر میں 113 ٹسٹ اور 311 ونڈے بین الاقوامی میچ کھیلے۔


راہل دراوڑ اس میچ میں سنچری سے چوک گئے تھے اور 267 گیندوں پر 6 چوکوں کی مدد سے 95 رن بناکر لوٹے۔ ٹیم انڈیا نے اپنی پہلی اننگ میں 429 رن بنائے۔ اس کے بعد انگلینڈ نے دوسری اننگ میں 9 وکٹ پر 278 رن بنائے اور میچ ڈرا رہا۔ جیک رسیل ’مین آف دی میچ‘ بنے۔

موجودہ بی سی سی آئی صدر 48 سال کے سوربھ گانگولی نے اپنے کیریئر میں 113 ٹسٹ اور 311 ونڈے بین الاقوامی میچ کھیلے۔ انہوں نے ٹسٹ میں 35 نصف سنچری اور 16 سنچری لگاتے ہوئے کل 7212 رن بنائے جبکہ ونڈے میں انہوں نے 72 نصف سنچری اور 22 سنچری لگائی، کل 11362 رن اس فارمیٹ میں بنائے۔ درمیانی رفتار سے گیند بازی کرنے والے سوربھ گانگولی کے نام ٹسٹ میں 32 اور ونڈے میں 100 وکٹ بھی درج ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jun 22, 2021 10:16 AM IST