உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Cricket : سری لنکا نے پاکستان کو ہراکر جیتا خطاب، ہندوستان کبھی نہیں بن سکا چیمپئن

    Asian Test Championship: ٹیسٹ کو دلچسپ بنانے کیلئے آئی سی سی کی جانب سے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ اس سے قبل ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) دو مرتبہ ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کر چکی ہے۔ ایک مرتبہ پاکستان جبکہ ایک مرتبہ سری لنکا کی ٹیم خطاب جیتنے میں کامیاب رہی ہے ۔ ٹیم انڈیا کبھی خطاب نہیں جیت سکی۔

    Asian Test Championship: ٹیسٹ کو دلچسپ بنانے کیلئے آئی سی سی کی جانب سے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ اس سے قبل ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) دو مرتبہ ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کر چکی ہے۔ ایک مرتبہ پاکستان جبکہ ایک مرتبہ سری لنکا کی ٹیم خطاب جیتنے میں کامیاب رہی ہے ۔ ٹیم انڈیا کبھی خطاب نہیں جیت سکی۔

    Asian Test Championship: ٹیسٹ کو دلچسپ بنانے کیلئے آئی سی سی کی جانب سے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ اس سے قبل ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) دو مرتبہ ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کر چکی ہے۔ ایک مرتبہ پاکستان جبکہ ایک مرتبہ سری لنکا کی ٹیم خطاب جیتنے میں کامیاب رہی ہے ۔ ٹیم انڈیا کبھی خطاب نہیں جیت سکی۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ٹیسٹ کو دلچسپ بنانے کیلئے آئی سی سی کی جانب سے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ اس سے قبل ایشین کرکٹ کونسل (اے سی سی) دو مرتبہ ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ کا انعقاد کر چکی ہے۔ ایک مرتبہ پاکستان جبکہ ایک مرتبہ سری لنکا کی ٹیم خطاب جیتنے میں کامیاب رہی ہے ۔ ٹیم انڈیا کبھی خطاب نہیں جیت سکی۔ آج ہی کے دن 20 سال قبل 10 مارچ 2002 کو سری لنکا نے پاکستان کو شکست دے کر خطاب جیتا تھا۔ سری لنکا نے یہ میچ 8 وکٹوں سے جیتا تھا ۔ اس میچ میں کمار سنگاکارا نے ڈبل سنچری بنائی تھی۔

       

      یہ بھی پڑھئے : روینڈر جڈیجہ نے بلے کے بعد گیند سے مچایا کہرام، 49 سال بعد کوئی کھلاڑی یہاں پہنچا


      ایشین ٹیسٹ چیمپئن شپ کا پہلا سیزن 1999 میں اور دوسرا سیزن 2001-02 میں منعقد کیا گیا تھا ۔ ہندوستان ، پاکستان اور سری لنکا کی ٹیمیں 1999 میں اتریں۔ پہلے میچ میں پاکستان نے ہندوستان کو 46 رنز سے شکست دی تھی۔ پاکستان نے پہلی اننگز میں 185 جبکہ ہندوستان نے 223 رنز بنائے تھے ۔ سعید انور کے شاندار 188 رنز کی مدد سے پاکستان نے دوسری اننگز میں 316 رنز کا بڑا اسکور کھڑا کیا ۔ جواب میں ہندوستانی ٹیم 232 رنز پر ڈھیر ہوگئی۔ ہندوستان ۔ سری لنکا اور پاکستان ۔ سری لنکا کے درمیان میچ برابری پر ختم ہوئے ۔ پوائنٹس کی بنیاد پر پاکستان اور سری لنکا کی ٹیمیں فائنل میں پہنچ گئیں۔ فائنل میں پاکستان نے سری لنکا کو اننگز اور 175 رنز سے شکست دی تھی۔

       

      یہ بھی پڑھئے : 10 سال کی عمر میں ماں کو کھویا، ورلڈ کپ کے اپنے پہلے میچ میں پاکستان کے خلاف کیا دھماکہ


      ہندوستانی ٹیم دوسرے سیزن میں نہیں اتری

      ہندوستان اور پاکستان کے درمیان تنازع کی وجہ سے ٹیم انڈیا ٹیسٹ چمپئن شپ کے دوسرے سیزن میں نہیں اتری تھی۔ یہ ٹورنامنٹ سری لنکا، بنگلہ دیش اور پاکستان کے درمیان منعقد کیا گیا تھا ۔ سری لنکا اور پاکستان دونوں نے بنگلہ دیش کو شکست دے کر فائنل میں جگہ بنائی تھی ۔ فائنل میچ میں پاکستان کی ٹیم پہلے کھیلتے ہوئے صرف 234 رنز پر ڈھیر ہو گئی۔ یونس خان نے 46 رنز کی اننگز کھیلی تھی ۔ آف اسپنر متھیا مرلی دھرن نے 4 وکٹیں حاصل کی تھیں ۔

      سری لنکا نے کمار سنگاکارا کی 230 رنز کی شاندار اننگز کی بنیاد پر پہلی اننگز میں 528 رنز کا بڑا اسکور کھڑا کیا ۔ سنتھ جے سوریا نے 88 اور مہیلا جے وردھنے نے 68 رنز بنائے۔ پاکستان کیلئے محمد سمیع نے 4 وکٹیں حاصل کیں۔ پاکستان نے دوسری اننگز میں 325 رنز بنائے۔ انضمام الحق نے 99 اور شاہد آفریدی نے 70 رنز کی اننگز کھیلی تھی ۔ مرلی دھرن نے ایک بار پھر 4 وکٹیں حاصل کیں۔ سری لنکا نے 32 رنز کا ہدف 2 وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا۔ اس کے بعد انٹرنیشنل ٹور کی وجہ سے ٹورنامنٹ کا انعقاد نہیں ہو سکا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: