اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ڈیبیو میچ میں ہی پاکستان کے اس نوجوان گیند باز نے مچایا تہلکہ، مشتاق احمد و انل کمبلے سے نکلا آگے

    ڈیبیو میچ میں ہی پاکستان کے اس نوجوان گیند باز نے مچایا تہلکہ، مشتاق احمد و انل کمبلے سے نکلا آگے (AP)

    ڈیبیو میچ میں ہی پاکستان کے اس نوجوان گیند باز نے مچایا تہلکہ، مشتاق احمد و انل کمبلے سے نکلا آگے (AP)

    PAK vs ENG 2nd Test: پاکستان کے نوجوان گیند باز ابرابر احمد نے شاندار انٹرنیشنل ڈیبیو کیا ہے ۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دوسرا ٹیسٹ میچ جمعہ سے ملتان میں شروع ہوا ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Pakistan
    • Share this:
      نئی دہلی : پاکستان کے نوجوان گیند باز ابرابر احمد نے شاندار انٹرنیشنل ڈیبیو کیا ہے ۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دوسرا ٹیسٹ میچ جمعہ سے ملتان میں شروع ہوا ۔ تین میچوں کی ٹیسٹ سیریز میں بین اسٹوکس کی قیادت والی انگلش ٹیم ایک صفر سے آگے ہے ۔ راولپنڈی ٹیسٹ کو اس نے آخری دن جیتا تھا ۔ ایسے میں سیریز میں برقرار رہنے کیلئے بابر اعظم کی کپتانی والی پاکستانی ٹیم کو یہ میچ جیتنا ضروری ہے ۔ میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر بلے بازی کا فیصلہ کیا ، لیکن پہلے دن دوسرے سیشن میں ٹیم 281 رنز بناکر پویلین لوٹ گئی  ۔ 24 سال کے لیگ اسپنر ابرار نے میچ میں سات وکٹ حاصل کئے ۔ بین ڈکیٹ اور اولی پوپ نے ضرور نصف سنچریاں بنائیں ۔

      میچ میں انگلینڈ کی شروعات اچھی رہی تھی ۔ ایک وقت اس کا اسکور ایک وکٹ پر 117 رنز تھا ۔ اس کے بعد ٹیم نے اگلے چار وکٹ 50 رنز پر کھو دئے ۔ لنچ تک اسکور 33 اوورز میں پانچ وکٹ پر 180 رنز تھا ۔ بین اسٹوکس 30 رنز بناکر آوٹ ہوئے ۔ اسی کے ساتھ ابرار احمد ڈیبیو ٹیسٹ کے پہلے سیشن میں پانچ وکٹ لینے والے پاکستان کے پہلے گیند باز بن گئے ہیں ۔ پاکستان کے سابق لیجنڈ مشتاق احمد سے لے کر ہندوستانی لیجنڈ گیند باز انل کمبلے تک ایسا نہیں کرسکے تھے ۔ ابرار کا ریکارڈ فرسٹ کلاس کرکٹ میں بھی بہترین رہا ہے ۔

      یہ بھی پڑھئے: شعیب اختر نے سنایا تیندولکر کو پہلی گیند پر آوٹ کرنے کا قصہ، بتایا پھر اس کے بعد کیا ہوا


      یہ بھی پڑھئے: شاہین شاہ آفریدی کیلئے T20 ورلڈ کپ کا فائنل میچ بنا ڈراونا خواب، کہہ ڈالی اتنی بڑی بات


      وہیں اگر پہلے ٹیسٹ میچ کی بات کی جائے تو پہلے دن انگلینڈ کے چار بلے بازوں نے سنچریاں بنائی تھیں، لیکن ابرار احمد نے دوسرے ٹیسٹ میں انگلش بلے بازوں کو ایسا نہیں کرنے دیا ۔ انہوں نے جیک کرالے (19) کو بولڈ کرکے ٹیم کو دن کی پہلی کامیابی دلائی ۔ پھر بین ڈکیٹ (63) اور جو روٹ (8) کو پویلین بھیجا ۔ اس کے بعد اولی پوپ (60) کی بہترین اننگز کا خاتمہ کیا ۔ انہوں نے ہیری بروک (9) کا پانچواں وکٹ لے کر اپنا نام تاریخ میں درج کرالیا ۔ انہوں نے 22 اوورز میں 114 رنز دے کر سات وکٹیں حاصل کیں ۔

      ابرار اپنے چار بھائیوں میں سب سے چھوٹے ہیں ۔ وہ اس میچ سے پہلے تک 14 فرسٹ کلاس میچ میں 26 کی اوسط سے 76 وکٹیں لے چکے ہیں ۔ 40 رنز دے کر چھ وکٹ ان کی بہترین کارکردگی ہے ۔ سات مرتبہ پانچ اور دو مرتبہ 10 وکٹیں لے چکے ہیں ۔ اب وہ ٹیسٹ کرکٹ میں اپنی چھاپ چھوڑنا چاہیں گے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: