உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    انگلینڈ۔نیوزی لینڈ ٹیم کے پاکستان دورے سے پہلے مشتبہ گرفتار، آسٹریلیا کو دی تھی دہشت گردانہ حملے کی دھمکی

    دراصل آسٹریلیا کے کامیاب دورہ پاکستان کے بعد آنے والے مہینوں میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں بھی یہاں کا دورہ کرنے والی ہیں۔ پاکستان پر سب سے بڑی ذمہ داری اور چیلنج دورہ کرنے والی ٹیموں کی سکیورٹی ہے۔

    دراصل آسٹریلیا کے کامیاب دورہ پاکستان کے بعد آنے والے مہینوں میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں بھی یہاں کا دورہ کرنے والی ہیں۔ پاکستان پر سب سے بڑی ذمہ داری اور چیلنج دورہ کرنے والی ٹیموں کی سکیورٹی ہے۔

    دراصل آسٹریلیا کے کامیاب دورہ پاکستان کے بعد آنے والے مہینوں میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں بھی یہاں کا دورہ کرنے والی ہیں۔ پاکستان پر سب سے بڑی ذمہ داری اور چیلنج دورہ کرنے والی ٹیموں کی سکیورٹی ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: گزشتہ دنوں آسٹریلوی ٹیم 24 سال بعد پاکستان کے دورے پر گئی تھی جہاں اس نے میزبان کے ساتھ تین ٹیسٹ، تین ون ڈے اور ایک ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلا تھا۔ اس دوران آسٹریلوی ٹیم کو دہشت گردانہ حملوں کی دھمکیاں موصول ہوئی تھیں۔ دھمکی دینے والے مشتبہ شخص کو پاکستان کے صوبہ پنجاب کی پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ دراصل دھمکی ملنے کے بعد پاکستان کی خفیہ ایجنسیوں نے تحقیقات شروع کر دی تھیں۔ ملزم کی گرفتاری انگلینڈ اور نیوزی لینڈ آنے سے قبل عمل میں آئی۔

      دراصل آسٹریلیا کے کامیاب دورہ پاکستان کے بعد آنے والے مہینوں میں انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کی ٹیمیں بھی یہاں کا دورہ کرنے والی ہیں۔ پاکستان پر سب سے بڑی ذمہ داری اور چیلنج دورہ کرنے والی ٹیموں کی سکیورٹی ہے۔ ایسے میں آسٹریلیائی ٹیم پر دہشت گردانہ حملے کے خطرے نے پاکستان بورڈ میں بھی خوف و ہراس پھیلا دیا تھا، کیونکہ سکیورٹی کے پیش نظر کئی ٹیمیں پہلے ہی پاکستان کا دورہ رد کر چکی ہیں۔

      نیوزی لینڈ اور انگلینڈ نے سکیورٹی وجوہات کی بنا پر پاکستان کا  کر دیا تھا دورہ رد
      گزشتہ سال نیوزی لینڈ نے پاکستان پہنچنے کے بعد سیریز کے آغاز سے قبل آخری لمحات میں اپنا دورہ رد کر دیا تھا۔ نیوزی لینڈ کا دورہ منسوخ کرنے کے بعد انگلینڈ نے بھی پاکستان جانے سے انکار کر دیا تھا۔ دونوں ٹیموں نے سکیورٹی کی وجہ سے دورہ رد کردیا تھا۔ اب دونوں ٹیمیں دورہ پاکستان کے لیے تیار ہیں۔ انگلینڈ کی خواتین اور مردوں کی ٹیم ستمبر اکتوبر میں پاکستان جائے گی۔

      یہ بھی پڑھئے:  سری لنکا کرکٹ ٹیم کی بس پر ہوا تھا دہشت گردانہ حملہ، ایسے پہنچایا تھا بس کو اسٹیڈیم




       

      یہاں پڑھیں تصیل: پاکستان گئے آسٹریلیائی کھلاڑی کے کنبے کو دھمکی، زندہ نہیں لوٹ پائیں گے، PCB  کا آیا بڑا بیان

      واضح ہو کہ آسٹریلیائی ٹیم میں شامل بائیں ہاتھ کے اسپنر ایشٹن ایگر(Ashton agar) کو جان سے مارنے کی دھمکیاں ملی تھیں۔ حالانکہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی (PCB) ) اور کرکٹ آسٹریلیا (Cricket Australia) نے تحقیقات کے بعد سوشل میڈیا پر موصول ہونے والی اس دھمکی کو سنجیدہ نہیں مانا تھا۔ معلومات کے مطابق ایشٹن ایگر کی پارٹنر میڈلین (Madeleine) کو سوشل میڈیا پر ایک پیغام موصول ہوا تھا، جس میں کسی نامعلوم شخص نے دھمکی دی تھی کہ اگر ایگر پاکستان آیا تو اس کے لیے اچھا نہیں ہو گا۔ دی سڈنی مارننگ ہیرالڈ کی رپورٹ کے مطابق ایشٹن ایگر کی پارٹنر میڈلین کو پیغام بھیجا گیا تھا کہ ایشٹن پاکستان نہ آئیں، اگر وہ پاکستان آئیں گے تو زندہ واپس نہیں آئیں گے۔ جس کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ اور کرکٹ آسٹریلیا نے تحقیقات شروع کر دی تھیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: