اپنا ضلع منتخب کریں۔

    145 سال .... 2477 میچ کے بعد ہوا ایسا، انگلینڈ ۔ پاکستان کے درمیان ہوئے راولپنڈی ٹیسٹ میں بدلی تاریخ

    145 سال .... 2477 میچ کے بعد ہوا ایسا، انگلینڈ ۔ پاکستان کے درمیان ہوئے راولپنڈی ٹیسٹ میں بدلی تاریخ (AP)

    145 سال .... 2477 میچ کے بعد ہوا ایسا، انگلینڈ ۔ پاکستان کے درمیان ہوئے راولپنڈی ٹیسٹ میں بدلی تاریخ (AP)

    Pakistan vs England Rawalpindi 1st test: پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہوا راولپنڈی ٹیسٹ ایک اور معنی میں خاص رہا ۔ یہ ٹیسٹ اب تک سب سے ہائی اسکورنگ میچ ہے، جس کا نتیجہ نکلا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Lahore
    • Share this:
      نئی دہلی : انگلینڈ کی ٹیم 17 سال بعد پاکستان میں ٹیسٹ سیریز کھیل رہی ہے اور اس نے جیت کے ساتھ اس دورے کی شروعات کی ہے ۔ راولپنڈی میں کھیلے گئے پہلے ٹیسٹ میچ کو انگلینڈ نے 74 رنز سے جیت لیا ۔ بین اسٹوکس کی کپتانی والی انگلش ٹیم نے راولپنڈی کی بے جان پچ پر جس طرح سے جیت درج کی ، وہ ہر ٹیم کیلئے ایک سبق ہے ۔ اسٹوکس نے راولپنڈی ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں 35.5 اوورز میں سات وکٹ پر 264 رنز بناکر اننگز ڈکلیئر کردی تھی، تب ہر کسی نے ان کے اس فیصلہ کو اس نظر سے دیکھا تھا کہ اسٹوکس نے بڑا خطرہ مول لیا ہے ، کیونکہ جس وکٹ پر پہلی دو اننگز میں ہی 1200 سے زیادہ رنز بن چکے تھے، اس پر آخری اننگز میں پاکستان کیلئے 343 رنز کا پیچھا کرنا ناممکن نہیں ہوگا ۔ لیکن اسٹوکس نے اس کو غلط ثابت کردیا اور جس بے جان وکٹ پر پہلے تین دن میں صرف 17 وکٹیں گری تھیں، اس پر انگلینڈ نے پاکستان کو 268 رنز پر آوٹ کرکے میچ جیتنے کے ساتھ ہی سیریز میں بھی ایک صفر کی سبقت حاصل کرلی ۔

      پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہوا راولپنڈی ٹیسٹ ایک اور معنی میں خاص رہا ۔ یہ ٹیسٹ اب تک سب سے ہائی اسکورنگ میچ ہے، جس کا نتیجہ نکلا ہے ۔ پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان ہوئے راولپنڈی ٹیسٹ میں کل 388.5 اوورز میں 4.54 کے رن ریٹ سے 1768 رنز بنے اور 37 وکٹیں گریں ۔ لیکن انگلینڈ اس ٹیسٹ کو 74 رنز سے جیتنے میں کامیاب رہا ۔ اتنا ہی نہیں، یہ واحد میچ بھی ہے، جس میں دو 550 سے زیادہ اسکور پہلی اننگز میں بنے ہیں اور میچ کا نتیجہ نکلا ہے ۔

      یہ بھی پڑھئے: پاکستان کی ہار سے کھلے ہندوستان کے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ فائنل میں جانے کے راستے، جانئے کیسے


      یہ بھی پڑھئے: پاکستانی تیز گیند باز حسن علی نے کھویا آپا، لائیو میچ میں ہی فینس کو مارنے دوڑ پڑے


      کسی ایک ٹیسٹ میں سب سے زیادہ رنز کا ریکارڈ انگلینڈ اور جنوبی افریقہ کے درمیان 1939 میں ہوئے ڈربن ٹیسٹ کے نام درج ہے ۔ اس ٹیسٹ کی چار اننگز میں کل 1981 رنز بنے تھے ۔ اس ٹیسٹ میں پانچ سنچریاں اور ایک ڈبل سنچری بنی تھی ۔ حالانکہ یہ ٹیسٹ ڈرا رہا تھا ۔

      اس سے پہلے انگلینڈ اور ویسٹ انڈیز کے درمیان 1930 میں کنگسٹن ٹیسٹ میں بھی 1815 رنز بنے تھے ۔ اس میچ میں ایک ٹریپل سنچری اور ایک ڈبل سنچری بنی تھی ۔ حالانکہ یہ ٹیسٹ میچ بھی ڈرا رہا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: