உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بی سی سی آئی کو پٹخنی دینے کی تیاری میں پاکستان کرکٹ بورڈ! اٹھانے جارہا یہ بڑا قدم

    بی سی سی آئی کو پٹخنی دینے کی تیاری میں پاکستان کرکٹ بورڈ! اٹھانے جارہا یہ بڑا قدم (AFP)

    بی سی سی آئی کو پٹخنی دینے کی تیاری میں پاکستان کرکٹ بورڈ! اٹھانے جارہا یہ بڑا قدم (AFP)

    Pakistan Super League: پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجا کو مسقتبل قریب میں خواتین کی پاکستان سپر لیگ شروع ہونے کی امید ہے ۔ بی سی سی آئی ابھی صرف ٹی ٹوینٹی چیلنج کرا رہا ہے ۔

    • Share this:
      کراچی : پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجا کو مسقتبل قریب میں خواتین کی پاکستان سپر لیگ شروع ہونے کی امید ہے ۔ بی سی سی آئی ابھی صرف ٹی ٹوینٹی چیلنج کرا رہا ہے ۔ پی سی بی کے ذریعہ پوسٹ کئے گئے ویڈیو میں سابق کپتان راجا نے موجودہ ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں پاکستان کی کارکردگی سے لے کر آسٹریلیا اور انگلینڈ کے خلاف گھریلو سیریز کے بارے میں میں بات کی ۔ خیال رہے کہ آسٹریلیا کی ٹیم اگلے سال پاکستان کے دورہ پر جائے گی ۔ کنگارو ٹیم 24 سال بعد پاکستان کا دورہ کرے گی ۔ وہیں ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں گیارہ نومبر کو پاکستان اور آسٹریلیا کی ٹیمیں میں بھڑیں گی ۔

      رمیز راجا نے کہا کہ خواتین کی پی ایس ایل میرے ذہن میں ہے ۔ امید کرتے ہیں کہ ہم ایشیا میں خاتون ٹی ٹوینٹی فرنچائزی لیگ لانچ کرنے والے پہلے کرکٹ بورڈ بن سکتے ہیں ۔ یہ اپنی طرح کا پہلا ٹورنامنٹ ہے ۔ اس وقت آسٹریلیا خواتین کی بگ بیش لیگ منعقد کرتا ہے جبکہ انگلینڈ نے مردوں کے ساتھ ہی خواتین کیلئے شروعاتی دی ہنڈریڈ ٹورنامنٹ منعقد کیا ۔

      جانکاری کے مطابق بی سی سی آئی خاتون آئی پی ایل شروع کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے ۔ اس میں چار سے پانچ ٹیموں کو موقع مل سکتا ہے ۔ اس سے پہلے بورڈ کی جانب سے 2018 میں خاتون ٹی ٹوینٹی چیلنج کی شروعات کی گئی تھی ۔ پہلے سیزن میں صرف ایک مقابلہ ہوا ۔ 2019 میں تین ٹیموں کے درمیان چار مقابلے ہوئے ۔ 2020 میں ہندوستان کے علاوہ جنوبی افریقہ ، انگلینڈ ، بنگلہ دیش ، سری لنکا ، ویسٹ انڈیز اور تھائی لینڈ کی کھلاڑی بھی اتری تھیں ۔

      خیال رہے کہ آئی پی ایل 2022 سے آٹھ کی جگہ 10 ٹیمیں کھیلیں گی ۔ لکھنو اور حیدر آباد دو نئی ٹیمیں لیگ سے جڑی ہیں ۔ اب 60 کی جگہ 74 میچ کھیلے جائیں گے ۔ اس کے بعد سے ہی امید لگائی جارہی ہے کہ خاتون آئی پی ایل بھی بورڈ جلد ہی شروع کرسکتا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: