உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پی سی بی چیف رمیز راجہ نے بابر اعظم کے 'بھائی' کو بھیجا قانونی نوٹس، جانئے کیا ہے پورا معاملہ

    پی سی بی چیف رمیز راجہ نے بابر اعظم کے 'بھائی' کو بھیجا قانونی نوٹس، جانئے کیا ہے پورا معاملہ (PIC: AP)

    پی سی بی چیف رمیز راجہ نے بابر اعظم کے 'بھائی' کو بھیجا قانونی نوٹس، جانئے کیا ہے پورا معاملہ (PIC: AP)

    پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ نے وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل کو قانونی نوٹس بھیجا ہے۔ اکمل کو یہ نوٹس ان کے سوشل میڈیا پر بیان کی وجہ سے بھیجا گیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Pakistan
    • Share this:
      نئی دہلی : پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ نے وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل کو قانونی نوٹس بھیجا ہے۔ اکمل کو یہ نوٹس ان کے سوشل میڈیا پر بیان کی وجہ سے بھیجا گیا ہے۔ دراصل اکمل نے مبینہ طور پر اپنے یوٹیوب چینل پر ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ میں بابر اعظم کی کپتانی والی پاکستانی ٹیم کی کارکردگی پر توہین آمیز، جھوٹے اور قابل اعتراض تبصرے کئے تھے۔ صرف اکمل ہی نہیں بلکہ پاکستان کے کئی سابق کرکٹرز جیسے شعیب اختر، وسیم اکرم، وقار یونس نے بھی ٹی 20 ورلڈ کپ میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی پر ٹی وی اور مختلف سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر تنقید کی تھی ۔ خاص طور پر جب ہندوستان اور زمبابوے کے خلاف شکست کے بعد ٹیم پر ٹورنامنٹ سے باہر ہونے کا خطرہ منڈلا رہا تھا۔

      بتادیں کہ کامران اکمل ، بابر اعظم کے چچازاد بھائی ہیں اور انہوں نے زمبابوے کے خلاف ہار کے بعد بابر اعظم کو کپتانی چھوڑنے کا مشورہ بھی دیا تھا۔ تاہم یہ واضح نہیں ہے کہ اکمل کے کس تبصرہ سے پی سی بی سربراہ راجہ کو ٹھیس پہنچی ہے، جس کیلئے انہیں قانونی نوٹس بھیجا گیا ہے ۔

      یہ بھی پڑھئے: وراٹ کوہلی کا وہ چھکا، جس کو ICC نے منتخب کیا 'گریٹیسٹ T20 شاٹ آف آل ٹائم'، دیکھئے ویڈیو


      یہ بھی پڑھئے: وراٹ کوہلی کی اننگز کو آئی سی سی نے خاص لسٹ میں دی جگہ، پاکستان کو اکیلے دی تھی مات


      واقعہ سے وابستہ ذرائع نے پی ٹی آئی کو بتایا کہ مجھے نہیں معلوم کہ انہوں نے کامران کے خلاف حقیقت میں کیا الزامات لگائے ہیں، لیکن ظاہر طور پر قانونی نوٹس بھیجا گیا ہے، کیونکہ چیئرمین کا ماننا ہے کہ کامران نے ان کے بارے میں میڈیا میں قابل اعتراض ، جھوٹی اور توہین آمیز تبصرہ کیا ہے ۔

      رپورٹ کی مانیں تو کچھ اور سابق کھلاڑیوں کو بھی قانونی نوٹس بھیجے جاسکتے ہیں ، جن کے اپنے یوٹیوب چینل ہیں اور ٹیم کی کارکردگی کی تنقید کرتے ہوئے وہ لگاتار حد پار کرتے ہیں ۔ ذرائع نے کہا کہ ان میں سے کچھ نے ٹیم ، انتظامیہ ، بورڈ اور صدر کی تنقید کرتے ہوئے واضح طور پر لائن کراس کی اور رمیز راجہ نے صاف کردیا ہے کہ وہ کسی کو بھی پاکستان کرکٹ بورڈ کو نیچا دکھانے یا بدنام کرنے کیلئے برداشت نہیں کریں گے ۔

      رمیز راجہ کی طرف سے پاکستان کرکٹ بورڈ کی لیگل ٹیم کو واضح ہدایت دی گئی ہے کہ اگر کوئی سابق پاکستانی کرکٹر اپنے یوٹیوب چینل یا پھر کسی دیگر ذریعہ سے ٹیم کے خلاف غلط بیان بازی کرتا ہے، جس سے پاکستان کرکٹ کی ساکھ خراب ہوتی ہے تو اس کے خلاف سخت ایکشن لیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: