உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    آئی پی ایل کو ICC کی FTP میں شامل کئے جانے کی تجویز سے پاکستان کرکٹ بورڈ کیوں بوکھلایا؟ جانئے سب کچھ

    شاہ نے کہا تھا، "اگلے ایف ٹی پی FTP  سائیکل سے، آئی پی ایل کے لیے ڈھائی ماہ کی ونڈو رہے گا تاکہ تمام ٹاپ انٹرنیشنل کرکٹرز اس میں کھیل سکیں۔" ہم نے دیگر بورڈز اور آئی سی سی ICC  سے بھی بات کی ہے۔ پی سی بی کا ماننا ہے کہ اس معاملے پر بات کرنے کی ضرورت ہے۔

    شاہ نے کہا تھا، "اگلے ایف ٹی پی FTP سائیکل سے، آئی پی ایل کے لیے ڈھائی ماہ کی ونڈو رہے گا تاکہ تمام ٹاپ انٹرنیشنل کرکٹرز اس میں کھیل سکیں۔" ہم نے دیگر بورڈز اور آئی سی سی ICC سے بھی بات کی ہے۔ پی سی بی کا ماننا ہے کہ اس معاملے پر بات کرنے کی ضرورت ہے۔

    شاہ نے کہا تھا، "اگلے ایف ٹی پی FTP سائیکل سے، آئی پی ایل کے لیے ڈھائی ماہ کی ونڈو رہے گا تاکہ تمام ٹاپ انٹرنیشنل کرکٹرز اس میں کھیل سکیں۔" ہم نے دیگر بورڈز اور آئی سی سی ICC سے بھی بات کی ہے۔ پی سی بی کا ماننا ہے کہ اس معاملے پر بات کرنے کی ضرورت ہے۔

    • Share this:
      کراچی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی)  کے اگلے فیوچر ٹور پروگرام (ایف ٹی پی) کیلنڈر میں آئی پی ایل IPL کو ڈھائی ماہ کی ونڈو دینے کی تجویز پر باقی بورڈ سے بات کرے گا۔ اس کا ماننا ہے کہ اس کا بہت سی بین الاقوامی سیریز پر برا اثر پڑے گا۔ بی سی سی آئی کے سکریٹری جے شاہ نے پی ٹی آئی کے ساتھ خصوصی بات چیت میں کہا تھا کہ ایف ٹی پی سائیکل میں آئی پی ایل کے لیے 2024 سے 2031 تک ڈھائی ماہ کا وقت ہوگا۔
      شاہ نے کہا تھا، "اگلے ایف ٹی پی FTP  سائیکل سے، آئی پی ایل کے لیے ڈھائی ماہ کی ونڈو رہے گا تاکہ تمام ٹاپ انٹرنیشنل کرکٹرز اس میں کھیل سکیں۔" ہم نے دیگر بورڈز اور آئی سی سی ICC  سے بھی بات کی ہے۔ پی سی بی کا ماننا ہے کہ اس معاملے پر بات کرنے کی ضرورت ہے۔

      James Andersonنےلگائی ٹیسٹ میچوں کی سنچری، سچن تندولکر،راہل دراوڑکوپیچھےچھوڑقائم کیاریکارڈ

      کرکٹ میں پیسہ آتا دیکھنا اچھا ہے لیکن...
      پی سی بی کے ایک ذراائع نے کہا، "آئی سی سی بورڈ جولائی میں برمنگھم کامن ویلتھ گیمز کے دوران میٹنگ کرے گا اور اس معاملے پر بات کی جائے گی۔" بی سی سی آئی کے مکمل طور پر بک آؤٹ کرنے کے منصوبے کا بین الاقوامی دو طرفہ سیریز پر منفی اثر پڑے گا۔

      کرکٹر Andre Russell کا خود کو ہی مہنگا تحفہ، قیمت جان کر آپ کے بھی اڑ جائیں گے ہوش۔۔۔

      2008 سے پاکستانی کھلاڑیوں کی کوئی انٹری نہیں۔
      2008 کے ممبئی دہشت گردانہ حملے کے بعد سے پاکستانی کھلاڑیوں کو آئی پی ایل میں شامل نہیں کیا گیا ہے۔ سلمان بٹ، شاہد آفریدی، شعیب اختر، کامران اکمل اور سہیل تنویر آئی پی ایل کے پہلے ایڈیشن میں کھیلے تھے۔

       
      Published by:Sana Naeem
      First published: