உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بابر اعظم کا بلا خاموش، مسلسل تیسرے میچ میں ناکام، 20 سال کے کھلاڑی سے بھی خراب کارکردگی

    بابر اعظم کا بلا خاموش، مسلسل تیسرے میچ میں ناکام

    بابر اعظم کا بلا خاموش، مسلسل تیسرے میچ میں ناکام

    PSL 2022: بابر اعظم (Babar Azam) کے لئے سال 2021 میں ٹی 20 میں 1700 سے زیادہ رن بنائے تھے۔ پاکستان (Pakistan) کے کپتان بابر اعظم کو آئی سی سی (ICC) کی طرف سے ونڈے اور ٹی20 ٹیم کا کپتان بھی بنایا گیا تھا، لیکن وہ اس سال اب تک اچھی کارکردگی پیش کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

    • Share this:
      نئی دہلی: بابر اعظم (Babar Azam) کے لئے سال 2021 یادگار رہا تھا۔ انہیں آئی سی سی (ICC) کی طرف سے ونڈے پلیئر آف دی ایئر منتخب کیا گیا تھا۔ اتنا ہی انہیں آئی سی سی ونڈے اور ٹی دونوں ٹیم کا کپتان بھی بنایا گیا تھا، لیکن 2022 میں وہ اپنی اس کارکردگی کو برقرار نہیں رکھ سکے ہیں۔ پاکستان سپر لیگ (PSL) کے تینوں ابتدائی میچ میں وہ ناکام رہے ہیں۔ وہ اس دوران کل 100 رنوں کے اعدادوشمار تک بھی نہیں پہنچ سکے ہیں۔ یہ ان کی سال 2022 کی پہلی تین اننگ بھی ہے۔ دوسری طرف انگلینڈ کے 20 سال کے نوجوان بلے باز ویلیم نے ٹورنا منٹ کے دو ہی میچ میں 100 سے زیادہ رن بنا ڈالے ہیں۔ بابر اعظم کی ٹیم دونوں ابتدائی میچ بھی ہار چکی ہے۔ یعنی وہ بطور کپتان بھی ناکام رہے ہیں۔ بابر اعظم نے گزشتہ سال ٹی20 میں 1700 سے زیادہ رن بنائے تھے۔

      بابر اعظم اتوار کو پی ایس ایل کے ہوئے ایک مقابلے میں لاہور قلندرس کے خلاف (Karachi Kings vs Lahore Qalandars) 41 رن بناکر آوٹ ہوئے۔ انہوں نے 33 گیندوں کا سامنا کیا اور 5 چوکے لگائے۔ انہیں لیگ اسپنر راشد خان نے بولڈ کیا۔ ٹورنامنٹ میں اب تک وہ 91 گیندوں پر صرف 96 رن بناسکے ہیں۔ اسٹرائیک ریٹ صرف 105 کا ہے، جو ٹی20 کے لحاظ سے خراب ہے۔ بابر اعظم کی کپتانی والی ٹیم کراچی کنگس نے پہلے کھیلتے ہوئے 20 اوور میں 7 وکٹ پر 170 رن بنائے ہیں۔ سلامی بلے باز شرجیل خان نے 39 گیندوں پر 60 رنوں کی طوفانی اننگ کھیلی۔ اس دوران انہوں نے 8 چوکے اور تین چھکے لگائے۔

      پانچ بلے باز بنا چکے ہیں 100 سے زیادہ رن

      پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے موجودہ سیزن کو دیکھیں تو اب تک پانچ کھلاڑی 100 سے زیادہ رن بناچکے ہیں۔ شرجیل خان کو چھوڑ کر دیگر چار بلے بازوں نے صرف دو مقابلے کھیلے ہیں۔ وہیں بابر اعظم تین میچ کھیل کر بھی 100 رنوں کا اعدادوشمار نہیں چھو سکے ہیں۔ احسان علی 130 رن بناکر ٹاپ پر چل رہے ہیں۔ وہیں محمد رضوان (Mohammad Rizwan) نے اب تک کھیلے گئے دونوں میچ میں نصف سنچری لگائی ہے اور 121 رن بنائے ہیں۔ ان کا اسٹرائیک ریٹ 136 کا ہے۔ یہ بابر اعظم کے مقابلے کافی بہتر ہے۔ کراچی کنگس کو پہلے میچ میں ملتان سلطان سے سات وکٹ سے جبکہ دوسرے میچ میں کوئٹا گلیڈیئیٹرس سے 8 وکٹ سے شکست ملی تھی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: