ہوم » نیوز » اسپورٹس

بیٹی کررہی تھی ہندووں کی طرح آرتی ، شاہد آفریدی نے غصے میں توڑ ڈالا ٹی وی

پاکستان کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے ایک ایسی بات بتائی ہے ، جس سے ایک مرتبہ پھر پاکستان میں سیکولرازم پر سوال کھڑا ہوگیا ہے ۔

  • Share this:
بیٹی کررہی تھی ہندووں کی طرح آرتی ، شاہد آفریدی نے غصے میں توڑ ڈالا ٹی وی
بیٹی کررہی تھی ہندووں کی طرح آرتی ، شاہد آفریدی نے غصے میں توڑ ڈالا ٹی وی

دانش کنیریا کا معاملہ سامنے آنے کے بعد پاکستان میں ہندووں کے خلاف ہونے والے بھیدبھاو کا انکشاف ہوا تھا ، لیکن اب پاکستان کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے ایک ایسی بات بتائی ہے ، جس سے ایک مرتبہ پھر پاکستان میں سیکولرازم پر سوال کھڑا ہوگیا ہے ۔ ایک ٹی وی چینل کو دئے انٹرویو میں شاہد آفریدی نے انکشاف کیا کہ ایک مرتبہ ان کی بیٹی آرتی کررہی تھی ، جس کو دیکھ کر شاہد آفریدی غصہ ہوگئے اور انہوں نے غصے میں ٹی وی ہی توڑ ڈالا تھا ۔


شاہد آفریدی پاکستانی چینل اے آر وائی نیوز پر بطور مہمان موجود تھے ، جہاں انہوں نے شو کی ہوسٹ ندا ناصر کو بتایا کہ کیسے انہوں نے اپنی بیٹی کو آرتی کرتے دیکھ کر غصے میں ٹی وی توڑ دیا تھا ۔ آفریدی نے انکشاف کیا کہ ان کی بیٹی ہندوستانی ٹی وی شو دیکھنے کے بعد آرتی کی تھالی لے کر گھر میں اس کو گھما رہی تھی ، جس سے ان کو کافی غصہ آگیا ۔ آفریدی کے اس انکشاف کے بعد ہوسٹ سے لے کر سبھی لوگ ہنسنے لگے ۔



بتادیں کہ شاہد آفریدی کا یہ ویڈیو 2017 کا ہے ، لیکن یہ ویڈیو اس وقت دانش کنیریا کا معاملہ سامنے آنے کے بعد سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہورہا ہے ۔ حال ہی میں پاکستان کے لیگ اسپنر دانش کنیریا نے انکشاف کیا تھا کہ جب وہ پاکستانی ٹیم میں تھے ، تو کچھ کھلاڑی ان کے ساتھ بھیدبھاو کرتے تھے ۔ کنیریا سے پہلے یہ بات شعیب اختر نے کہی تھی ، تاہم بعد میں وہ اپنی بات سے منحرف ہوگئے تھے۔ پاکستان کے دیگر کئی بڑے کرکٹرس جیسے انضمام الحق اور وقار یونس نے بھی دانش کنیریا کے دعوے کو غلط قرار دیا ہے ۔

دنیش کنیریا کی فائل فوٹو ۔

بتادیں کہ دانش کنیریا پاکستان کیلئے کھیلنے والے دوسرے ہندو کرکٹر تھے ۔ اپنے مامو انل دلپت کے بعد پاکستان کیلئے کھیلنے والے دوسرے ہندو کنیریا نے پاکستان کیلئے 61 ٹیسٹ میں 261 وکٹ لئے ۔ کنیریا کو 2009 میں کاونٹی میچ کے دوران اسپاٹ فکسنگ کا قصوروار قرار دیا گیا تھا ۔ دانش ایکسس کیلئے کاونٹی کرکٹ کھیلتے تھے ۔
First published: Dec 30, 2019 08:10 PM IST