ہوم » نیوز » اسپورٹس

سوربھ گانگولی نے کہی یہ بڑی بات، بولے۔ شاہ رخ خان نے نہیں دی آزادی: جانیں کیا ہے معاملہ

سال 2008 میں جب آئی پی ایل IPL کی شروعات ہوئی تھی تو کولکاتہ نائٹ رائیڈرس  (Kolkata Knight Riders) کے کپتان سوربھ گانگولی (Sourav Ganguly) تھے۔  گانگولی نے 12سال بعد  کولکاتہ نائٹ رائیڈرس  (Kolkata Knight Riders)کے مالک شاہ رخ خان(Shah Rukh Khan) پر بڑا انکشاف کیا ہے۔ 

  • Share this:
سوربھ گانگولی نے کہی یہ بڑی بات، بولے۔ شاہ رخ خان نے نہیں دی آزادی: جانیں کیا ہے معاملہ
شاہ رخ خان۔سوربھ گانگولی

سوربھ گانگولی (Sourav Ganguly) ایک ایسا کپتان جس نے ٹیم انڈیا کو فرش سے عرش پر لا کر کھڑا کیا۔ ایک ایسا کپتان جسے معلوم تھا کہ کون کھلاڑی اس کے لئے میچ ونر ہو سکتا ہے اور کس کھلاڑی سے کیسے بہترین کارکردگی کرانی ہے۔ سال 2008  میں جب آئی پی ایل کی شروعات ہوئی تھی تو کولکاتہ نائٹ رائیڈرس  (Kolkata Knight Riders) کے کپتان سوربھ گانگولی (Sourav Ganguly) تھے۔  گانگولی نے 12سال بعد  کولکاتہ نائٹ رائیڈرس  (Kolkata Knight Riders)کے مالک شاہ رخ خان(Shah Rukh Khan) پر بڑا انکشاف کیا ہے۔

سوربھ گنگولی نے اپنی آئی پی ایل کپتانی کو لے کر ایک بہت بڑی بات کہی ہے۔ جب گانگولی نے آئی پی ایل 2008 میں کولکاتہ نائٹ رائڈرس کی کپتانی کی تھی۔ جس میں انہوں نے خلاصہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں شاہ رخ خان(Shah Rukh Khan) کی ٹیم میں کبھی آزادی نہیں ملی۔

12سال بعد بولے سوربھ گانگولی۔۔

2008 میں کولکاتہ نائٹ رائیڈرز کی کپتانی کرنے والے سوربھ گانگولی نے کہا کہ وہ ٹیم میں پوری آزادی چاہتے تھے۔ ٹھیک ویسے ہی جیسے چنئی سپر کنگس میں دھونی اور روہت شرما کو ممبئی انڈینس میں ملتی ہے، لیکن ایسا ہوا نہیں۔ گانگولی نے یہ بھی کہا کہ شاہخ خان نے انہیں اس کا وعدہ کیا تھا لیکن ان کے کہنے اور کرنے میں بہت فرق تھا۔ گانگولی نے ایک یوٹیوب چینل کے ساتھ انٹرویو میں کہا" میں نے ایک انٹرویو میں دیکھا تھا کہ گوتم گھمبیر کہہ رہے تھے کی شاہ رخ نے انہیں کہا کہ یہ تمہاری ٹیم ہے۔ میں نے بھی شاہ رخ کو 2008 میں یہی کہا تھا۔ لیکن میرے ساتھ ایسا نہیں ہوا۔ گانگولی نے آگے کہا' اچھی آئی پی ایل ٹیم وہ ہے جنہوں نے اپنی ٹیم کو کھلاڑیوں کے ہاتھوں میں چھوڑا ہے۔ چنئیسپر کنگس کو دیکھئے اسے ایم ایس دھونی چلاتے ہیں۔ روہت شرما کے پاس کوئی نہیں جانا چاہتا کہ تم ان کھلاڑیوں کو منتخب کرو۔ اس معاملے میں سوچ بڑی چیز ہے۔ اس وقت کے کوچ جان بکنان (John Buchanan) چاہتے تھے کہ ہمیں چار کپتانوں کی ضرورت ہے۔

2009  میں کپتانی سے ہٹائے گئے تھے سوربھ گانگولی

سال 2009 میں شاہ رخ خان کی ٹیم کولکاتہ نائٹ رائیڈرس نے گانگولی کو کپتانی کے عہدے سے ہٹا دیا تھا۔ بتا دیں کوچ جان بکنان (John Buchanan) اور سوربھ گانگولی (Sourav Ganguly) کے رشتے کبھی صحیح نہیں رہے، جس کا اثر ٹیم کی پرفارمنس پر بھی نظر آیا۔ پہلے دو سیزن میں کولکاتہ نائٹ رائیڈرس کی ٹیم ( Kolkata Knight Riders team) ٹاپ 4 میں بھی نہیں پہنچ پائی۔ سال 2011میں گانگولی نے کولکاتہ نائٹ رائڈرس سے ناطہ توڑ کر پونے واریئرس کا دامن تھام لیا۔

آزادی کے بعد چمکی کے کے آر کی قسمت
بتا دیں شاہ رخ نے جب گوتم گھمبیر کو ٹیم میں فیصلے لینے کی آزادی دی، اسی کے بعد کولکاتہ نائٹ رائیڈرس کی قسمت پلٹ گئی۔ ٹیم نے دو بار آئی پی ایل خطاب پر قبضہ کیا۔ اگر شاہ رخ خان اور ان کے کوچ جان بکنان گانگولی کو بھی آزادی دیتے تو ہو سکتا ہے کیکولکاتہ نائٹ رائیڈرس, کو اور زیادہ خطاب حاصل ہوتے۔
Published by: Sana Naeem
First published: Jul 10, 2020 06:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading