உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    T20 World Cup 2022: ہندوستان اور پاکستان کے کھلاڑی کے ایک ٹیم سے کھیلیں گے ٹی 20 ورلڈ کپ، آدھا درجن سے زیادہ کو موقع

    T20 World Cup 2022: ہندوستان اور پاکستان کے کھلاڑی کے ایک ٹیم سے کھیلیں گے ٹی 20 ورلڈ کپ، آدھا درجن سے زیادہ کو موقع  (USA Cricket Twitter)

    T20 World Cup 2022: ہندوستان اور پاکستان کے کھلاڑی کے ایک ٹیم سے کھیلیں گے ٹی 20 ورلڈ کپ، آدھا درجن سے زیادہ کو موقع (USA Cricket Twitter)

    T20 World Cup 2022: امریکی ٹیم بھی ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کے مین ڈرا میں کھیلنے کی تیاری کر رہی ہے۔ جولائی میں ہونے والے کوالیفائرز کے لئے 14 رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

    • Share this:
      نیویارک: امریکی ٹیم بھی ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ کے مین ڈرا میں کھیلنے کی تیاری کر رہی ہے۔ جولائی میں ہونے والے کوالیفائرز کے لئے 14 رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ کیپٹن مونانک پٹیل ہندوستانی نژاد ہیں ۔ ٹیم میں نصف درجن سے زائد کھلاڑی ہندوستان اور پاکستان نژاد ہیں ۔ ایسے میں وہ ایک ساتھ کھیلتے نظر آئیں گے اور امریکہ کو ورلڈ کپ میں جگہ دلانا چاہیں گے۔ جسکرن ملہوترا کو بھی ٹیم میں جگہ ملی ہے۔ وہ ون ڈے میں 6 گیندوں پر 6 چھکے لگانے کا ریکارڈ بنا چکے ہیں۔ کوالیفائر کے میچز 11 سے 17 جولائی تک کھیلے جائیں گے۔ اس میں کل 8 ٹیمیں اتر رہی ہیں ۔ ٹاپ دو ٹیم کو آسٹریلیا میں ہونے والے ورلڈ کپ میں کھیلنے کا موقع ملے گا ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: انگلینڈ دورہ پر روہت شرما اور وراٹ کوہلی کی اس 'حرکت' سے ناراض BCCI، مل سکتی ہے سزا!


      امریکی ٹیم میں مونانک پٹیل، جسکرن ملہوترا کے علاوہ نسرگ پٹیل، سوربھ، سوشانت مودانی اور وتسل واگھیلا ہندوستانی نژاد ہیں ۔ دوسری جانب تیز گیندباز علی خان اور یاسر محمد پاکستانی نژاد ہیں۔ 29 سالہ مونانک کی بات کریں تو وہ گجرات میں پیدا ہوئے تھے۔ وہ اب تک 16 ٹی ٹوینٹی انٹرنیشنل میچوں میں 15 کی اوسط سے 164 رنز بنا چکے ہیں ۔ وہ ٹیم میں بطور وکٹ کیپر کھیلتے ہیں ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: 'کڈنیپرس نے پہلے کپڑے اتارے اور پھر...'،Shane Warne کے ساتھی اسپنر نے سنائی اغوا کی کہانی


      حالانکہ 32 سالہ جسکرن ون ڈے میں 6 گیندوں پر 6 چھکے لگا چکے ہیں، لیکن انہیں ابھی پہلے ٹی ٹوینٹی انٹرنیشنل نصف سنچری کا انتظار ہے ۔ انہوں نے 12 میچوں میں 181 رنز بنائے ہیں ۔ 38 رنز کی سب سے بڑی اننگز کھیلی ہے۔ دوسری جانب بائیں ہاتھ کے اسپنر نسرگ پٹیل نے 12 ٹی ٹوینٹی میں 16 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ ان کی بہترین کارکردگی 17 رنز کے عوض 4 وکٹیں ہیں۔ ممبئی کے تیز گیند باز سوربھ نے 15 میچوں میں 33 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ ان کی بہترین کارکردگی 33 رنز کے عوض 3 وکٹیں ہیں ۔

      33 سالہ آل راؤنڈر سوشانت مودی نے 2 میچوں میں 39 کی اوسط سے 77 رنز بنائے ہیں۔ حالانکہ اس آف اسپنر کو ابھی تک کوئی وکٹ نہیں ملی ہے۔ وہیں بائیں ہاتھ کے اسپنر وتسل نے ایک ٹی ٹوینٹی میں 2 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ اب پاکستان کے تیز گیندباز علی خان کی بات کریں تو انہوں نے 5 میچوں میں 5 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ انہوں نے مجموعی طور پر 48 ٹی ٹوینٹی میں 53 وکٹیں حاصل کی ہیں ۔ وہ کیریبین لیگ اور پاکستان سپر لیگ میں نظر آ چکے ہیں ۔ جبکہ لیگ اسپنر یاسر نے 2 ٹی ٹوینٹی میں 2 وکٹیں حاصل کی ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: