ہوم » نیوز » اسپورٹس

میچ سے ایک دن پہلے ہوگئی تھی بہن کی موت ، فائنل میں کپتانی اننگز کھیل کر بنگلہ دیش کو بنایا ورلڈ چمپئن

18 سال کے اکبر کی بہن کی 22 جنوی کو جڑواں بچوں کو جنم دینے کے دوران موت ہوگئی تھی اور اس کے باوجود وہ پاکستان کے خلاف 24 جنوری کو میچ کھیلنے کیلئے میدان میں اترے ۔

  • Share this:
میچ سے ایک دن پہلے ہوگئی تھی بہن کی موت ، فائنل میں کپتانی اننگز کھیل کر بنگلہ دیش کو بنایا ورلڈ چمپئن
میچ سے ایک دن پہلے ہوگئی تھی بہن کی موت ، فائنل میں کپتانی اننگز کھیل کر بنگلہ دیش کو بنایا ورلڈ چمپئن

جنوبی افریقہ میں ہوئے انڈر 19 ورلڈ کپ کے فائنل میں بنگلہ دیش نے مضبوط ہندوستانی ٹیم کو تین وکٹ سے مات دیدی ۔ بنگلہ دیش نے پہلی مرتبہ ورلڈ چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا ۔ بنگلہ دیش کی اس جیت میں اس کے کپتان اکبر علی نے اہم رول ادا کیا ۔ نہ صرف انہوں نے دباو سے بھرے میچ میں اچھی کپتانی کی ، بلکہ انہوں نے ہندوستان کی مضبوط گیندبازی کا جم کر مقابلہ بھی کیا اور ناٹ آوٹ 43 رن بناکر ٹیم کو جیت دلائی ۔ ٹیم کو ورلڈ چمپئن بنانے کے بعد اب انکشاف ہوا ہے کہ اکبر علی ورلڈ کپ میں ایک ایسے درد کے ساتھ کھیلے ، جس کو بیان کرنا بھی مشکل ہوتا ہے ۔ دراصل ورلڈ کپ کے دوران اکبر علی کی بڑی بہن کی موت ہوگئی تھی اور وہ ٹورنامنٹ کے دوران صدمے میں تھے ۔


18 سال کے اکبر کی بہن کی 22 جنوی کو جڑواں بچوں کو جنم دینے کے دوران موت ہوگئی تھی اور اس کے باوجود وہ پاکستان کے خلاف 24 جنوری کو میچ کھیلنے کیلئے میدان میں اترے ۔ بنگلہ دیش کے اخبار پرتھم آلو کی ایک رپورٹ کے مطابق خدیجہ خاتون کے انتقال کے بارے میں اکبر کو نہیں بتایا گیا تھا ، لیکن بعد میں انہیں اپنے بھائی سے اس کی جانکاری ملی ۔


اکبر اعلی ۔ فائل فوٹو ۔
اکبر اعلی ۔ فائل فوٹو ۔


اکبر کے والد کے مطابق وہ اپنی بہن کے سب سے قریب تھا ۔ وہ اکبر سے بہت پیار کرتی تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے اس کو نہیں بتایا ۔ پاکستان کے میچ کے بعد اس نے فون کیا اور اپنے بھائی سے پوچھا ، مجھ میں اس سے بات کرنے کی ہمت نہیں تھا ۔ خدیجہ نے 18 جنوری کو گروپ سی میں بنگلہ دیش کی زمبابوے کے خلاف جیت دیکھی تھی ، لیکن اپنے بھائی کو ملک کا پہلا ورلڈ کپ جیتتے ہوئے دیکھنے کیلئے زندہ نہیں رہی ۔

بنگلہ دیش نے پہلی مرتبہ ورلڈ چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا ۔
بنگلہ دیش نے پہلی مرتبہ ورلڈ چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا ۔


قابل ذکر ہے کہ اکبر علی کو ورلڈ کپ میں صرف چار اننگز کھیلنے کا موقع ملا ، جس میں سے تین میں وہ ناٹ آوٹ رہے ۔ اکبر علی نے 69 کی اوسط سے 69 رن بنائے ۔ انہوں نے سب اچھی کارکردگی کا مظاہرہ فائنل میچ کیا ، جس میں انہوں نے ناٹ آوٹ 43 رن بنائے اور اپنی ٹیم کو جیت دلائی ۔
First published: Feb 10, 2020 08:33 PM IST