اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ہندستان کے خلاف جنگ سے پہلے پاکستان کیلئے بری خبر، اسٹار بلے کے سر پر لگی چوٹ

    پاکستان کی ٹیم میں مسعود کا مقابلہ فخر الزمان سے ہے۔ فخر بھی حال ہی میں انجری سے صحت یاب ہو کر ٹیم میں واپس آئے ہیں۔ دونوں کھلاڑی نمبر تین کے دعویدار ہیں۔

    پاکستان کی ٹیم میں مسعود کا مقابلہ فخر الزمان سے ہے۔ فخر بھی حال ہی میں انجری سے صحت یاب ہو کر ٹیم میں واپس آئے ہیں۔ دونوں کھلاڑی نمبر تین کے دعویدار ہیں۔

    پاکستان کی ٹیم میں مسعود کا مقابلہ فخر الزمان سے ہے۔ فخر بھی حال ہی میں انجری سے صحت یاب ہو کر ٹیم میں واپس آئے ہیں۔ دونوں کھلاڑی نمبر تین کے دعویدار ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      نئی دہلی: پاکستان کرکٹ ٹیم کو ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ سے قبل بڑا جھٹکا لگا ہے۔ ٹیم کے اسٹار بلے باز شان مسعود کو میلبورن کرکٹ گراؤنڈ میں نیٹ سیشن کے دوران سر میں چوٹ لگ گئی جس کے بعد انہیں اسکین کے لیے اسپتال لے جایا گیا ہے۔ محمد نواز کی گولی مسعود کے سر کے دائیں جانب لگی۔

      پاکستان کرکٹ ٹیم ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں اپنا پہلا میچ 23 اکتوبر کو بھارت کے خلاف کھیلے گی۔ شان مسعود گزشتہ ماہ انگلینڈ کے خلاف سیریز میں تیسرے نمبر پر بیٹنگ کرنے آئے تھے۔ پاکستان کی ٹیم میں مسعود کا مقابلہ فخر الزمان سے ہے۔ فخر بھی حال ہی میں انجری سے صحت یاب ہو کر ٹیم میں واپس آئے ہیں۔ دونوں کھلاڑی نمبر تین کے دعویدار ہیں۔



      شان مسعود کی ویڈیو وائرل
      سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں شان مسعود زخمی ہونے کے بعد زمین پر پڑے ہیں۔ وہ ہر طرف سے ٹیم کے ساتھ کھلاڑیوں سے گھرا ہوا ہے۔ ٹیم کا طبی عملہ انہیں ابتدائی طبی امداد دینے میں مصروف ہے۔ تاہم بعد میں انہیں اسپتال لے جایا گیا تاکہ معلوم ہو سکے کہ ان کی چوٹ کتنی سنگین ہے۔

      شادی کی تقریب کےبغیرجاری کیےگئے میرج سرٹیفکیٹ کو فرضی مانا جائےگا، مدراس ہائی کورٹ کافیصلہ

      بڑی راحت! حکومت بڑھا سکتی ہے جی ایس ٹی ریٹرن بھرنے کی تاریخ، کب تک ملے گا موقع

      شان مسعود 12 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ کھیل چکے ہیں۔

      33 سالہ شان مسعود نے 12 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں میں مجموعی طور پر 220 رنز بنائے ہیں۔ اس دوران ان کا اسٹرائیک ریٹ 125 رہا۔ مسعود اب تک ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کرکٹ میں دو نصف سنچریاں بنا چکے ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: