ہوم » نیوز » اسپورٹس

ورلڈ کپ: ویسٹ انڈیز کے خلاف اس ایک غلطی نے پاکستان کا بیڑا غرق کر دیا

پاکستانی مداحوں کو اس بات کی امید تھی کہ پاکستان شاید 1992 ورلڈ کپ کی تاریخ دوہرائے گا اور ان کی ٹیم کی قسمت کھلے گی لیکن خراب کھیل کے آگے قسمت بھی کام نہیں آتی ہے۔

  • Share this:
ورلڈ کپ: ویسٹ انڈیز کے خلاف اس ایک غلطی نے پاکستان کا بیڑا غرق کر دیا
پاکستان کو اب تک صرف 4 میچوں میں جیت حاصل ہوئی ہے:( تصویر۔اے پی) ۔

ورلڈ کپ میں سیمی فائنل کے مقابلے طے ہوچکے ہیں۔ پاکستان کا سیمی فائنل کی دوڑ سے تقریبا پتہ صاف ہوگیا ہے۔ اب کوئی کرشمہ ہی اسے سیمی فائنل میں مقام دلا سکتا ہے۔ ابتدائی میچوں میں کراری شکست نے پاکستان کی امیدیں فی الحال پہلے ہی ختم کر دی تھیں۔ حالانکہ پاکستانی فینس اس بات کی امید میں بیٹھے تھے کہ پاکستان شاید 1992 ورلڈ کپ کی تاریخ دوہرائے گا اور ان کی ٹیم کی قسمت کھلے گی لیکن خراب کھیل کے آگے قسمت بھی کام نہیں آتی ہے۔

پاکستان کے راستے میں سب سے بڑا اور سب سے پہلا روڑا ویسٹ انڈیز نے اٹکایا۔ پاکستان کو پہلے میچ میں ہی ویسٹ انڈیز نے 7 وکٹ سے کراری شکست دے دی۔ اس میچ میں پاکستان کی ٹیم صرف 105 رنوں پر ڈھیر ہو گئی تھی۔ جواب میں ویسٹ انڈیز نےاس ہدف کو 14ویں اوور میں ہی پورا کر لیا۔ لہذا پہلے میچ کے بعد ہی پاکستان کا نیٹ رن ریٹر مائنس(۔) میں پہنچ گیا۔ اس کے بعد سری لنکا کے خلاف پاکستان کا میچ بارش کی وجہ سے رد ہوگیا۔ پاکستان کو اس کا بھاری نقصان اٹھانا پڑا۔


ہندستان نے ختم کی امیدیں۔۔

ورلڈ کپ میں ٹیم انڈیا نے پاکستان کے خلاف نہ ہارنے کا ریکارڈ برقرار رکھا۔ اس مقابلے میں پاکستان کو 89 رنوں سے کراری شکست ملی۔ لہذا پاکستان کا نیٹ رن ریٹ اور بھی نیچے کھسک گیا۔ اس سے پہلے آسٹریلیا نے بھی پاکستان کو 41 رنوں سے ہراکر حوصلے پست کر دئے تھے۔ اس کے بعد پاکستان کو جیت تو ملی لیکن نیٹ رن رییٹر میں کوئی اضافہ نہیں ہوا۔ نیٹ رن ریٹر (-0.792)  مائنس میں ہی پھنسا رہ گیا۔

۔1992 کے سہارے پاکستان
شروعاتی میچوں میں کراری شکست کے بعد بھی پاکستانی فینس نے اپنی ٹیم سے  امیدیں  بنائے رکھیں۔ ٹیم کیلئے  1992 ورلڈ کپ کی تاریخ دوہرائے جانے لگی۔ میچ در میچ ایسا ہی ہو رہا تھا جیسا کہ ورلڈ کپ 1992 میں عمران خان کی ٹیم نے کیا تھا لیکن صرف قسمت کے سہارے کچھ نہیں ہوسکتا اور آج نتیجہ آپ کے سامنے ہے۔ شروعاتی میچوں میں کراری ہار نے پاکستان کا سارا کھیل بگاڑ دیا۔
First published: Jul 04, 2019 09:21 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading