ہوم » نیوز » اسپورٹس

WTC Final: نیوزی لینڈ بنا ورلڈ چیمپئن ، ہندوستان کو ہراکر 144 سال کی سب سے بڑی ٹرافی جیتی

نیوزی لینڈ نے پہلے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ (WTC Final) کا خطاب جیت لیا ہے ۔ ٹیم نے فائنل میں ٹیم انڈیا کو 8 وکٹوں سے ہرادیا ۔ نیوزی لینڈ نے 2000 کے بعد پہلی مرتبہ آئی سی سی ٹرافی جیتی ہے ۔ نیوزی لینڈ کو 139 رنوں کا ہدف ملا تھا ۔

  • Share this:
WTC Final: نیوزی لینڈ بنا ورلڈ چیمپئن ، ہندوستان کو ہراکر 144 سال کی سب سے بڑی ٹرافی جیتی
WTC Final: نیوزی لینڈ بنا ورلڈ چیمپئن ، ہندوستان کو ہراکر 144 سال کی سب سے بڑی ٹرافی جیتی ۔ (AFP)

ساوتھمپٹن : نیوزی لینڈ نے پہلے ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا ٹائٹل جیت لیا ہے ۔ ٹیم نے فائنل میں ٹیم انڈیا کو 8 وکٹوں سے ہرایا ۔ آخری دن ٹیم انڈیا دوسری اننگز میں صرف 170 رن ہی بناسکی ، جواب میں نیوزی لینڈ نے 139 رنوں کے ہدف کو دو وکٹ گنوا کر حاصل کرلیا ۔ ٹیم انڈیا نے پہلی اننگز میں 217 جبکہ نیوزی لینڈ نے پہلی اننگز میں 249 رن بنائے تھے ۔ آئی سی سی کی جانب سے پہلی مرتبہ ٹورنامنٹ کا انعقاد کیا گیا ۔ 1877 میں پہلا ٹیسٹ کھیلا گیا تھا ۔


میچ کے آخری دن بدھ کو ٹیم انڈیا نے دوسری اننگز میں دو وکٹ پر 64 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا ، لیکن ٹیم نے مسلسل وقفہ پر وکٹ گنوائے ۔ صرف دو بلے باز 30 رن سے زیادہ کی اننگز کھیل سکے ۔ ریشبھ پنت نے سب سے زیادہ 41 رن اور روہت شرما نے 30 رن بنائے ۔ ٹیم انڈیا کی جانب سے دونوں اننگز میں کوئی بھی کھلاڑی نصف سنچری نہیں بنا سکا ۔ وراٹ کوہلی کو مسلسل دوسری اننگز میں کائل جیمیسن نے آوٹ کیا ۔ چتیشور پجارا اور اجنکیا رہانے نے پندرہ پندرہ رن بنائے ۔ ٹیم نے آخری آٹھ وکٹ 99 رن میں گنوادئے ۔ پوری ٹیم 73 اوورس میں 170 رن پر سمٹ گئی ۔


ٹیم انڈیا کے سبھی 20 وکٹ نیوزی لینڈ کے تیز گیندبازوں نے لئے ۔ دوسری اننگز میں ٹم ساوتھی نے چار جبکہ ٹرینٹ بولٹ نے تین وکٹ لئے ۔ کائل جیمیسن دو جبکہ نیل ویگنر کو ایک وکٹ ملا ۔ میچ کی بات کریں تو جیسمین نے سات ، ساوتھی اور بولٹ نے پانچ پانچ اور ویگنر نے تین وکٹ لئے ۔ نیوزی لینڈ کی ٹیم میچ میں اسپنر گیند باز کے بغیر میدان پر اتری تھی اور پانچ تیز گیند باز کھلائے تھے ۔


نیوزی لینڈ کے سلامی بلے بازوں نے فائنل میں شاندار بلے بازی کی ۔ پہلی اننگز میں ٹام لاتھم ( 30 ) اور ڈیوان کانوے ( 54) نے 70 رنوں کی شراکت داری کی ۔ دوسری اننگز میں بھی دونوں بلے بازوں نے ٹیم کو اچھی شروعات دلائی ۔ دونوں نے 33 رنوں کی شراکت داری کی ۔ لاتھم نے نو اور کانوے نے 19 رن بنائے ۔ دونوں کا وکٹ آف اسپنر اشون نے لیا ۔ 44 رن پر دو وکٹ گرنے کے بعد کین ولیمسن ( 52 ناٹ آوٹ ) اور رس ٹیلر (47 ناٹ آوٹ ) نے 96 رن کی شراکت داری کرکے ٹیم کو جیت دلادی ۔

ٹیلر پر جب 26 رن پر کھیل رہے تھے تب پجارا نے فرسٹ سلپ میں بمراہ کی گیند پر ان کا کیچ چھوڑا ۔ ٹیم کو اس وقت 55 رنوں کی ضرورت تھی ۔ ولیمسن نے پہلی اننگز میں بھی 49 رنوں کی شاندار اننگز کھیلی تھی ۔

ٹیم نے جیتا دوسرا آئی سی سی خطاب

نیوزی لینڈ کی ٹیم نے دوسرا آئی سی سی خطاب جیتا ہے ۔ 2000 میں چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں نیوزی لینڈ نے ٹیم انڈیا کو ہرایا تھا ۔ ٹیم انڈیا نے پہلے کھیلتے ہوئے چھ وکٹ پر 264 رن بنائے تھے ۔ جواب میں نیوزی لینڈ نے ہدف کو دو گیندیں باقی رہتے ہوئے چھ وکٹ گنوا کر حاصل کرلیا تھا ۔ کرس کینرس نے ناٹ آوٹ 102 رن بنائے تھے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 24, 2021 12:00 AM IST