உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    EXCLUSIVE: آخر کیوں اوانی لیکھرا نے اپنا تمغہ تمام ہندوستانیوں کے نام معنون کیا! کیا ہے وجہ؟ جانیے تفصیلات

    EXCLUSIVE: آخر کیوں اوانی لیکھرا نے اپنا تمغہ تمام ہندوستانیوں کے نام معنون کیا! کیا ہے وجہ؟ جانیے تفصیلات

    EXCLUSIVE: آخر کیوں اوانی لیکھرا نے اپنا تمغہ تمام ہندوستانیوں کے نام معنون کیا! کیا ہے وجہ؟ جانیے تفصیلات

    مجموعی طور پر شوٹر اوانی لیکھارا (Avani Lekhara) تیراکی مرلیکانت پیٹکر (1972)، برچھی پھینکنے والے دیویندر جھاجریا (2004 اور 2016) اور ہائی جمپر تھنگاویلو ماریپن (2016) کے بعد پیرالمپک طلائی تمغہ جیتنے والی چوتھی ہندوستانی کھلاڑی ہیں۔

    • Share this:
      شوٹر اوانی لیکھرا (Avani Lekhara) پیرالمپک گیمز 2020 (Paralympic Games 2020) میں گولڈ میڈل جیتنے والی پہلی ہندوستانی خاتون بن گئیں۔ 19 سالہ لڑکی نے سونے کا تمغہ جیتا، ہندوستان کا ٹوکیو 2020 میں پہلا خواتین کی 10 میٹر ایئر رائفل SH1 میں پیر کو فائنل میں 249.6 کے عالمی ریکارڈ اسکور کے ساتھ انھوں نے تاریخ بنائی ہے۔

      پیرالمپک گیمز (Paralympic Games) کی شوٹنگ میں یہ ہندوستان کا پہلا طلائی تمغہ ہے۔ مجموعی طور پر وہ تیراکی مرلیکانت پیٹکر (1972)، برچھی پھینکنے والے دیویندر جھاجریہ (2004 اور 2016) اور ہائی جمپر تھنگاویلو ماریپن (2016) کے بعد پیرالمپک طلائی تمغہ جیتنے والی چوتھی ہندوستانی کھلاڑی ہیں۔

      درحقیقت اوانی اولمپکس یا پیرالمپکس میں سونے کا تمغہ جیتنے والی پہلی ہندوستانی خاتون ایتھلیٹ ہیں۔ 2016 کے ریو میں دیپا ملک نے جیتے چاندی کے تمغے اور پیرا ٹیبل ٹینس کی کھلاڑی بھوینا پٹیل اتوار کو پیرالمپکس میں ہندوستانی خواتین کھلاڑیوں کی بہترین کوششیں تھیں۔ پی وی سندھو اور میرابائی چانو نے اولمپکس میں ہندوستان کے لیے چاندی کے تمغے جیتے ہیں۔

      انہوں نے سی این این نیوز 18 ڈاٹ کام کو ایک خصوصی بات چیت میں بتایا کہ میں بہت خوش اور شکر گزار ہوں۔ میں اس خوشی اور عظیم احساس کی وضاحت نہیں کر سکتی‘‘۔ اوانی لیکھرا نے اپنے ساتھی ہندوستانیوں کا شکریہ ادا کیا اور اپنا تاریخی تمغہ اپنے ہم وطنوں کے لیے وقف کیا۔ انہوں نے سی این این نیوز 18 ڈاٹ کام کو ایک خصوصی بات چیت میں بتایا کہ یہ تمغہ پورے ہندوستان کی آشیرواد اور حمایت کی وجہ سے مجھے ملا ہے‘‘

      انہوں نے مزید کہا کہ میں یہ تمغہ تمام ہندوستانیوں کے لیے وقف کرنا چاہوں گی۔ 19 سالہ اوانی کو 2012 میں ایک کار حادثے میں ریڑھ کی ہڈی کی چوٹیں لگی تھیں، اس کے باوجود وہ فائنل کے لئے ساتویں راونڈ میں کوالیفائی کی اور فائنل میں ہی پہلی ایلیمینیشن سیریز میں سات شوٹرز کو چھلانگ لگانے کے لئے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور کبھی پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔

      چین کی ژانگ کوپنگ (Zhang Cuiping) نے چاندی کا تمغہ جیتا، جیسا کہ اس نے ریو 2016 میں کیا تھا۔ اس نے 248.9 کے اسکور کے ساتھ اپنی کامیابی درج کرائی جبکہ یوکرین کی ایرینا شیٹنک نے 227.5 کے ساتھ کانسے کا تمغہ جیتا۔

      راجستھان یونیورسٹی کی قانون کی طالبہ جو 2012 میں ایک کار حادثے میں ریڑھ کی ہڈی میں چوٹ لگی تھی، 2020 میں ایک مشکل دور سے آرہی ہے۔ کیونکہ اس کی فزیو تھراپی کا معمول کووڈ-19 وبا کے دوارن لاک ڈاؤن کی وجہ سے متاثر ہوا تھا۔ اس سے قبل پیر کے روز کوالیفائنگ راؤنڈ میں اوانی نے شاٹس کی پہلی سیریز میں 103 کے ساتھ آغاز کیا اور 102.8، 104.9، 104.8، 102.1 اور 104.5 پر چلی گئی کیونکہ وہ 621.7 پوائنٹس کے ساتھ ساتویں نمبر پر رہی اور آٹھ شوٹر فائنل میں پہنچ گئی۔

      سال 2019 میں اوانی نے کروشیا کے اوسیک میں ہونے والے پیرا شوٹنگ ورلڈ کپ میں 10 میٹر ایئر رائفل چاندی جیتی۔ اسی سال مئی میں اس نے 10 میٹر ایئر رائفل پروون مکسڈ ایونٹ (R3) میں 631.7 کی شوٹنگ کے بعد کوالیفکیشن جونیئر ورلڈ ریکارڈ قائم کیا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: