ہوم » نیوز » اسپورٹس

غربت کی وجہ سے اس کھلاڑی کو کم عمر میں ہی کرنی پڑی تھی نوکری ، آج ہے پاکستان کرکٹ کا سپراسٹار

فخر زمان نے زمبابوے کے خلاف بلاوایو یک روزہ میچ میں 156 گیندوں پر 24 چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے ناٹ آوٹ 210 رنوں کی اننگز کھیلی ۔

  • Share this:
غربت کی وجہ سے اس کھلاڑی کو کم عمر میں ہی کرنی پڑی تھی نوکری ، آج ہے پاکستان کرکٹ کا سپراسٹار
فخر زمان ۔ فائل فوٹو

پاکستانی بلے باز فخر زمان یک روزہ میچ میں دوہری سنچری بنانے کی وجہ سے موضوع بحث ہیں ۔ انہوں نے زمبابوے کے خلاف بلاوایو یک روزہ میچ میں 156 گیندوں پر 24 چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے ناٹ آوٹ 210 رنوں کی اننگز کھیلی ۔ فخر زمان یک روزہ کرکٹ میں ڈبل سنچری بنانے والے پہلے پاکستانی اور مجموعی طور پر چھٹے بلے باز ہیں ۔ اس سے پہلے سچن تیندولکر ، وریندر سہواگ ، روہت شرما ، مارٹن گپٹل اور کرس گیل یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔

فخر زمان نے امام الحق کے ساتھ مل کر پہلے وکٹ کیلئے 304 رنوں کی شاندار شراکت داری بھی کی ۔ یہ پہلے وکٹ کیلئے یک روزہ کرکٹ کی سب سے بڑی ساجھیداری ہے ۔ اس سے پہلے یہ ریکارڈ سری لنکا کے جے سوریہ اور اپل تھرنگا کے نام تھا ، جنہوں نے 2006 میں لیڈس میں انگلینڈ کے خلاف 286 رن بنائے تھے۔

اگر ہم پاکستان کے اس بلے باز کی بات کریں تو یہ اس کھلاڑی کا بچپن انتہائی غربت میں گزرا ہے اور اسی وجہ سے انہیں بہت کم عمر میں ہی نوکری بھی کرنی پڑی تھی۔ یہی نہیں نوکری کے ساتھ ساتھ کرکٹ کھیلنے کی وجہ سے وہ کئی مرتبہ ذہنی الجھن کے بھی شکار ہوئے اور کھیل کو ترک کرنے کا بھی ارادہ بنالیا تھا۔

بات ہے 2007 کی جب فخر کا کنبہ مالی تنگ حالی سے گزر رہا تھا ۔ فخر کی عمر اس وقت صرف 17 سال تھی، جب ان پر پورے کنبہ کی ذمہ داری آگئی ۔ لہذا انہیں نوکری کرنی پڑی ۔ اس وقت انہوں نے پاکستان بحریہ کا ٹیسٹ دیا اور اسے پاس کرکے نوکری حاصل کی ۔ حالانکہ وہ اس نوکری سے خوش نہیں تھے۔



اس کے بعد ان کی ملاقات ایک شخص نے ناظم خان سے کرائی ، جو پاکستان میں نول کرکٹ اکیڈمی کے کوچ تھے ۔ دراصل ناظم خان کو احساس ہوگیا تھا کہ اس نوجوان کا کیرئیر بحریہ میں نہیں بلکہ کرکٹ میں ہے ۔ لہذا انہوں نے اس نوجوان کو اس کی ڈیوٹی سے نجات دلا کر بحریہ میں بطور پیشہ ور کھلاڑی داخلہ دلوایا۔
آخر کار سال 2008 میں ان کی درخواست کو منظوری ملی اور بحریہ میں بطور پیشہ ور کھلاڑی ان کے کیرئیر کا آغاز ہوا ۔آگے چل کر انہوں نے کراچی انڈر 19 اور انڈر 23 میں کھیلا اور اس کے بعد فرسٹ کلاس میں ان کا سلیکشن ہوا ۔ اس کے بعد بھی اس نوجوان کھلاڑی کی زندگی میں کئی اتاڑچڑھاو آئے ، لیکن انہوں نے کبھی ہمت نہیں ہار ی ۔ 2013 میں وہ گھریلو ٹیم حبیب بینک لمیٹیڈ سے وابستہ ہوئے ۔
فخرزمان نے اب تک پاکستان کیلئے 17 یک روزہ میچ اور 22 ٹی ٹوینٹی میچ کھیلے ہیں ۔
First published: Jul 22, 2018 10:29 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading