உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CBI جانچ میں تیزی، فٹبال فیڈریشن سے طلب کی گئی کلب سے جڑی جانکاری

     انہوں نے بتایا کہ تقریباً 15 دن پہلے شروع ہونے والی تحقیقات کے دوران سی بی آئی نے دہلی میں قائم آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن سے کئی ہندوستانی فٹ بال کلبوں کے دستاویزات طلب کئے ہیں اور انہیں جمع کیا ہے۔

    انہوں نے بتایا کہ تقریباً 15 دن پہلے شروع ہونے والی تحقیقات کے دوران سی بی آئی نے دہلی میں قائم آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن سے کئی ہندوستانی فٹ بال کلبوں کے دستاویزات طلب کئے ہیں اور انہیں جمع کیا ہے۔

    انہوں نے بتایا کہ تقریباً 15 دن پہلے شروع ہونے والی تحقیقات کے دوران سی بی آئی نے دہلی میں قائم آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن سے کئی ہندوستانی فٹ بال کلبوں کے دستاویزات طلب کئے ہیں اور انہیں جمع کیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi, India
    • Share this:
      Football Match-Fixing: سی بی آئی نے ملک میں فٹ بال میچوں میں مبینہ میچ فکسنگ کی ابتدائی جانچ شروع کر دی ہے۔ حکام نے پیر کو یہ جانکاری دی۔ انہوں نے بتایا کہ تقریباً 15 دن پہلے شروع ہونے والی تحقیقات کے دوران سی بی آئی نے دہلی میں قائم آل انڈیا فٹ بال فیڈریشن سے کئی ہندوستانی فٹ بال کلبوں کے دستاویزات طلب کئے ہیں اور انہیں جمع کیا ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ میچوں کے نتائج میں دھاندلی میں سنگاپور میں مقیم ایک مبینہ 'میچ فکسر' کا کردار بھی تحقیقات کے دائرے میں سامنے آیا ہے۔

      حکام نے ابتدائی تفتیش میں نامزد ملزمان کے بارے میں کوئی بھی معلومات اور الزامات کی تفصیلات فراہم کرنے سے انکار کر دیا، اس خدشہ سے کہ یہ تفتیش میں رکاوٹ بن سکتی ہے۔ میچ فکسنگ کی تحقیقات اس وقت ابتدائی مرحلے میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایجنسی کو کچھ دستاویزات موصول ہوئی ہیں جبکہ کچھ کا ابھی انتظار ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایجنسی نے کئی ہندوستانی فٹ بال کلبوں سے بھی تحقیقات میں شامل ہونے کے لئے تعاون طلب کیا ہے۔ قانون کا حوالہ دیتے ہوئے حکام نے کہا کہ سی بی آئی ابتدائی تفتیش کے حصے کے طور پر تلاشی، گرفتاری یا سمن کے ذریعے پوچھ گچھ نہیں کر سکتی۔

      'مینیجمنٹ مجھے نظرانداز کررہا ہے'، پاکستان کے اسٹار کرکٹر نے رمیزراجہ سے لگائی مدد کی گہار

      مکیش امبانی کی بیٹی ایشا امبانی کے گھر گونجی کلکاریاں، جڑواں بچوں کو دیا جنم

      تحقیقات میں شامل عہدیداروں نے بتایا کہ مرکزی تحقیقاتی ایجنسی ابتدائی تفتیش کے دوران اسٹیک ہولڈرز کے تعاون پر منحصر ہے اور جب اس کے پاس پہلی نظر میں جرم کی نشاندہی کرنے والا مواد ہوتا ہے تو ایف آئی آر درج کرتی ہے۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ فٹبال میچ فکسنگ کے سنگین الزام کے بعد ہر طرف کہرام مچ گیا تھا۔ کیس کی جانچ سی بی آئی کو سونپ دی گئی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: