ہوم » نیوز » اسپورٹس

پاکستانی کرکٹر کا سنسنی خیزالزام، انگلینڈ - نیوزی لینڈ میچ کو بتایا فکس

راشد لطیف نے دعویٰ کیا ہے کہ دونوں ٹیموں کے کھیل کو دیکھ کر لگ رہا تھا کہ ان کی پوری کوشش ہے کہ پاکستان کسی بھی طرح سیمی فائنل میں نہ پہنچے۔

  • Share this:
پاکستانی کرکٹر کا سنسنی خیزالزام، انگلینڈ - نیوزی لینڈ میچ کو بتایا فکس
پاکستانی ٹیم ۔ فائل فوٹو ۔

انگلینڈ نے بدھ کو نیوزی لینڈ کو شکست دے کرآئی سی سی کرکٹ عالمی کپ  2019 کے سیمی فائنل میں جگہ بنالی۔ اس جیت کے ساتھ  ہی ایک طرف جہاں سیمی فائنل کی چاروں ٹیموں کا نام تقریباً طےہوگیا ہے۔ وہیں پاکستان کی امیدوں پرپانی پھرگیا ہے۔ دوسروں کی جیت اورہارپرنظرلگائے بیٹھی پاکستانی ٹیم کوانگلینڈ کی جیت سے بڑا جھٹکا لگا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اب پاکستان کے کرکٹروں نے دوسری ٹیموں پرفکسنگ کا الزام لگانا شروع کردیا ہے۔


پاکستان کے سابق کرکٹرراشد لطیف نےالزام لگایا ہے کہ نیوزی لینڈ اورانگلینڈ کے درمیان کھیلا گیا مقابلہ پوری طرح سے فکس تھا۔ راشد لطیف نےدعویٰ کیا ہےکہ دونوں ٹیموں کے کھیل کودیکھ کرلگ رہا تھا کہ ان کی پوری کوشش ہےکہ پاکستان کی ٹیم کسی بھی طرح سیمی فائنل میں نہ پہنچے۔


پاکستان کے ایک نیوزچینل کے پروگرام میں راشد لطیف نےکہا کہ 'جب نیوزی لینڈ کے 4 وکٹ گرگئے تھے تب ایان مورگن نےعادل رشید اورجوروٹ سے گیند بازی کرائی تاکہ شکست کا فرق کم ہوسکے۔ اس کےعلاوہ انگلینڈ نے جان بوجھ کرسست رفتار سے بلے بازی کی تاکہ وہ 370 یا اس سے زیادہ کا اسکورنہ بنا پائے اورشکست کا فرق کم ہوسکے'۔

اس سے قبل راشد لطیف نے ہندوستان اورنگلینڈ کے میچ پر بھی سوال اٹھائے تھے۔ انہوں نے الزام لگایا تھا 'وہ (ہندوستان) پاکستان کوسیمی فائنل میں نہیں دیکھنا چاہتے ہیں'۔ ہندوستان نے 338 رنوں کے ہدف کوحاصل کرنے کےلئے زیادہ کوشش نہیں کی۔ راشد لطیف نےکہا 'کوئی کیا کہہ سکتا ہے، سب نےمیچ دیکھا، ہم نے جومیچ دیکھا ہے اسی کی بنیاد پرکچھ کہہ سکتے ہیں۔ مجھےلگتا ہے کہ ہندوستان نےاپنا بہترین کرکٹ نہیں کھیلا'۔ انہوں نےکہا کہ آخرکے 10 اووروں میں ہندوستان نے رن بنانے کی زیادہ کوشش نہیں کی جبکہ انگلینڈ کی بلے بازی کے وقت آخری 10 اوورمیں کافی رن دے دیئے۔
First published: Jul 05, 2019 03:47 PM IST