ہوم » نیوز » اسپورٹس

ٹی -20 کرکٹ میں یہ تبدیلی نہیں چاہتے ہیں گوتم گمبھیر، دیا یہ بڑا بیان

آسٹریلیا کی بگ بیش لیگ نےٹی -20 کرکٹ کو 4 اننگ میں بانٹنےکا مشورہ دیا تھا، لیکن ہندوستان کے سابق سلامی بلے بازگوتم گمبھیر نے اسے یکسر مسترد کردیا ہے۔

  • Share this:
ٹی -20 کرکٹ میں یہ تبدیلی نہیں چاہتے ہیں گوتم گمبھیر، دیا یہ بڑا بیان
گوتم گمبھیر نے کہا کہ لوگ كہتے ہیں کہ انہوں نے دھونی کو کبھی غصہ ہوتے نہیں دیکھا لیکن میں نے کئی بار دیکھا ہے۔

نئی دہلی: آسٹریلیا کی بگ بیش لیگ نےٹی -20 کرکٹ کو چار اننگ میں بانٹنےکا مشورہ دیا تھا، لیکن ہندوستان کے سابق سلامی بلے بازگوتم گمبھیر اور آسٹریلیا کے سابق تیزگیند باز بریٹ لی نے اسے یکسر مسترد کردیا ہے۔ گوتمگمبھیر نے اسٹار اسپورٹس کے شو کرکٹ کنکٹڈ میں اس تجویز پر رائےکا اظہارکرتے ہوئےکہا کہ یہ تجویز بیکار ہےکہ ٹی -20 کرکٹ میں اننگ کو دو اننگ میں تقسیم کیا جائے۔


قابل ذکر ہےکہ سچن تندولکر نے ایک وقت مشورہ دیا تھا کہ 50 اوور کی کرکٹ میں ایسا کیا جا سکتا ہےکہ اننگ میں 25-25 اوورکی دو اننگ ہوں۔ اس سےٹاس کی اہمیت بھی کم ہو جائےگی کیونکہ کئی جگہ حالات میں ٹاس کا کردار اہم ہو جاتا ہے۔50 اوور کی کرکٹ میں ایسا کیا جا سکتا ہے، لیکن ٹی -20 میں قطعی نہیں۔ یہ ویسے ہی چھوٹا فارمیٹ ہے اور اس میں وقت کہاں ہوتا ہے۔ اسے 10-10 اوور میں تقسیم کرنا بہت چھوٹا ہو جائےگا۔


گوتمگمبھیر نےکہا کہ یہ تجویز بیکار ہےکہ ٹی -20 کرکٹ میں اننگ کو دو اننگ میں تقسیم کیا جائے۔
گوتمگمبھیر نےکہا کہ یہ تجویز بیکار ہےکہ ٹی -20 کرکٹ میں اننگ کو دو اننگ میں تقسیم کیا جائے۔



دوسری جانب اس معاملے پر بریٹ لی نےکہا کہ میں ٹی -20 کرکٹ کے حق میں ہوں چاہے وہ آئی پی ایل ہو یا پھر بگ بیش کیونکہ اس میں لوگوں کو کھیل کا مزہ آتا ہے، لیکن کچھ چیزیں روایتی بھی ہوتی ہیں اور انہیں برقرار رکھنا ہوتا ہے۔ ٹی- 20 میں چار اننگ رکھنا مذاق ہو جائےگا۔ مجھے یہ پسند ہےکہ میچ میں اپنے ہدف کا تعاقب کریں یا پھر اسکورکا دفاع کریں۔


محدود اوور کرکٹ میں وراٹ کوہلی سے آگے ہیں روہت شرما

دوسری جانب گوتم گمبھیرکا خیال ہےکہ ہندستانی سلے بلے باز روہت شرما موجودہ وقت میں محدود اووروں میں دنیا کے بہترین کھلاڑی ہیں اور وہ اس فارمیٹ میں ٹیم انڈیا کے کپتان وراٹ کوہلی سے کافی آگے ہیں۔ گرچہ گمبھیرکو یقین ہے کہ وراٹ کیریئر میں روہت سے زیادہ رن بنانے والے کھلاڑی ہوں گے۔ انہوں نے روہت کو محدود اوور کرکٹ کا بہترین بلے باز بتایا لیکن ساتھ ہی کہا کہ وہ اس فارمیٹ کے آل ٹائم بہترین بلے باز نہیں ہیں۔ گوتم گمبھیر نے اسپورٹس تک سےکہا کہ میرے خیال سے محدود اوور کا کھیل ایسا ہوتا ہے جس میں اثر دکھانے والے کھلاڑی زیادہ کامیاب ہوتے ہیں۔وراٹ ضرور روہت سے زیادہ رنز بنائیں گے اور وہ فی الحال بہترین بلے بازوں میں سے ایک ہیں لیکن روہت نے جس طرح کھیل پر اپنا اثر چھوڑا ہے اسے دیکھتے ہوئے وہ اب وراٹ سے کہیں آگے ہیں۔

گوتم گمبھیر کا ماننا ہے کہ محدود اوور کرکٹ میں وراٹ کوہلی سے روہت شرما آگے ہیں۔
گوتم گمبھیر کا ماننا ہے کہ محدود اوور کرکٹ میں وراٹ کوہلی سے روہت شرما آگے ہیں۔



انہوں نے کہا کہ میرے خیال سے روہت شرما محدود اوور کی کرکٹ میں فی الحال دنیا کے بہترین بلے باز ہیں۔ اگرچہ وہ آل ٹائم عظیم کھلاڑی نہیں ہیں لیکن اس وقت وہ بہترین ہیں۔وہ واحد ایسے بلے باز ہیں جنہوں نے ون ڈے میں تین ڈبل سنچری لگائی ہیں، ایک ہی عالمی کپ میں پانچ سنچری لگائی ہیں۔وہ ایسے واحد کھلاڑی ہیں جو ایک بار 100 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہو جاتے ہیں تو لوگ کہتے ہیں کہ وہ ڈبل سنچری سے چوک گئے۔ 2011 ورلڈ کپ میں ٹیم انڈیا کی جیت میں اہم کردار ادا کرنے والے گمبھیر نے کہا کہ وراٹ اور روہت کے درمیان موازنہ کرنا کافی مشکل ہے۔گمبھیر نے کہا کہ وراٹ اور روہت کے درمیان موازنہ کرنا انتہائی مشکل ہے۔وراٹ ناقابل یقین ہیں اور یہ بات ان کے ریکارڈ ثابت کرتے ہیں۔لیکن جب کسی کھلاڑی کی سنچری لگانے کے بعد آؤٹ ہونے پر لوگ کہتے ہیں کہ وہ ڈبل سنچری سے چوک گیا، یہ اس کھلاڑی کی صلاحیت کی عکاسی کرتا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: May 05, 2020 09:10 PM IST