உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گوتم گمبھیر کا بڑا بیان، دھونی اورروہت شرما کے بغیرکچھ بھی نہیں ہیں وراٹ کوہلی

    گوتم گمبھیر: فائل فوٹو

    گوتم گمبھیر: فائل فوٹو

    بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ اور سابق کرکٹر نے کہا کہ اگروراٹ کوہلی اچھے کپتان ہوتے تواب تک آرسی بی کو آئی پی ایل کا خطاب دلا چکے ہوتے۔

    • Share this:
      وراٹ کوہلی کی قیادت میں ہندوستانی ٹیم عالمی کپ 2019 کے سیمی فائنل میں پہنچ گئی، جہاں اس کا مقابلہ نیوزی لینڈ سے کھیلا جارہا ہے۔ کپتان کوہلی کی ٹیم نے گروپ سطح میں ٹاپ پررہتے ہوئے ناک آوٹ راونڈ میں قدم رکھا تھا۔ اس درمیان کپتان وراٹ کوہلی کولے کر ہندوستان کے سابق کرکٹرگوتم گمبھیرکا بڑا آیا ہے۔

      گوتم گمبھیرکا کہنا ہے کہ وراٹ کوہلی انہیں بطوربلے بازپسند ہیں، لیکن بطورکپتان نہیں۔ ایک ٹی وی چینل سے بات چیت میں انہوں نے کہا کہ کپتانی میں وراٹ کوہلی کوابھی اورطویل سفرطے کرنا ہے۔ وراٹ کوہلی ٹیم انڈیا کے لئے اس لئے بہترکپتان ہیں کیونکہ ان کے ساتھ مہندرسنگھ دھونی اورروہت شرما ہیں۔ اگروہ اچھے کپتان ہوتے تواب رائل چیلنجرس بنگلور(آرسی بی) کوآئی پی ایل خطاب جتاچکے ہوتے۔ 10 سال یا 8 سال جب تک انہوں نےکپتانی کی ہے، آرسی بی بیشترنمبر8 پررہی ہے۔ بطوربلے باز وراٹ کوہلی دنیا میں ٹاپ چاربلے بازوں میں ہیں، لیکن بطورکپتان وراٹ کوہلی اورمہندرسنگھ دھونی اورروہت شرما کے درمیان بہت زیادہ فرق ہے۔

      وراٹ کوہلی کے بولڈ اسٹیٹمنٹ کی تعریف

      حالانکہ اس کے بعد گوتم گمبھیرنے وراٹ کوہلی کے اس بیان کی بھی تعریف کی، جب ٹیم انڈیا کوہلی کی کپتانی میں پہلا ایڈیلیڈ ٹسٹ ہارگئی تھی، جسے وہ ڈرا کراسکتی ہے۔ اس میچ میں کوہلی نے جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے سنچری لگائی تھی۔ اس پرکوہلی نے کہا تھا کہ وہ 100 بارایسا ہی فیصلہ لیں گے، کیونکہ وہ ٹسٹ میچ ڈرا کے لئے نہیں جیتنے کے لئے کھیلتے ہیں۔ گوتم گمبھیرنے اس بیان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اس سے پہلے کسی بھی کپتان نے ایسا نہیں کہا۔ گوتم گمبھیرنے کہا کہ اس جگہ کوہلی کی سوچ 100 فیصد نہیں 200 فیصد تک صحیح تھی۔ انہوں نے کہا کہ اسی سوچ کی وجہ سے آج ہندوستانی ٹیم اس سطح تک پہنچی ہے۔ ہرکوئی جیتنے کے لئے کھیلتا ہے۔
      First published: