ہوم » نیوز » اسپورٹس

IPL 2020: کے کے آر کے کپتان ہوتے سوریہ کمار یادو، شاہ رخ خان کی ٹیم نے کردی بڑی غلطی!

ممبئی انڈینس (Mumbai Indians) کو پانچویں بار آئی پی ایل چمپئن بنانے میں سوریہ کمار یادو (Suryakumar Yadav) کا اہم رول رہا۔ دائیں ہاتھ کے اس بلے باز نے 15 اننگوں میں 40 کی اوسط سے 480 رن بنائے۔

  • Share this:
IPL 2020: کے کے آر کے کپتان ہوتے سوریہ کمار یادو، شاہ رخ خان کی ٹیم نے کردی بڑی غلطی!
IPL 2020: کے کے آر کے کپتان ہوتے سوریہ کمار یادو، شاہ رخ خان کی ٹیم نے کردی بڑی غلطی!

نئی دہلی: انڈین پریمیئر لیگ 2020 (آئی پی ایل 2020) کی چمپئن ممبئی انڈینس نے اس سیزن میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ ان کے ہر کھلاڑی نے جیت میں تعاون دیا، لیکن دائیں ہاتھ کے بلے باز سوریہ کمار یادو (Suryakumar Yadav) کی غضب کی کارکردگی انہیں دوسری ٹیموں سے کافی اوپر لے گئی۔ تیسرے نمبر پر بلے بازی کرنے والے اس کھلاڑی نے پورے ٹورنامنٹ میں ہر مخالف گیند باز کی جم کر خبر لی۔ یہی وجہ ہے کہ اب تک ٹیم انڈیا میں ڈیبو نہیں کرپانے والا یہ بلے باز ممبئی انڈینس (Mumbai Indians) کی طرف سے سب سے زیادہ رن بنانے کے معاملے میں تیسرے نمبر پر رہا۔ سوریہ کمار کی اس کارکردگی کو دیکھ کر کولکاتا نائٹ رائیڈرس کو آئی پی ایل چمپئن بنانے والے سابق کپتان گوتم گمبھیر ان کے مرید ہوگئے۔ حالانکہ گوتم گمبھیر (Gautam Gambhir) نے ہمیشہ سے ہی سوریہ کمار یادو کو ٹیلنٹیڈ بلے باز مانا تھا، لیکن اس سیزن میں ان کی بلے بازی ایک الگ سطح پر تھی۔ سوریہ کمار یادو کی کارکردگی دیکھ کر گوتم گمبھیر نے ان پر ایک بڑا انکشاف کیا ہے۔ ایک ویب سائٹ سے بات چیت کے دوران گوتم گمبھیر نے کہا کہ وہ سوریہ کمار یادو کو کولکاتا نائٹ رائیڈرس کے ممکنہ کپتان کے طور پر دیکھ رہے تھے۔


گوتم گمبھیر کا بڑا انکشاف


ای ایس پی این کرک انفو کے ساتھ خاص بات چیت میں گوتم گمبھیر نے کہا، ’سوریہ کمار یادو کا کولکاتا نائٹ رائیڈرس چھوڑ کر جانا اس فرنچائزی کے لئے سب سے بڑا نقصان ہے۔ وہ کھلاڑی جو نوجوان ہے اور چار سالوں تک ان کے لئے کھیلا، لیکن وہ اپنے نمبر پر اس وقت بلے بازی نہیں کر پایا کیونکہ ہمارے پاس منیش پانڈے تھے، جو تیسرے نمبر پر بلے بازی کرتے تھے۔ سوریہ کمار یادو نمبر 6 اور 7 پر کھیلتے تھے۔ میں نے انہیں نائب کپتان بنایا تاکہ وہ آگے جاکر کپتانی سنبھالیں۔ ان کے اندر قائدانہ صلاحیت تھی۔ وہ ٹیم کے لئے کھیلتے ہیں اور انہیں اپنے نمبر سے محبت نہیں تھی۔


آئی پی ایل 2020 کی چمپئن ممبئی انڈینس نے اس سیزن میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ ان کے ہر کھلاڑی نے جیت میں تعاون دیا، لیکن دائیں ہاتھ کے بلے باز سوریہ کمار یادو کی غضب کی کارکردگی انہیں دوسری ٹیموں سے کافی اوپر لے گئی۔
آئی پی ایل 2020 کی چمپئن ممبئی انڈینس نے اس سیزن میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔ ان کے ہر کھلاڑی نے جیت میں تعاون دیا، لیکن دائیں ہاتھ کے بلے باز سوریہ کمار یادو کی غضب کی کارکردگی انہیں دوسری ٹیموں سے کافی اوپر لے گئی۔


روہت شرما کی جگہ ممبئی انڈینس کے کپتان بن سکتے ہیں سوریہ کمار

گوتم گمبھیر نے مزید کہا، ’کے کے آر نے کرس گیل کو بھی دوسری فرنچائزی کو دیا، لیکن سوریہ کمار یادو کو ممبئی انڈینس کو سونپنا کے کے آر کا سب سے بڑا نقصان ہے کیونکہ ایسا ٹیلنٹ اور صلاحیت آپ کو ہندوستانی کھلاڑیوں میں بہت کم دیکھنے کو ملتا ہے۔ ان کے اندر کپتانی کی صلاحیت ہے، جو جانتے ہیں کہ ٹیم کیسے چلائی جاتی ہے۔ اگر سوریہ کمار یادو ممبئی انڈینس کے ساتھ بنے رہے تو روہت شرما کے بعد وہ ممبئی انڈینس کے کپتان ہوں گے’۔ واضح رہے کہ آئی پی ایل 2020 میں سوریہ کمار یادو کے بلے سے 40 کی اوسط سے 480 رن نکلے۔ اس بلے باز نے چار نصف سنچریاں لگائیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 12, 2020 11:14 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading