உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پہلی اننگ میں Ajaz Patel نے جھٹکے 10 وکٹ، انل کمبلے، جم لیکر اور ممبئی کے لڑکے نے رقم کی تاریخ

    Youtube Video

    India vs New zealand 2nd test: اب تک تینوں مرتبہ یہ کارنامہ اسپن گیند بازوں نے ہی انجام دیاے ہے لیکن پہلی بار کسی گیند باز نے گھر کے باہر یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔ اس سے پہلے کمبلے اور لیکر گھر پر یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔.

    • Share this:
      ممبئی۔ اعجاز پٹیل (Ajaz Patel) ٹیسٹ کی ایک اننگز میں 10 وکٹ لینے والے دنیا کے تیسرے گیند باز بن گئے۔ انہوں نے دوسرے ٹیسٹ بھارت بمقابلہ نیوزی لینڈ (India vs New Zealand) کے دوسرے دن یہ کارنامہ انجام دیا۔ اعجاز پٹیل نے ہندوستان کے محمد سراج (Mohammed Siraj) کے طور پر اپنی 10ویں وکٹ حاصل کی۔ وہ ہندوستان کے انل کمبلے اور انگلینڈ کے جم لیکر کے بعد یہ کارنامہ انجام دینے والے صرف تیسرے کھلاڑی ہیں۔ اب تک تینوں مرتبہ یہ کارنامہ اسپن گیند بازوں نے ہی انجام دیاے ہے لیکن پہلی بار کسی گیند باز نے گھر کے باہر یہ کارنامہ انجام دیا ہے۔ اس سے پہلے انل کمبلے Anil Kumble اور جم لیکر گھر پر یہ کارنامہ انجام دے چکے ہیں۔
      اعجاز پٹیل کے بارے میں بات کریں تو یہ ان کا مجموعی طور پر 10 واں ٹیسٹ ہے۔ اس سے قبل وہ ایک بار بھی اننگز میں 5 سے زیادہ وکٹیں نہیں لے سکے تھے۔ ان کی بہترین کارکردگی 59 رنز دیکر 5 وکٹیں تھیں۔ ممبئی میں پیدا ہونے والے اعجاز 68 فرسٹ کلاس میچ کھیلنے کے بعد بھی ایک اننگز میں صرف 6 وکٹیں لے سکے تھے لیکن انہوں نے ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں ایک نیا ریکارڈ بنا ڈالا۔
      جم لیکر نے آسٹریلیا جبکہ انل کمبلے نے پاکستان کے خلاف بنایا یہ ریکارڈ
      انگلینڈ کے آف اسپنر جم لیکر (Jim Laker) نے پہلی بار یہ کارنامہ 1956 میں مانچسٹر میں آسٹریلیا کے خلاف انجام دیا تھا۔ انہوں نے 51.2 اوورز میں 53 رنز دے کر 10 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ وہیں ہندوستان کے سابق لیگ اسپنر انل کمبلے نے 1999 میں دہلی میں پاکستان کے خلاف 10 وکٹیں لینے کا ریکارڈ بنایا تھا۔ انہوں نے 26.3 اوورز میں 74 رنز دے کر 10 وکٹیں حاصل کی تھیں۔ اب اعجاز پٹیل کی بات کریں تو انہوں نے 47.5 اوورز میں 119 رنز دے کر 10 وکٹیں حاصل کیں۔
      اعجاز پٹیل کی 10 وکٹوں کی بات کریں تو انہوں نے 2 کھلاڑیوں کو بولڈ کیا جب کہ تین کو ایل بی ڈبلیو ۔ 5 بلے باز کیچ آؤٹ ہوئے لیکن وراٹ کوہلی کا وکٹ ان کے لیے خوش قسمت رہا۔ یہاں سے انہوں نے ٹیم انڈیا پر دباؤ ڈالنا شروع کر دیا۔ انہوں نے پہلے دن 4 اور دوسرے دن 6 وکٹیں حاصل کیں۔

      پہلی بار پہلی اننگز کی تمام 10 وکٹیں جھٹکیں
      جب جم لیکر نے آسٹریلیا کے خلاف 10 وکٹیں لیں تو یہ میچ کی تیسری اننگز تھی۔ تیسری اننگز سے پچ سے اسپن گیند بازوں کو مدد ملنے لگتی ہے۔ وہیں انل کمبلے نے چوتھی اننگز میں یہ کارنامہ انجام دیا۔ اعجاز پٹیل پہلی اننگز میں یہ کارنامہ انجام دینے والے پہلے کھلاڑی بن گئے ہیں۔ اس طرح صرف 11ویں ٹیسٹ میں وہ نیوزی لینڈ کی ٹیسٹ تاریخ کے بہترین بولر بھی بن گئے ہیں۔

      قومی، بین الااقوامی، جموں و کشمیر کی تازہ ترین خبروں کے علاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: